آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > شناسائی > زکریا اجمل سے شناسائی

زکریا اجمل سے شناسائی

السلام علیکم۔۔۔!
تھا جن کا انتظار وہ لمحات آگئے۔ آپ ملاحظہ کررہے ہیں اردو کا منفرد مشترکہ بلاگ “منظرنامہ” اور یہ سلسلہ ہے اردو بلاگرز سے “شناسائی” کا۔
ہم آپ کے میزبان، ماوراء اور عمار سلسلہ “شناسائی” کے ساتھ اور ہمارے پہلے مہمان ہیں جناب زکریا اجمل۔

خوش آمدید زیک۔۔۔!
@ شکریہ

کیسے مزاج ہیں؟
@ ٹھیک ٹھاک

زکریا صرف بلاگر نہیں بلکہ اپنی ذات میں کئی خوبیوں کے مالک ہیں۔ ان دنوں آپ جارجیا ٹیک، اٹلانٹا سے الیکٹریکل اینڈ کمپیوٹر انجینئرنگ میں پی۔ایچ۔ڈی کررہے ہیں۔
آپ کا شمار اردو محفل کے بانیان میں ہوتا ہے۔ ان کو پڑھنے والوں کو اچھی طرح اندازہ ہوگا کہ یہ چلتا پھرتا علم کا سمندر ہیں۔ جب کسی موضوع پر لکھتے ہیں تو مضبوط دلائل اور حوالوں کے ساتھ بات کرتے ہیں۔
زیک نے سن 2002 کے وسط سے بلاگنگ شروع کی۔ اس کے علاوہ کئی پروجیکٹس میں ان کا نمایاں حصہ رہا ہے۔
سب سے پہلے ہم اردو بلاگنگ کے حوالے سے ہی بات چیت شروع کرتے ہیں۔

1۔ ہمیں یہ بتائیں کہ آپ نے اردو بلاگنگ کب شروع کی؟
@ فروری 2004 میں

2۔ آپ کو اردو بلاگنگ کا خیال کیسے آیا اور اس وقت اردو بلاگنگ میں کن مسائل کا سامنا رہا؟
@ میں نے کمپیوٹر پر اردو کبھی نہیں لکھی تھی۔ میرے ایک ایرانی دوست نے فارسی میں بلاگ بنایا تو میں نے سوچا کیوں نہ اپنے بلاگ میں بھی اردو شامل کروں۔

3۔ بلاگنگ شروع کرتے ہوئے کیا سوچا تھا؟ صرف بلاگ لکھنا ہے یا اردو بلاگنگ کو فروغ دینے کا مقصد پیش نظر تھا؟
@ صرف بلاگ لکھنے کا ارادہ تھا۔

4۔ آپ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں بلاگنگ کرتے ہیں، ذاتی طور پر آپ کو کس زبان میں بلاگنگ کرنا پسند ہے؟
@ انگریزی میں

5۔ آپ کے خیال میں ٹیکنالوجی کی دنیا میں اردو اپنا مقام کب اور کیسے حاصل کرسکے گی؟
@ شاید کبھی نہیں۔اس کی کئ وجوہات ہیں جن پر شاید مجھ سے زیادہ علم رکھنے والے لوگ ہی بہتر تبصرہ کر سکیں۔ میں صرف یہ جانتا ہوں کہ پچھلے چار سال میں نیٹ پر اردو میں فعال لوگوں کی تعداد شاید کچھ سو سے زیادہ نہ ہو۔ اسی زمانے میں فارسی، عربی، انگریزی وغیرہ میں ہزاروں نہیں بلکہ لاکھوں بلاگ اور سائٹ بنائے گئے۔

6۔ اگر آپ سے کہا جائے کہ اردو کے فروغ کے لیے آپ نے جو کردار ادا کیا ہے، اسے بیان کریں تو اس بارے میں آپ کیا کہیں گے؟
@ اردو کے فروغ کے لئے تو میرا کوئ کردار نہیں البتہ نیٹ پر شاید اردو لکھنے والوں میں نام کچھ اوپر اوپر آتا ہے اور اردوویب کا آغاز کرنے میں میں نے بھی اپنا نام شامل کر دیا۔

7۔ کیا آپ ہمارے قارئین کو بتائیں گے کہ بلاگنگ کے علاوہ آپ اردو کے حوالے سے مزید کیا کر رہے ہیں؟
@ اردوویب کا منتظم ہوں تو اردوویب کے کچھ پراجیکٹس میں کچھ حصہ ہے۔ اردو سیارہ جو اردو بلاگز کا اگریگیٹر ہے اس کے حوالے سے کافی مشہوری (یا بدنامی) پائ ہے۔

8 ۔ مستقبل میں کیا منصوبے ہیں؟
@ مستقبل میں اردو میں بلاگنگ ترک کرنے کا ارادہ ہے۔ اس کے علاوہ ایک آدھ اپنے فیلڈ سے متعلق اردو کے لئے کچھ منصوبے ذہن میں ہیں۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ کب وقت ملتا ہے۔

9۔ اردو بلاگرز یا جو اردو کی ترجیح کے لیے کوشاں ہیں، ان کو آپ کوئی پیغام دینا چاہیں گے؟
@ متنوع موضوعات پر لکھیں اور باقاعدگی سے لکھیں۔ اردو انگریزی جنگ سے پرہیز کریں۔ کچھ مزید مشورے میں نے اردوویب بلاگ پر بھی دیئے تھے۔

10۔ پرانے اور نئے بلاگرز میں کون پسند ہے؟ کسے شوق سے پڑھتے ہیں؟
سچی بات یہ ہے کہ اردو بلاگز میں صرف آصف، دانیال اور اپنے والد کو پڑھا کرتا تھا۔ ان میں سے صرف میرے والد ابھی بھی لکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ اردو سیارہ پر نظر رکھتا ہوں تو اس میں شامل بلاگز بھی پڑھے جاتے ہیں۔
——————————–
زکریا، یہ تو تھے کچھ رسمی سوالات جن سے قارئین کو آپ کی بلاگنگ اور دوسرے پروجیکٹس کے حوالے سے آگاہی ہوئی، ان سوالات کے جواب پڑھ کر یقیناً ہمارے قارئین کو آپ کی ذات کے بارے میں بھی کچھ جاننے کا تجسس ہوا ہوا ہو گا۔
تو آئیں کچھ منفرد سوالات کرتے ہیں۔ امید ہے آپ بھی انجوائے کریں گے۔

پہچان:
1۔ آپ کا نام؟ زکریا اجمل
2۔ آپ کہاں پیدا ہوئے؟ واہ کینٹ، پاکستان
3۔ ابھی آپ کہاں رہائش پذیر ہیں؟ اٹلانٹا، جارجیا، ریاستہائے متحدہ امریکہ
4۔ آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ، کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتے ہوں؟ خوش اور مطمئن زندگی۔
5۔ اپنے پس منظر اور اپنی تعلیم کے بارے میں ہمیں کچھ بتائیں گے؟ واہ کینٹ میں پیدا ہوا۔ زندگی واہ، طرابلس، راولپنڈی، اسلام‌آباد، اٹلانٹا اور نیوجرسی میں گزاری ہے۔ الیکٹریکل انجینیرنگ میں گریجویشن یو‌ای‌ٹی لاہور کے ٹیکسلا کیمپس سے کیا۔ اس کے بعد کی تعلیم جارجیا ٹیک سے۔ پیشہ‌ورانہ دلچسپیوں میں کمپیوٹر ویژن، سگنل اور امیج پراسیسنگ آتے ہیں۔

بہترین :
1۔ چھٹیاں؟ فرانس۔ اس کے علاوہ کچھ سال پہلے ڈرائیو کر کے کیلیفورنیا گیا تھا اس کا بھی اپنا مزہ تھا۔
2۔ رشتہ؟ شریکِ حیات کا۔

برا:
1۔ دن کا وقت؟ صبح صبح
2۔ ہفتے کا دن؟ ظاہر ہے کہ پیر
3۔ زندگی کا کوئی لمحہ؟ جب سی‌آر‌وی‌او کا علم ہوا تھا۔

آخری:
1۔ لڑائی؟ کچھ دن پہلے۔
2۔ چھٹیاں کب منائیں؟ کرسمس کے دنوں میں

آج:
1۔ یہ انٹرویو دیتے ہوئے کیا سوچ رہے ہیں؟ کہ کتنا لمبا انٹرویو ہے۔
2۔ ناشتہ یا کھانے میں کیا کھایا؟ ناشتے میں حسبِ معمول سیریل۔

کل:
1۔ کوئی خاص پلان، کہ کیسے گزاریں گے؟ ویک ڈے تو عام ہی ہوتا ہے۔
2۔ کل کے دن کی کوئی بری بات؟ پھر سے گرمی

پسندیدہ:
1۔ کتاب: ٹیلر برانچ کی مارٹن لوتھر کنگ پر تین کتابیں
2۔ گانا: دل میں تم ہونٹوں پہ تم آنکھوں‌ میں جانٍ جاں
3۔ رنگ: سرخ

ابھی:
1۔ موڈ؟ بس ٹھیک ہی ہے۔
2۔ کسی کو مس کر رہے ہیں؟ نہیں
3۔ کچھ خاص چیز جس کا دل کر رہا ہو؟ آئس کریم کھانے کا موڈ ہو رہا ہے

غلط/درست:
1۔ مجھے بلاگنگ کی عادت ہو گئی ہے؟ درست
2۔ میں بہت شرمیلا ہوں؟ غلط
3۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟ غلط
4۔ مجھے فون پر باتیں کرنا اچھا لگتا ہے؟ غلط
5۔ مجھے ابھی بہت کچھ سیکھنا ہے؟ درست
6۔ مجھے کتابیں پڑھنے کا شوق ہے؟ درست
7۔ میں ایک اچھا دوست ہوں؟ درست
8۔ مجھے غصہ بہت آتا ہے؟ غلط

خوشی:
1۔ کیا کسی نے کبھی آپ کو سرپرائز پارٹی دی؟ نہیں
2۔ کیا آپ جلدی جوش میں آ جاتے ہیں؟ نہیں
3۔ اگر آپ ملین ڈالرز جیتیں تو آپ کی پہلی سوچ کیا ہو گی؟ کہ اس کے odds کیا ہیں

کوئی ایک منتخب کریں :
1۔ سموسہ، پکوڑا یا کباب؟ کباب
2۔ بالی وڈ، لالی وڈ یا ہالی وڈ؟ ہالی‌وڈ
3۔ پسند کی شادی یا ارینج شادی؟ پسند کی
4۔ قلفی یا آئس کریم؟ آئس‌کریم
5۔ مینارِ پاکستان یا ایفل ٹاور؟ آئفل ٹاور
6۔ پاکستان، امریکہ یا کوئی یورپین ملک؟ امریکہ

19 تبصرے:

  1. شکریہ ماوراء اور عمار، اچھا لگا زکریا اجمل کے بارے میں پڑھ کر۔

    میں‌ نے جانتا کہ مجھے کوئی سوال کرنا چاہیئے یا نہیں، لیکن اگر آپ زکریا اجمل سے پوچھ سکیں‌ کہ وہ اردو بلاگنگ کیوں ترک کرنا چاہتے ہیں؟

  2. اتنا طویل انٹرویو! بیشتر باتوں کے بارے میں تو پہلے ہی علم تھا (اردو محفل والا انٹرویو پڑھ کر) البتہ اردو بلاگنگ ترک کرنے کا منصوبہ غیر متوقع نہیں تو حیران کن ضرور ہے۔ کچھ وضاحت ہو سکتی ہے یا نہیں؟

  3. مجھے مھفل پر آئے ہوئے چار ماہ ہوئے ہیں شاید کم و بیش ۔۔ مگر اس وقت یہاں لکھتے ہوئے لگ رہا ہے کہ صحیح معنوں میں آج کسی کی شخصیت کو جانا ہے۔۔۔۔ میں اس شاندار کاوش پر ماورا کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔۔۔ یہ واقعی ایک شاندار کاوش ہے۔۔۔۔

    ایک بار پھر مبارکباد مچھے زیک کے بارے میں پہلی بار اتنی تفصیل سعے معلومات ہوئیں ہیں۔۔۔ ورنہ میں بلاگنگ سے شدید تریں مایوس ہوں اسی لئے چھوڑ دی ہے۔۔۔ کیونکہ میں اس کی تیکنیکی الف ب سے واقف نہیں ہوں۔۔۔

    سلام رضا

  4. ابوشامل! انٹرویو واقعی طویل ہے؟ 😯 مجھے تو مختصر لگ رہا تھا۔ 😐
    یونس رضا! اس شاندار کاوش پر ماوراء کا شکریہ ادا کرتے ہوئے میرا نام بھی لے لیا ہوتا۔ 😛 بلاگنگ سے ہمت ہارگئے؟ اتنی جلدی؟
    حیدرآبادی! بہت شکریہ۔ ہماری کوشش ہے کہ نبیل بھیا کا انٹرویو بھی لیا جاسکے۔
    ۔۔۔۔۔
    عمار

  5. مارہ ، آصف کا اور نبیل کا لو ۔۔ یہ دونوں بہت اعلی پرسنیلٹی کے بندے ہیں دونوں ،، مجھے اور فرحت کو نبیل کا انٹرویو پڑھنا ہے ۔ 🙁

  6. میں اردو بلاگنگ کیوں چھوڑ رہا ہوں؟ پہلی بات تو یہ ہے کہ میں نے ماوراء سے کہا تھا کہ مجھ سے انٹرویو کا آغاز نہ کیا جائے کہ میں تو ویسے بھی جعلی اردو بلاگر ہوں۔ چار سال سے زیادہ عرصے میں صرف 49 پوسٹس کی تھیں۔ شاید یہ بہت سے اردو بلاگرز سے زیادہ ہے مگر میری کل بلاگنگ کا کافی کم حصہ ہے۔

    دوسرے یہ کہ اردو میں کچھ بھی لکھنے میں زیادہ وقت لگتا ہے۔ اور اگر کسی کا حوالہ دینا ہو تو زیادہ‌تر انگریزی ہی میں مواد موجود ہوتا ہے جسے ترجمہ بھی کرنا پڑتا ہے۔

    تیسرے میرے قارئین میں اردو پڑھنے والے کم ہیں بلکہ مجھے کئی دفعہ یہ فرمائش آئی ہے کہ اگر اردو میں کچھ لکھوں تو اس کا انگریزی ترجمہ بھی لکھوں۔

    چوتھے میرے ذاتی خیال میں اردو بلاگنگ کہیں نہیں جا رہی اور اس کا موازنہ دنیا کی بلاگنگ سے تو کرنا فضول ہے بلکہ پاکستانی انگریزی بلاگنگ بھی اردو سے انتہائی بہتر حالات میں ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ یہ فرق بڑھ رہا ہے۔

  7. مجھے زیک کی اس بات سے مکمل اتفاق ہے کہ پاکستانی انگریزی بلاگنگ بھی اردو سے انتہائی بہتر حالات میں ہے، یقیناً ہے۔

    لیکن میرا یہ بھی خیال ہے کہ اردو بلاگنگ کے معیار کو بہتر، بہترین لکھنے والے ہی بنا سکتے ہیں جیسے کہ زیک 🙂

    اس لیئے بجائے اردو بلاگنگ کو چھوڑنے کہ اگر اس پر زیادہ محنت کی جائے تو شاید آئندہ آنے والے چند یا کئی سالوں میں اردو بلاگنگ بہتر ہو سکے۔

    میں امید افزاء اس لیئے بھی ہوں کہ انگریزی کے ساتھ، نیٹ پر اپنی اپنی علاقائی اور قومی زبانوں کا استعمال بہرحال بڑھ رہا ہے اور بڑھنا ہے۔

  8. عمار اور ماوراء
    السلامُ عليکُم
    ماشاءاللہ آپ دونوں نے منظر نامہ کی صُورت جو بپترين کام کيا ہے اُس کا اجر ملے گا کہ محنت کبھی رائيگاں نہيں جاتی اُردُو زبان کے فروغ کے لۓ جو اقدامات آپ دونوں کر رہے ہو وہ قابلِ تحسين ہيں
    زکريا صاحب کا انٹرويو بہت اچھا لگا آغاز منظر نامہ کا بے حد اچھا ہُوا ليکن ايسے ہی ايک خيال آيا کہ ہمارے انتہائ مُحترم اجمل انکل کا انٹرويو اگر سب سے پہلے ليا جاتا تو اور اس بات پر زکريا صاحب کو بھی کوئ اعتراض نا ہو تا آخر وہ اُن کے والد ہيں ، بہر حال ايک بہترين انٹرويو کے لۓ آپ لوگ مُبارکباد کے مُستحق ہيں ہاں زکريا صاحب بلاگنگ چھوڑنا کيُوں چاہتے ہيں سب کی طرح مُجھے بھی يہ بات عجيب لگی پُوچھ کر بتائيے گا ضرُور
    خير انديش
    شاہدہ اکرم

  9. شاندار انٹرویو ہے۔ شکریہ ماوراء، عمار

    ممجھے زیک سے شکوہ ہے کہ اردو بلاگنگ کی اس حالت پر بجائے محنت یا مقابلہ کرنے کے پیچھے ہٹنا کہاں کا انصاف ہے، آپ اردو بلاگنگ میں ایک بڑی پرسنلٹی کے مالک ہیں اور بہت سے اردو بلاگرز کے آئیڈیل بھی، اس لئے ایسی باتیں کر کے آپ اردو بلاگرز کے حوصلے پست مت کیجیئے۔

  10. وعلیکم السلام، شاہدہ، بہت شکریہ۔

    اور آپ نے کہا کہ اجمل انکل کا ہم نے پہلے انٹرویو کیوں نا لیا تو ہم نے کچھ ایسے سوچا ہے کہ اردو بلاگنگ میں جو پہلے اردو بلاگرز ہیں، ان سے انٹرویو شروع کرتے ہوئے آگے بڑھیں گے۔ چونکہ زکریا کا شمار ان پہلے بلاگرز میں ہے ، جنہوں نے اردو بلاگنگ کا آغاز کیا۔ اس لیے ان سے پہلے لیا۔ انشاءاللہ انکل اجمل کا انٹرویو بھی ضرور لیں گے۔ 🙂

    اور اردو بلاگنگ کے حوالے سے زکریا اپنی سوچ اوپر کیے ہوئے تبصرے میں بتا چکے ہیں۔


    پاکستانی بھیا، بہت شکریہ۔
    زیک کی بات اور آپ کے شکوے کو آگے بڑھاتے ہوئے ہم جلد ہی اس موضوع پر بھی بات کریں گے۔
    ۔
    ماوراء

  11. […] فروری 2004ء میں آصف اقبال نامی بندے نے اپنی اردو بلاگنگ شروع کی۔ یہ قابل بندہ تھا اور اس نے اردو بلاگ لکھنے کی شروعات میں کافی کام کیا تھا۔ اب آصف اقبال کا ذاتی بلاگ تو تاریخ کے گمشدہ اوراق میں گم ہو چکا ہے، مگر ان کی اردو بلاگنگ پر لکھی گئی کئی تحاریر اردو ویب بلاگ پر موجود ہیں۔ انہیں دنوں اردو کے ایک اہم رضاکار زکریا اجمل (افتخار اجمل بھوپال کے بیٹے) بھی اردو بلاگنگ پر تحقیق کر رہے تھے کہ مسائل کیسے حل کیے جائیں اور کیا کیا صورت بن سکتی ہے۔ آصف اقبال زیادہ تر اردو میں لکھتے جبکہ زکریا اجمل اردو کمپیوٹنگ اور بلاگنگ پر تحقیق انگریزی میں ہی شائع کرتے مگر ساتھ ساتھ ایسی تحاریر بھی ہوتی جو ایک وقت میں اردو اور انگریزی دونوں میں لکھتے تاکہ اگر کسی کو اردو پڑھنے میں مشکل ہو تو وہ انگریزی پڑھ کر اردو کے متعلق جان سکے۔ انہیں دنوں زکریا نے ویب رنگ کے نام سے ایک فہرست ترتیب دینی شروع کی تاکہ جو کوئی بھی اردو بلاگ لکھتا ہے اس کو فہرست میں شامل کیا جائے یعنی جو دو چار لوگ ہیں ان کو ایک لڑی میں پرویا جا سکے۔ سب سے پہلے زکریا نے ہی اپنے بلاگ پر انگریزی کے ساتھ ساتھ اردو درست انداز میں دکھانے کی سہولت شامل کی تھی۔ منظرنامہ پر زکریا کا انٹرویو۔ […]

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر