آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > شناسائی > اسماء سے شناسائی

اسماء سے شناسائی

آج ہمیں ایک بہت پرانی بلاگر کو جاننے کا موقع ملے گا۔ آپ زیادہ تر انگریزی میں بلاگنگ کرتی ہیں، لیکن اردو میں بھی آپ نے بلاگنگ کی ہے۔ اردو کے حلقہ احباب میں شاید کم لوگ ہی ان کو جانتے ہوں، تو آئیں آج اسما مرزا سے کچھ باتیں کرتے ہیں۔ 
 

اردو کے حلقہِ احباب میں شاید نئے آنے والے تو کچھ خاص مجھے نہ جانتے ہو، پرانے تو غالبا سب ہی جانتے ہیں۔اور جزاکم اللہ کہ آپ نے یہ سوالنامہ بھیجا۔

خوش آمدید اسماء
 
اسماء سب سے پہلے ہم آپ سے اردو اور بلاگنگ کے حوالے سے بات کرتے ہیں۔ 

1۔ یہ بتائیں کہ آپ نے بلاگنگ کب شروع کی؟
@
اگست 2004 میں یہ حادثہ ہوا تھا غالباً۔ 

2۔ آپ کو بلاگنگ کا خیال کیسے آیا ؟

اس زمانے میں بہت زیادہ اردو یا پاکستانی بلاگ موجود نہیں تھے۔ البتہ جو چند ایک تھے وہ نہایت ہی دلچسپ تھے جیسے کہ زکریا اجمل، اعجاز آسی اور  آصف اقبال کے۔ ایک دن سوچا کہ خود بھی بنا لوں اور بس یوں بلاگنگ ہوگئی شروع۔

3۔ بلاگنگ شروع کرتے ہوئے کیا سوچا تھا؟ صرف بلاگ لکھنا ہے یا کچھ اور؟

بس بلاگنگ شروع ہوئی تو پھر خود بخود بہت ساری چیزوں میں ہاتھ ڈال ہی دیا 🙂

4۔ آپ نے اردو میں بھی بلاگ پر لکھا ہے، کچھ اس بارے میں بتائیں کہ اردو میں پہلی بار کب لکھا اور اردو لکھتے ہوئے کن مسائل کا سامنا رہا؟

جب میں نے بلاگنگ شروع کی تو اسکے کچھ ہی عرصے کے بعد اردو بلاگنگ کے لیے بھی کام شروع ہوگیا۔ انہی دنوں میں نے بیاض بھی شروع کیا جو بہت عرصہ تو مستقل بنیادوں پر اپڈیٹ کرتی رہی پر اب کبھی کبھار ہی ہو پاتا ہے۔
یونیکوڈ کیبورڈ سے لکھنا کچھ مشکل لگتا تھا پر اردو پیڈ تو لاجواب ہے 🙂 آب تو مستقلا میں یہی استعمال کرتی ہوں۔
2004 سے ہی اردو میں لکھ رہی ہوں 🙂

5۔ آپ کے خیال میں ٹیکنالوجی کی دنیا میں اردو اپنا اصل مقام حاصل کر پائے گی؟

اب یہ تو اس بات پر منحصر کہ ٹیکنالوجی میں کس حد تک اردو کے عمل دخل کی ضرورت ہے۔  اپنا اصل مقام حاصل کرنے کے لئیے  پہلے اصل مقام کی نشاندہی ہونی چاہئیے۔

6۔ آپ زیادہ تر انگریزی میں لکھتی ہیں، اس کی کوئی خاص وجہ؟ کیا آپ کے خیال میں اردو کمپیوٹر پر لکھنا مشکل ہے یا آپ کے بلاگ کو پڑھنے والے زیادہ تر انگریزی زبان سے آشنا ہیں یا پھر آپ اظہار خیال بہتر طور پر انگریزی میں کر سکتی ہیں؟

 انگریزی میں بلاگنگ کرنا نسبتا آسان ہے۔ گاہے بگاہے میں اردو میں‌بھی کچھ لکھ ڈالتی ہوں۔ ایک ڈیڑھ سال سے اردو میں خالصتاً بلاگنگ کا کچھ دل نہیں کرتا۔
ویسے میرے بلاگ کو پڑھنے والے قریب قریب سبھی لوگ اردو پڑھنا جانتے ہیں 🙂

7۔ آپ کے خیال میں جو اردو کے لیے کام ہو رہا ہے کیا وہ اطمینان بخش ہے؟

اردو تو اب انگریزی اور اردو زبان کا ملغوبہ بن گئی ہے۔ لوگ لکھنا تو دور کی بات بولنا بھی بھول رہے ہیں۔ اس طرف خاص توجہ کی ضرورت ہے۔ والدین کو خصوصا اس طرف دھیان دینا چاہیے۔ یہ نہ ہو کہ ہم اپنا تشخص بھی آہستہ آہستہ کھو دیں۔

8 ۔ اگر آپ کو اردو سے لگاؤ ہے اور آپ مستقبل میں اس کے لیے کچھ کرنا چاہتی ہیں یا کچھ اور آپ جو مستقبل میں کرنا چاہتی ہوں، ان کے بارے میں کچھ بتائیں گی؟

 اردو تو ہماری پہچان ہے، لگاؤ تو اک فطری امر ہے۔ 
ایک  بات جو مجھے کچھ زیادہ ہی کٹھکتی ہے وہ اردو کو اردو سے محروم کرنے کا جو رواج آجکل جڑ پکڑ چکا ہے۔ ہم بالکل انجانے میں اب بہت سی اور زبانوں کے ایسے الفاظ اس میں لے آئے ہیں جنکے لیے پہلے ہی بہت خوبصورت اور با معنی الفاظ اردو میں موجود ہیں۔ ٹی وی اور ریڈیو جو زبان کے رنگ ڈھنگ نئی نسل کو دکھا رہا ہے اسکی درستگی کی بھی ضرورت ہے۔ کوشش تو ہم سب ہی اپنی جگہ کرسکتے ہیں۔

9۔ پرانے اور نئے بلاگرز میں کون پسند ہے؟ کسے شوق سے پڑھتے ہیں؟

بہت سارے بلاگرز ہیں جن کو روز ہی پڑھتی ہوں  🙂 سب اپنی اپنی جگہ ایک مقام رکھتے ہیں۔  اب بہت عرصے سے اردو بلاگرز اور بلاگنگ سے کچھ دور ہوں پر کبھی کبھی ایک چکر لگا ہی لیتی ہوں =)

10۔ اردو بلاگرز یا جو اردو کی ترجیح کے لیے کوشاں ہیں، ان کو آپ کوئی پیغام دینا چاہیں گے؟

 جواب نمبر آٹھ دوبارہ پڑھ لیں =))

اسماء، یہ تو تھے کچھ رسمی سوالات جن سے قارئین کو آپ کی بلاگنگ اور دوسرے پروجیکٹس کے حوالے سے آگاہی ہوئی، ان سوالات کے جواب پڑھ کر یقیناً ہمارے قارئین کو آپ کی ذات کے بارے میں بھی کچھ جاننے کا تجسس ہوا ہو گا،تو آئیں کچھ منفرد سوالات کرتے ہیں۔ 

پہچان:

1۔ آپ کا نام؟
 اسماء  

2۔ آپ کی جائے پیدائش؟
لاہوڑ، معاف کریں لاہور

3۔ آپ حالیہ قیام کہاں ہے؟
ہمیشی و ہمیش اسلام آباد

4۔ آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ،کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتے ہوں؟
خواب تو بہت، دعاؤن کی ضرورت ہمہ وقت 🙂    

5۔ اپنے پس منظر اور اپنی تعلیم کے بارے میں ہمیں کچھ بتائیں گے؟
میں سافٹ ویر انجینئیر ہوں اور آجکل ایک جگہ برسرِ روزگار ہوں۔ گو کہ اس لفظ “بر سرِ روزگار“ سے محمد علی کی یاد آجاتی ہے =))

پسندیدہ:

1۔ کتاب ؟
جسے ایک ہی وقت میں ختم کرنے کا دل کرے۔

2۔ گانا ؟
جو بار بار سنتی جاؤں، کوئی خاص اس وقت ذہن میں نہیں۔

3۔ رنگ ؟
 موسم کے

4۔ کھانا (کوئی خاص ڈش)؟
 دال چاول

5۔ موسم؟
 سردیوں کا 

غلط/درست:

1۔ مجھے بلاگنگ کی عادت ہو گئی ہے؟
کوئی ایسی ویسی

2۔ میں بہت شرمیلی ہوں؟
شرمیلی تو الحمد للہ میں ہو نہیں سکتی =))

3۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟
انسان ہوں کبھی کبھی ہو بھی جاتا ہے، اکثر الحمدللہ نہیں ہوتا 🙂

4۔ مجھے زیادہ باتیں کرنا اچھا لگتا ہے؟
اللہ دے اور کوئی سنے :))

5۔ مجھے ابھی بہت کچھ سیکھنا ہے؟
 زندگی تو مستقل کچھ نیا سکھا ہی رہی ہے۔

6۔ مجھے کتابیں پڑھنے کا شوق ہے؟
 کافی حد تک۔

 7۔ میں ایک اچھی دوست ہوں؟
کہہ ہی سکتے ہیں، اب خود کیا کہوں =))

8۔ مجھے غصہ بہت آتا ہے؟
کبھی کبھار ، بہت زیادہ نہیں۔ 

آپ کے خیال میں:

1۔ سوال کرنا آسان ہے یا جواب دینا؟
 دونوں ہی آسان کام نہیں۔ جواب دینا شاید بہت مشکل نہیں۔

2۔ بہترین رشتہ کون سا ہے؟
 ماں۔ 

 3۔ آپ کی اپنی کوئی ایسی عادت جو آپ کو خود بھی پسند ہو؟
کوئی ایک ہو تو بتاؤں =))

دلچسپی:

 1۔ شاعری سے؟
 بہت۔ بیاض پڑھیں 🙂

2۔ کوئی کھیل؟ 
کرکٹ ۔ ۔ ۔ لڈو بھی کھیل ہی ہے ناں؟

 3۔ کوئی خاص مشغلہ؟ 
 آجکل تو تصاویر کھینچنے کا شوق چرایا ہے 🙂

برا:

 1۔ زندگی کا کوئی لمحہ؟
 ہممم ۔۔۔ بتانے کا فائدہ؟

 2۔ دوسروں کی کوئی ایسی بات جو آپ کا موڈ خراب کر دیتی ہو؟
دروغ گوئی اور اپنے آپ کو دوسرے سے برتر دکھانا اور بتانا۔
  
3۔ دن کا وقت؟ 
اللہ نے تو سب وقت اچھے ہی بنائے ہیں 🙂

کیا آپ :

 1۔ اپنے ملک کے لیے کچھ کرنا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں، تو کیا؟
اگر ناں تو کیوں نہیں ؟ نہیں  پوچھا آپ نے۔ 
خیر دل تو بے حد دُکھتا ہے آجکل کی صورتحال پر۔ اب وقت کچھ ایسا ہے کہ شاید ایک یا دس بندے کوئی بڑا کام نہ کرسکیں ۔۔۔ اجتماعیت کی ضرورت ہے جسکا فقدان پڑا ہے۔ دعاؤں کی بہت ضرورت ہے۔ 

2۔ جدیدیت کے قائل ہیں؟
 ایک حد تک۔

 3۔ آزادئ نسواں کے حق میں ہیں؟ 
 اسلام سے بڑھ کر کون آزادئ نسواں کی بات کرسکتا ہے۔ مغربی آزادیت کے تو خلاف ہی ہوں۔ اور ہاں میں یہاں ملاکے بتائے گئے اسلام کی نہیں بات کررہی جہاں عورت کچھ بھی نہ کرسکے۔

کوئی ایک منتخب کریں :

1۔ دولت، شہرت یا عزت؟
 اللہ کی رحمت اور برکت۔ 

2۔ علامہ محمد اقبال، خلیل جبران یا ولیم شکسپئر؟
تینوں ہی نہیں 🙂

 3۔ پسند کی شادی یا ارینج شادی؟
ارینج شادی پر پسند کا تڑکہ 🙂

4۔ مینارِ پاکستان یا ایفل ٹاور؟
وینس کی گلیاں۔

 6۔ پاکستان، امریکہ یا کوئی یورپین ملک؟
رہنے کے لیے یا گھومنے کے لیے 🙂 آپ ٹکٹ ویزہ سنبھالیں میں ابھی منتخب کر لیتی ہوں۔ 
 

اسما مرزا،اپنا قیمتی وقت نکال کر منظر نامہ کے لیے جواب دینے کا بہت بہت شکریہ۔

15 تبصرے:

  1. هاں جی چند هی تو لوگ تھے دو ہزار چار میں اردو کو ٹیکسٹ میں لکھنے والے ـ
    جن میں ایک اسماء مرزا بھی هیں ـ
    میں اب تک ان کو اسلام آباد کا سمجھتا رها لیکن اسماء صاحب تو لاهوری کُڑی هیں ـ
    اچھا لگا اسماء صاحب کے متعلق پڑھ کر ـ
    وینس کی گلیاں!ـ
    کشتی پر هوں یا اندرون لاهور جیسی تنگ گلیاں وینس میں پھرتے هوئے ایسے لگتا ہے که الف لیله کی کسی داستان کے گاؤں میں آگئے هیں ـ

  2. وینس کی رنگین تصاویر میں نے آدھی صدی پہلے فرانس کے سفارتخانہ کی وساطت سے دیکھی تھیں اُن دنوں ابھی جموں کشمیر کی یاد تازہ تھی اسلئے مجھ پر کچھ زیادہ اثر انداز نہ ہو سکیں تھیں ۔ جوانی میں شمالی علاقہ جات کی سیر کی تو وہ بھی کچھ کم منظر آفرین نہ تھے ۔ اللہ نے خاکسار کو فرانس کے وینس سمیت تین علاقے دیکھنے کا موقع فراہم کیا ۔ اچھا پایا لیکن بقول علامہ اقبال {جو اسماء صاحبہ کو پسند نہیں} کشمیر
    گر فردوس بر روئے زمیں است
    ہمیں است و ہمیں است و ہمیں است

  3. خاور صاحب، نہ نہ ہوں تو میں اسلام آباد کی ہی، لاہور تو اضافیت ہے ٌـ ٌ

    لاہور کی گلیوں میں بھی گنڈولے چلنے لھیں تو مزہ ہی آجائے ۔۔۔!

    افضل صاحب، جو بیچارے چار سال سے بلاگ پڑھ رہے ہیں وہ کہیں گے ہمیں تو سب پتہ ہی ہے ۔۔۔ سو کشھ سوال گول کرنے ہی پڑے ْ ــ ْ

    قدیر بیٹا، بے ساختگی ۔۔۔ اچھا کہتے ہو تو ہوگی۔ :dsadasccc:

    اجمل انکل، میں نے بھی ابھی تک صرف تصاویر ہی دیکھی ہیں ۔۔۔ لیکن شمالی علاقہ جات جو دیکھے ہیں واقعی وہ بھی کسی سے کم نہیں، الحمدللہ ۔۔۔ پر گنڈولے نہیں چلتے ۔۔۔! اقبال مجھے پسند ہیں لیکن پڑھتے ہوئے شاید میری پہلی ترجیح نہیں ۔۔۔ یہ اولین اور شاید آخریں فارسی اشعار میں سے ایک ہے جو میں نے یاد کیا تھا۔۔۔ ٌٌ ــ ٌ

    مروی اور عمار کا شکریہ !!

  4. اسماء، شرمیلا والا سوال ۔۔۔ اب تک مرد حضرات کا انٹرویو ہوا ہے نا۔۔ تو مجھے اس شرمیلا کو بدلنا یاد نہیں رہا تھا۔ آپ نے اس کو شرمیلی ہی پڑھنا تھا نا۔

    چاہیں تواب اس سوال کا جواب دوبارہ دے دیں، میں ایڈٹ کر دوں گی۔ اس کے لیے معذرت، کہ پہلے نہ ٹھیک کر سکی۔

    اچھا۔۔ ایک اور بات۔۔ میرا نام ” ماوراء” “Mawra” ہے۔ :dsadas:

  5. السلام علیکم

    اچھا لگا محترمہ اسماء صاحبہ کے متعلق پڑھ کر، میں ان سے یہ استدعا بہرحال کرونگا کہ اردو بلاگنگ کو کم نہ کریں بلکہ اپنے قیمتی وقت سے کچھ نہ کچھ اردو کو بھی دیتی رہیں۔

    منظر نامہ کا شکریہ ایک پرانے بلاگر سے شناسائی کیلیئے۔

  6. اسماء نے کہا کہ چند دلچسپ لکھنے والے موجود تھے، جبکہ اب کچھ لوگ کہتے ہیں کہ اردو میں لکھے گئے بلاگز میں یکسانیت ہے ۔ میرا ذاتی خیال ہے کہ اسماء بھی کافی دلچسپ لکھتی ہیں لیکن پتہ نہیں پاکستان میں ہر دوسرے پڑھے لکھے کی طرح لفٹ صرف انگریزی کو کرواتی ہیں ۔ جب آپ اردو کو استعمال نہیں کریں گے تو کیا فرشتے ٹیکنالوجی کے لئے اردو آسمان سے اتاریں گے؟
    اب آپ بتائیں کہ اپنی زبان سے اتنی بے رخی کیوں؟ آپ تو یہ بھی نہیں کہہ سکتی کہ “مینوں اردو نئیں آؤندی”۔ یا اب میں آپ کا شمار بھی اُن لوگوں میں کر لوں جو اردو کی ویب پر نادستیابی پر انگریزی میں دس ہزار لفظوں کا مضمون لکھتے ہیں، لیکن اپنے طور پر کچھ نہیں کرتے ۔

  7. السلامُ عليکُم
    اسماء کا انٹرويو زبردست ترين لگا بہت ہی اچھا لگا مُجھے ہرہر لفظ ايک حسين سی با ساختگی لۓ ہُوۓ تھا اپنے اندر ،ميں نے اسماء کو سب سے پہلے بياض پر ديکھا تھا بہت اچھی لگی تھي آپ کی پسند ليکن ايک بات جوآپ کے انٹرويو ميں بھی کھلی ليکن اُس سے پہلے ميں نے زيادہ اس لۓ محسُوس نہيں کيا تھا کہ ميں سمجھی شايد آپ کوئ بالکُل اُردُو نا بول پانے والی انگلش سمجھنے والی لڑکی ہيں ليکن يہ جان کر جہاں اچھالگا کہ پکّی لاہوری ہيں اور اسلام آباد کی رہائشی ہيں تو اُردُو ميں بلاگنگ نا کرنے کی وجہ کيا ہے؟ جبکہ بقول آپ کے
    „اردو تو ہماری پہچان ہے، لگاؤ تو اک فطری امر ہے۔ ایک بات جو مجھے کچھ زیادہ ہی کٹھکتی ہے وہ اردو کو اردو سے محروم کرنے کا جو رواج آجکل جڑ پکڑ چکا ہے۔ ہم بالکل انجانے میں اب بہت سی اور زبانوں کے ایسے الفاظ اس میں لے آئے ہیں جنکے لیے پہلے ہی بہت خوبصورت اور با معنی الفاظ اردو میں موجود ہیں۔ ٹی وی اور ریڈیو جو زبان کے رنگ ڈھنگ نئی نسل کو دکھا رہا ہے اسکی درستگی کی بھی ضرورت ہے۔ کوشش تو ہم سب ہی اپنی جگہ کرسکتے ہیں۔„
    تو آپ نے يہ کوشش کيُوں نا کی مُجھے اُمّيد ہے ميری بات کا بُرا نہيں مانا ہوگا
    باقی اپنے مُلک ميں ديکھنے والی واقعی بہت حسين حسين جگہيں ہيں ليکن وينس کی وہ گلياں واقعی بہت دلفريب لگتی ہيں ديکھنے کو دل چاہتا ہے کہ کيسی لگتی ہوں گی وہ گلياں
    انٹرويو بہت زبردست لگا ماوراء اور عمّار ہميشہ کی طرح بہترين کام کيا ہے شُکريہ
    اپنا خيال رکھيۓ گا آپ سب
    دُعاگو
    شاہدہ اکرم

  8. اسماء کوبلاگنگ اور چٹ پٹی باتوں کے حوالے سے بہت عرصہ سے جانتا ہوں کجھ ذاتیات جان کر بھی بہت لطف آیا۔۔۔۔ نہ اردو آتی ہے نہ انگریزی۔۔۔ اب میرے جیسا بندہ کیا کرے۔۔۔

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر