آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > اظہر > اظہر الحق سے شناسائی

اظہر الحق سے شناسائی

السلام علیکم،

سلسلہ شناسائی میں آج ہم ایک اور مہمان شخصیت کے ساتھ حاضر ہیں۔ ہمارے آج کے مہمان بہت پرانے بلاگر ہیں۔نہایت ہی اچھا لکھتے ہیں۔ آپ جیسی شخصیات کے بارے میں کہا جا سکتا ہے کہ جنہیں خدا نے لکھنے کی بھر پور صلاحیت سے نوازا ہوتا ہے۔ آپ مزاح نہایت ہی دلچسپ انداز میں لکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ سیاست پر بھی لکھتے رہتے ہیں۔ ان کی باتوں سے اندازہ ہوتا ہے کہ سچے اور درد رکھنے والے پاکستانی ہیں۔ اپنی دنیا میں مگن رہتے ہیں۔ ان کی دنیا کا نام ہے: اظہر الحق کی دنیا

آئیں تو مزید جاننے کے لیے اظہر سے بات چیت کا آغاز کرتے ہیں۔

خوش آمدید اظہر

@ شکریہ آپ کا کہ آپ نے مجھے یاد کیا !!

کیسے مزاج ہیں؟

@ الحمدُللہ ، اللہ کا کرم ہے ، اور آپ سب دوستوں کی دعا چاہیے !!

اظہر، سب پہلے بلاگنگ سے آغاز کرتے ہیں۔

آپ بتائیے کہ بلاگنگ کے بارے میں کب اور کیسے پتا چلا تھا؟

@ بلاگ لفظ کا پتہ تو شاید تین یا چار سال پہلے چلا ، مگر اپنا بلاگ 2006 میں بنایا ، پہلے بلاگ سپاٹ پر پھر ایم ایس این پر ۔

کب سوچا کہ خود بھی بلاگنگ شروع کرنی چاہیے؟ اور کیوں؟

@ ویسے اپنی زندگی کے بارے میں اور اس طرح کے کام (جو بلاگ میں ہوتے ہیں ) میں غالباً 1996 -1997 سے یاہو گروپس میں کر رہا تھا ، جن میں سب سے اچھا گروپ “ہم ہیں راہی پیار کے” تھا اور ایسے کتنے ہی گروپ میں لکھا کرتا تھا ۔ ۔ سو بلاگنگ پہلے بھی کر رہا تھا اور اب بھی کر رہا ۔ ۔ ۔ کیوں کر رہا ہوں ، اس لئیے میں شاید کچھ بلکہ بہت کچھ کہنا چاہتا ہوں اور کہنے کے لئے بلاگ اچھا ذریعہ ہے ۔ ۔

آپ ونڈوز لائیو سپیس پر لکھتے ہیں، باقاعدہ بلاگ کیوں نہیں بنایا؟

@ ایم ایس این ( لائیو) پر بلاگ بنانے کی وجہ صرف اسکا اچھا لگنا تھا اور وہاں پر ویسے بھی اردو بلاگ نہ ہونے کے برابر ہیں اسلئے اسے اپنایا دوسرا سرچ انجنز میں اس کی سرچ بہت اچھی تھی اسلئے اسے اپنایا ۔ ۔ ۔

زیادہ تر کن موضوعات پر بلاگ لکھتے ہیں؟

@ بائیو لاگ کا مطلب ہوتا ہے زندگی میں جو کچھ ہوتا ہے اسے محفوظ کیا جائے ، سو میری زندگی میں میرے اوپر اور میرے اردگرد جو ہوتا ہے اسکو “لاگ” کرتا ہوں ، سو ہر طرح کے موضوعات پر لکھتا ہوں ۔ ۔ ۔

بلاگنگ میں یا اردو لکھنے میں کسی مشکل کا سامنا کرنا پڑا؟ کیا مراحل طے کیے؟

@ لمبی کہانی ہے !!! مختصر یہ کہ کمپیوٹر پر اردو سے میرا پہلا واسطہ تقرئباَ بیس سال قبل جب میں پڑھ رہا تھا اس وقت پڑا ۔ ۔ ۔ ۔ سلور سافٹ نامی ایک ادارے نے اردو لکھنے کے لئے ڈوس بیس ٹی ایس آر (ٹرمینیٹ اینڈ سٹے ریزیڈنٹ ) پروگرام بنایا تھا جو اردو نیشنل اسپورٹ کہلاتا تھا ، میں اس کو استعمال کر کے کچھ پروگرام ڈائزئن کئے تھے (نوے کی دہائی میں ) اور اس میں اس وقت کے اردو ٹائپ رائٹر کا کی کامبینیشن جو مبتہ کے نام سے مشہور ہے استعمال کیا تھا اور پھر بعد میں فونٹک کی بورڈ بھی خود سے بنایا (شاہکار اور صدف پہلے ہی اس کی بورڈ کو استعمال کر رہے تھے ) ۔ ۔ ۔ پھر بعد میں خود بھی اردو کے ایڈیٹر سافٹ وئیر بنائے (گرافکس اور ٹیکسٹ پیجز وغیرہ کے ساتھ) ۔ ۔ اسلئے کمپیوٹر پر اردو میرے لئے کبھی نئی نہ تھی ۔ ۔ اور جب پاکستان میں انٹر نیٹ آیا بلکہ ای میل آیا اسی کی دہائی کے آخر میں تو رومن میں میل لکھنا اور پھر نیٹ اسکیپ کے پیجز بنانا اردو میں ایک شوق سا بن گیا ۔ ۔ ۔ اور پھر جب یونی کوڈ ملا تو ظاہر ہے آسانیاں ہی آسانیاں ملیں ۔ ۔ ۔ اور کمپیوٹر پر اردو لکھنا اور آسان ہو گیا !!

آپ کیا سمجھتے ہیں کہ بلاگنگ سے آپ کو کیا فائدہ ہوا ہے؟ یا کیا فائدہ ہوسکتا ہے؟

@ میری نظر میں بلاگنگ ویب اسپیس پر ایک سوشل ذریعہ ہے جسکے ذریعے ہم ایک دوسرے کو متعارف کراتے ہیں ، اسلئے فائدہ اسکا سوشل ہوتا ہے ، جس میں آپ کو اچھے قاری ملتے ہیں ، دوست بنتے ہیں ، دشمنیاں بھی پنپتی ہیں ۔ ۔ ۔ مگر سب کچھ غیر مرئی (ورچوئل) ہی ہوتا ہے ۔ ۔ ۔ مگر میں سمجھتا ہوں کہ اگر ہم ورچوئل اسپیس سے نکل کر رئیل ورلڈ میں بھی سوشل ہو جائیں تو یقیناَ اسکا فائدہ بھی سب کو ہو سکتا ہے ۔ ۔ ۔ مگر ابھی تک یہ صرف باتیں ہیں !!

وقت کے ساتھ ساتھ اردو بلاگنگ کا دائرہ کافی وسیع ہوا ہے۔ کیسا دیکھتے ہیں موجودہ منظر کو اور نئے آنے والے بلاگرز سے کیا توقعات وابستہ ہیں؟

@ دیکھیے میری نظر میں اردو بلاگنگ بہت اہم ہے ، کیونکہ دنیا کی چوتھی بڑی زبان ہے جو سمجھی اور بولی جاتی ہے ، مسلہ ہے رسم الخط کا وہ گورمکھی ہو یا فارسی یا عربی اگر ہمارے پاس مترجم ہوں (جن پر کافی کام ہو چکا ہے ) تو عالمی بلاگنگ میں اردو بھی بہت اہم جگہ لے سکتی ہے ، نئے لکھنے والے بہت اچھے ہیں اور وہ اپنی اپنی سمجھ کے مطابق بہت بہتر کردار ادا کر رہے ہیں ، توقعات یہ ہی ہیں کہ وہ اردو کی ترویج کے لئے مزید کام کریں گے اور اردو کو اسکا وہ مقام دلائیں گے جسکی وہ حقدار ہے ۔ ۔

کیا آپ کے خیال میں اردو کو وہ مقام ملا ہے، جس کی وہ مستحق تھی؟

@ اگر میں نہیں کہوں تو بھی غلط ہو گا ، اردو ایک ایسی زبان ہے جسے دنیا کے ہر کونے میں سمجھا اور بولا جاتا ہے اور اسکا ثبوت اردو محفل پر ہر جگہ سے نمائندگی ہے ، بلکہ اس سے پہلے ہر فورم پر ہر جگہ سے اردو کے چاہنے والے موجود تھے ۔ ۔ ۔ میری نظر میں اردو آہستہ آہستہ اس جگہ پر جا رہی ہے جو اسکا اصل مقام ہے

آنے والے دس سالوں میں اپنے آپ کو، اردو بلاگنگ کو اور پاکستان کو کہاں دیکھتے ہیں؟

@ وہ کہتے ہیں نا کہ “ساماں سو برس کا ہے ، پل کی خبر نہیں ” اسلئے کچھ کہنا مشکل ہے ، اپنے بارے میں کیا کہوں ، میری زندگی تو بدلتی رتوں جیسے ہے ، نہ پل کا پتہ نہ کل کا پتہ ، مگر جیسے میں اپنے اللہ کی رحمت سے کبھی مایوس نہیں ہوا ، اور اسنے مجھے ہر مشکل سے نکالا ہے اسی طرح میں سمجھتا ہوں کہ پاکستان دس سال بعد ایک اہم ترین ملک ہو گا دنیا کا ، اور ظاہر ہے جب پاکستان کی پہچان پاکستانی ہیں اور وہ بلاگرز بھی ہیں ۔ ۔ تو میں بہت بہتر مستقبل دیکھتا ہوں ۔ ۔ کہ “رات ڈھلنی تو ہے ، آنے اجالے تو ہیں”

بلاگ کے علاوہ دیگر کیا مصروفیات ہیں؟

@ ویسے تو لکھتا ہوں ، مگر ان دنوں صرف سوچتا ہوں ، نوکری اور اسکے بعد دعائیں اپنی فیملی کے لئے ، بس یہ ہی ہے آجکل ۔۔۔۔۔ ویسے میوزک بجاتا ہوں ، مگر ان دنوں کوئی نیا گیت نہیں بنا پا رہا ۔ ۔ ۔ کیا کروں ۔ ۔۔ ذہنی حالت اجازت نہیں دیتی

مستقبل میں کیا کیا منصوبے ہیں؟

@ جیسا کہ پہلے بھی بتایا ہے کہ میں زیادہ پلان نہیں بناتا اب (پہلے بناتا تھا ) بس یہ ضرور چاہتا ہوں کہ کچھ کر سکوں اپنے وطن کے لئے اور اپنے لوگوں کے لئے ۔ ۔ ۔ بے مقصد زندگی نہیں گذارنا چاہتا ۔ ۔ ۔ اور مقصد یہ ہی ہے کہ خلق خدا کی بھلائی کا کوئی کام کر سکوں ۔ ۔

کسی بھی سطح پر اردو کی خدمت انجام دینے والوں اور اردو بلاگرز کے لیے کوئی پیغام؟

@ بس ایک ہی خواہش ہے کہ اس شعر کو سچ کیا جائے “سارے جہاں میں دھوم ہماری زباں کی ہے “

اب کچھ سوال ہٹ کر۔

کچھ اپنے خاندانی، تعلیمی پس منظر کے بارے میں بتائیں؟

@ میرا تعلق ایک دینی گھرانے سے ہے ، شاہ جی نہیں کہلانا پسند کرتا کیونکہ شاید میں خود کو اس قابل نہیں سمجھتا ، دوسرا تعلیمی طور پر نالائق ترین آدمی ہوں اپنے خاندان کا ، بی ایس سی کیا تھا (تین بار فیل ہو ہو کر) اور پھر کمپیوٹر میں ڈپلومہ کیا تھا اسکے بعد اسی کو پیشے کے طور پر اپنا لیا ۔ ۔ ۔

آپ کی جائے پیدائش اور حالیہ مقام؟

@ میں راولپنڈی کے علاقے ٹنچ بھاٹہ میں پیدا ہوا ، میرا گاؤں کہوٹہ میں ہے اور میری فیملی آج بھی پنڈی میں رہتی ہے ، میرا بچپن پنڈی میں ، اور لڑکپن اور نوجوانی کراچی میں گذری اور اب جوانی (کہنے میں کیا حرج ہے ) شارجہ (امارات) میں گذر رہی ہے

آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ،کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتے ہوں؟

@ مقصد یہ ہی ہے کہ کچھ ایسا کر جاؤں جو رہتی دنیا کے کام آئے ، اور خواہش ۔ ۔ ۔ شاید اب صرف امن اور پُرسکون زندگی کی ہے ۔ ۔ ۔

پسندیدہ:

1۔ کتاب ؟

ایڈیٹ (دوستو وہسکی ) اور بلیک اینڈ وائٹ (ابن صفی )

2۔ گانا ؟

کبھی تو تم کو یاد آئیں گیں (احمد رشدی ، فلم چکوری )

3۔ رنگ ؟

نیلا اور سبز

4۔ کھانا )کوئی خاص ڈش( ؟

آلو گوشت

5۔ موسم

خزاں اور سردی

غلط/درست:

1۔ مجھے بلاگنگ کی عادت ہو گئی ہے؟

غلط

2۔ میں بہت شرمیلا ہوں؟

غلط

3۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟

درست

4۔ مجھے زیادہ باتیں کرنا اچھا لگتا ہے؟

درست

5۔ مجھے ابھی بہت کچھ سیکھنا ہے؟

درست

6۔ مجھے کتابیں پڑھنے کا شوق ہے؟

درست

7۔ میں ایک اچھا دوست ہوں؟

درست

8۔ مجھے غصہ بہت آتا ہے؟

غلط

دلچسپی:

1۔ شاعری سے؟

بہت زیادہ

2۔ کوئی کھیل؟

ویسے دل تو کر رہا ہے کہ لکھوں “آنکھ مٹکا” مگر اب عمر نہیں ہے ، ویسے ہاکی اور فٹبال پسند ہیں

3۔ کوئی خاص مشغلہ؟

بچپن میں ٹکٹ جمع کرنا اور سکے اور نوٹ جمع کرنا ، اور اب میوزک اور لکھنا پڑھنا

کوئی ایک منتخب کریں :

1۔ دولت، شہرت یا عزت؟

لکھنا تو “عزت” چاہیے مگر “دولت” مل جائے تو “عزت” مل ہی جاتی ہے

2۔ علامہ محمد اقبال، خلیل جبران یا ولیم شکسپئر؟

علامہ محمد اقبال

3۔ پسند کی شادی یا ارینج شادی؟

ایک ارینج اور باقی پسند کیں

5۔ پاکستان، امریکہ یا کوئی یورپین ملک؟

پاکستان (کیونکہ یہ بھی امریکہ اور یورپ کا ہی حصہ ہے )

اگر آپ سمجھتے ہیں کہ ہمیں کچھ پوچھنا چاہیے تھا، لیکن ہم نے پوچھا نہیں اور آپ کچھ کہنا چاہتے ہوں تو آپ کہہ سکتے ہیں۔

@ ویسے تو نیٹ پر میرا پہلا انٹرویو ہے (اس سے پہلے کچھ انٹرویو دے چکا ہوں نوکری کے انٹرویوز کے علاوہ ) اور پھر پکے پکائے سوال ، جنکے جواب دینے کے لئے سوچنے کا بہت وقت تھا ، اگر یہ انٹرویو لائیو ہوتا تو ۔ ۔ میں ایں ایں کے علاوہ شاید شش شش شکریہ ہی کرتا ، ویسے آپ نے جو نہیں پوچھا اچھا کیا ، ورنہ ہم “مزید” بدنام ہو جاتے ۔ ۔ ۔

بس دعا کر سکتا ہوں آپ سبکے لئے خصوصاَ نبیل ، زکریا ، ماوراء ، شمشاد ، باسط (ہلچل ڈاٹ کام ) ، کاشف (اردستان ڈاٹ کام ) اردو منزل (صبیحہ ) ، اردو دنیا کی ریحانہ اور زرقا مفتی اور ایسے ہی بہت سارے دوستوں کے لئے کہ جنہوں نے اردو کے لئے بہت بڑا کام کیا ہے انٹر نیٹ پر ۔ ۔ ۔ سلسلہ اچھا ہے کاش ہم سب ورچؤل ورلڈ سے نکل کر رئیل ورلڈ میں بھی ایسے ہی ساتھی اور دوست بنیں تا کہ ہم رئیل زندگی کے لئے بھی کام کر سکیں ۔ ۔ ۔ ۔

اظہر، اپنا قیمتی وقت نکال کر منظر نامہ کے لیے جواب دینے کا بہت بہت شکریہ۔

آپ کا بھی بہت شکریہ کہ مجھے اس قابل سمجھا ، کہ میں اپنا تعارف کروا سکوں ۔ ۔ ۔ ایک بار پھر آپ کا اور آپکی ٹیم کا شکریہ ، وسلام

8 تبصرے:

  1. اظہر صاحب کے انٹرویو کا کب سے انتظار تھا۔ ان کا شاندار انٹرویو پڑھ کر بہت اچھا لگا خاص طور پر ڈیجیٹل اردو سے ان کی کتنی پرانی یاد اللہ ے یہ جان کر تو بڑی خوشگوار حیرت ہوئی۔ اور اظہر صاحب‌کے گیت کا انتظار رہے گا۔

  2. اظہر صاحب کا میں بھی خاموش قاری ہوں، خصوصاً مجھے آپ کی ان تحاریر کا انتظار رہتا ہے جن میں امارات میں‌ہونے والے مشاعروں اور ادبی محفلوں کی روداد لکھتے ہیں، بہت اچھا اظہر صاحب کے بارے میں‌جان کر، اللہ تعالٰی ان کو جزا دیں اور اردو کی خدمت کرنے کی مزید توفیق بھی!
    منظر نامہ سے ایک ذاتی استدعا یہ کہ میرے بلاگ کا ربط، براہِ مہربانی اردو بلاگرز کی فہرست میں اپڈیٹ کر دیں،کریہ، نوازش!

  3. السلام ُ عليکُم
    بہت اچھا انٹرويو لگا اظہرُ الحق صاحِب کا پنڈی اور ٹينچ بھاٹہ سے سُسرالی تعلُق ہے تو جہاں آپ بلاگ کے حوالے سے رِشتے دار ہُوۓ وہيں ٹينچ کے حوالے سے سُسرالی رِشتے دار ہو گۓ اور اب تيسرا رِشتہ اماراتی ہونے کا ہو گيا 🙂
    ليکِن سب سے اچھی بات کہ بلاگ سے کِتنی پُرانی وابستگی ہے يہ جان کر بہت اچھا لگا شُکريہ ماوراء اور عمار ايک اور اچھا اِنٹرويوپڑھنے کا موقع دينے کا

  4. انٹرویوں خوب تها مجهے لگ رہا ہے کہ آپ سے اور بہت سارے سوالات مزید ہونے چاهئے تهے .ہر سوال کا جواب بڑی سمجهداری سے دیا گیا.بہت یاد کررہی ہوں مگر یاد نہیں آرہا ہے کہ میں نے کبهی آپ کا بلاگ دیکها ہے مگر اب اس ملاقات کے بعد ان شاء اللہ لنک دیکهکر ہو آتی ہوں

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر