آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > blogger > تانیہ رحمان سے شناسائی

تانیہ رحمان سے شناسائی

السلام علیکم۔

سلسلہ شناسائی میں ہم آج ایک اور مہمان کے ساتھ حاضر ہیں۔ ہماری آج کی مہمان اردو بلاگنگ میں زیادہ پرانی نہیں ہیں۔ لیکن آپ اردو بلاگنگ میں آتے ہی چھا گئیں۔ آپ کے بلاگ پر بہترین تحاریر کے ساتھ ساتھ بہت خوبصورت گیت بھی سننے کو ملتے رہتے ہیں۔  اس سے پہلے آپ القمر پر بھی بلاگنگ کرتی رہی ہیں۔ آپ بلاگ پر اپنے تعارف میں لکھتی ہیں کہ وہ “ پاکیزہ” میں افسانے،پشاور کے اخبار “آج” میں کالم، لندن سے شائع ہونے والا اخبار ”وژن انٹرنیشنل” اور”جنگ لندن” کے لیے بھی کالم اور مضامین لکھتی ہیں ۔ تو آئیے مزید جاننے کے لیے تانیہ رحمان سے بات چیت کا آغاز کرتے ہیں۔

خوش آمدید تانیہ۔

تانیہ، سب سے پہلے ہم آپ کے بارے کچھ جاننا چاہیں گے۔ آپ کا خاندانی پس منظر، تعلیم، پیشہ یا آپ کیا کرتی ہیں؟
@ نام تو آپ جانتے ہیں ۔ تانیہ رحمان ۔ بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹی اور گھر بھر کی لاڈلی ۔ ابا جی سرکاری آفیسر۔ بی اے فائنل میں شادی ہو گئی ، لیکن شادی کے بعد بی اے کیا اور اس کے ساتھ ساتھ کمپیوٹر کورسز کیے اور گھر داری

آپ کی جائے پیدائش اور حالیہ مقام کون سا ہے؟
@ پشاور میں پیدا ہوئی ابھی اپنے میاں جی کے ساتھ یوکے میں ہوں شادی کے بعد ملک سے باہر رہے ۔ میاں یعنی رحمان جوکے پیشے کے لحاظ سے ڈاکٹر ہیں، انکے ساتھ کافی جگہ گھومنے کا اتفاق ہوا ۔ ابھی میں مانچسٹر میں ہوں۔

آپ نے بلاگ میں تعارف کے صفحے پر لکھا ہے کہ آپ افسانہ اور کالم نگاری کرتی ہیں۔ اس بارے میں کچھ بتائیے کہ لکھنے کا شوق کیسے اور کب ہوا اور کس کس اخبار میں آپ لکھتی ہیں ؟
@ اسکول کے زمانے میں کچھ لکھا تھا لیکن وہ اپنے تک تھا ۔ پھر اتفاق ہوا بلاگ پر ایک دوست کے کہنے پر آئی تھی تب مجھے پتا چلا بلاگ کیا ہوتا ہے ۔ مجھے ریڈیو اور ٹی وی پر میزبانی کا شوق تھا ۔ ٹی وی پر تو کیا لیکن پھر چھوڑ دیا ماحول کی وجہ سے لیکن لکھنے کا اتفاق میرے لیے سر درد کی گولی کا کام کرئے گا یہ سوچا نہیں تھا ۔ اس لکھنے کی وجہ سے میری دوست بھی خفا رہتی ہیں. پہلا افسانہ اپنی ماں کے لیے لکھا تھا ۔ جب اچانک وہ ہم سب کو چھوڑ کر دوسری دنیا چلی گئی ۔ اور میں وقت پر نہیں پہنچ پائی( فلائٹ جا چکی) ۔ یہ افسانہ مجھے بہت اچھا لگتا ہے دل سے ایک ایک حرف لکھا تھا اخبارت کی جہاں تک بات ہے میں نوائے وقت آواز جو لندن سے شائع ہوتا ہے -اس کی انچارج بھی میں ہوں اب میں مقدمہ اخبار کے لیے کالم لکھتی ہوں

یہ بتائیے کہ آپ نے بلاگ ہیڈر پر لکھا ہے کہ ” بلاگ تانیہ رحمان (عین الیقین) خوش آمدید۔ ”عین الیقین” یہاں کس پس منظر میں لکھا گیا ہے ؟
@میرا اصل مقصد سچائی کو سامنے لانا ہے ۔ اور وہ کچھ جو لوگ سچ تو سمجھتے ہیں لیکن سچائی کا سامنا کرتے ہوئے ڈرتے ہیں ۔ میرا ایمان ہے سچ کبھی مات نہیں کھاتا ۔ پریشانی ضرور ہوتی ہے لیکن جیت سچائی کی ہی ہوتی ہے

بلاگ کب لکھنا شروع کیا اور بلاگ بناتے ہوئے آپ نے کیا سوچا تھا کہ آپ کو بلاگنگ کیوں کرنی چاہیے یا بلاگ کے آغاز کا بنیادی مقصد کیا تھا؟
@ اصل میں جب میں نے اتفاق سے لکھنا شروع کیا ۔ تب میں خود نہیں جانتی تھی ۔ لیکن ہوتے ہوتے جب میں نے پہلی دفعہ اردو لکھنا شروع کی تو مجھے یوں لگا میں ادنی کلاس میں ہوں اور وہ سب کچھ دوبارہ لکھ رہی ہوں جو چھوٹے ہوتے لکھتی تھی ۔ ایک عجیب سی خوشی اور احساس تھا۔ پھر جس بلاگ پر لکھتی تھی ۔ کچھ وجوہات کی بنا پر وہاں سے جانا پڑا تب مجھے لگا کہ اپنا بلاگ بنا کر دیکھا جائے ۔ کم از کم دوسروں کی منت سماجت اور ہر وقت کے رعب سے جان چھوٹ جائے گی ۔ بلاگ ایک ایسی جگہ ہے جہاں ہم دوسروں سے بہت کچھ سیکھتے ہیں ۔ کچھ اپنی کہتے ہیں اور کچھ ان کی سنتے ہیں

اس بلاگ سے پہلے غالباً آپ القمر پر بھی بلاگنگ کیا کرتی تھیں۔ وہ تجربہ کیسا رہا ، کچھ اس بارے میں بتائیں؟
@وہی سے میرا بلاکنگ کا سلسلہ چلا تھا ۔ اچھا تھا

آپ بلاگ پر کن کن موضوعات پر لکھتی ہیں ؟
@کوشش کرتی ہوں ہر اس موضوع پر لکھوں جو دوسروں پر اثر انداز ہو ۔اور حق اور سچائی پر مبنی ہو ۔

یہ بتائیے کہ بلاگنگ کے بارے میں پہلی بار آپ کو کب اور کیسے پتا چلا تھا؟
@پہلی بار میری دوست نے مجھے بتایا تھا وہ خود افسانہ نگار شاعرہ ہیں انھوں نے کہا تھا تبصرہ کرنے کو میں نے رومن اردو میں لکھا تھا ۔ تب مجھے بلاگ بہت اچھا لگا کہ اپنی چھوٹی سی چھوٹی بات بڑی آسانی سے کہی جاسکتی ہے ۔

بلاگنگ کے آغاز میں کن کن مشکلات کا سامنا رہا؟
@ کوئی خاص نہیں ۔ بلکہ میں نے بہت کم عرصے میں بہت اچھے اچھے بلاگرز کو اپنے بلاگ پر تبصرہ کرتے ہوئے پایا ، میں انکی مشکور ہوں

کیا آپ سمجھتی ہیں کہ بلاگنگ سے آپ کو کوئی فائدہ ہوا ہے؟ یا کیا فائدہ ہوسکتا ہے؟
@ بلاگ ایک بہت خوبصورت راستہ ہے ۔ جہاں آپ کو پھول زیادہ اور کانٹے کم ملتے ہیں لوگ آتے جاتے ہم سے ملتے ہیں ۔ پہلے دعا سلام ہوتی ہے اور پھر دوست بھائی بہن ایک اچھے ساتھی بن جاتے ہیں ایک دوسرے کا خیال رکھتے ہیں ۔ جو کچھ لکھا جاتا ہے اچھا ہے تو واہ ورنہ تنقید کے لیے تیار سب کچھ اسی وقت ہمارے سامنے

اگر آپ کو اردو کے ساتھ تعلق بیان کرنے کو کہا جائے ، تو اس کو کیسے بیان کریں گی مزید یہ کہ آپ کی مادری زبان کونسی ہے؟
@ دیکھیں اردو ہم پچپن سے بولتے اور پڑھتے آرہے ہیں ۔ ایک بہت میٹھی زبان ہے تم بھی بولا جائے تب بھی برا نہیں لگتا ۔ اپنے اندر ادب لیے ۔ سب سے اہم بات پاکستان میں ٢٥ زبانیں بولی جاتی ہیں ۔ وہ سب کی سمجھ میں نہیں آتیں ۔سب کو ایک دوسرے کے قریب لانے والی واحد اردو ہے ، یہ تعلق ہی تو ہے جو میرے اور آپ کے درمیاں اردو نے بنا دیا ۔ ہمارے خاندان میں اردو پشتو پنجابی ہندکو سب بولی جاتیں ہیں

آپ کیا سمجھتی ہیں کہ اردو کو وہ مقام ملا ہے، جس کی وہ مستحق تھی؟
@یہ تو نہیں کہہ سکتے کہ اردو کو مقام مل گیا ہے اردو آج بھی اپنے اس مقام پر نہیں ہے جہاں اس کو ہونا چاہے تھا ۔لیکن سب سے بڑا مسئلہ ہمارے ہاں انگریزی بولنے کا بھوت لوگوں کے دماغ پر سوار ہو گیا ہے ۔ غلط ملط انگریزی بولیں گے ۔ لیکن بولنا ضروری ہے کہیں کوئی یہ نہ کہہ دے کہ ان پڑھ ہے یا پھر کم پڑھا لکھا ہے ۔ اور جو پڑھے لکھے ہیں وہ یہ ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں ۔ کہ اردو بولنے سے ان کی تعلیم حیثیت کم ہو جائے گی ۔ میں نے ایسے لوگ بھی دیکھے ہیں جو ہر وقت یہ راگ آلاپتے ہیں ۔ کہ ہم اردو کی خدمت کر رہے ہیں اور ہمارے بچے بھی اس میں شامل ہیں جب ان کے بچوں سے بات کرو تو اردو کی خدمت کرنا دور کی بات اردو بولنی تک نہیں آتی ۔۔

آنے والے دس سالوں میں اپنے آپ کو اور اردو بلاگنگ کو کہاں دیکھتی ہیں؟
@ اگر اسے محنت اور شوق سے کام ہوتا رہے تو انشاءاللہ وہ دن دور نہیں کہ اردو بلاکنگ سب سے آگے ہو گی ۔اور اس کی سب سے بڑی وجہ نیٹ ہے جہاں اسی وقت اپنے لکھے کا جواب مل جاتا ہے

بلاگنگ کے علاوہ دیگر کیا مصروفیات ہیں؟
@ پہلے ایک ماں ہوں بیوی ہوں ۔ اس کے علاوہ مجھے پرندے رکھنے کا بہت شوق ہے ۔ ان کو دیکھ کر ایک عجیب سی خوشی ہوتی ہے ۔ جب وہ اپنی سریلی آوازوں میں باتیں کرتے ہیں ۔

کسی بھی سطح پر اردو کی خدمت انجام دینے والوں اور اردو بلاگرز کے لیے کوئی پیغام؟
@ میں یہی کہوں گی جو بھی اردو کے لیے لکھ رہا ہے ایک تو اس کی اپنی خوشی شامل ہے اس کو سکون ملتا ہے ۔ لیکن خدا کے لیے جس بلاگ پر بھی تبصرہ کرنے جائیں تو یہ مت سوچیں کے منفی تبصرہ ہی کرنا ہے ۔ دونوں پہلو دیکھ ۔ اور اپنے جاننے والوں کے ہی بلاگ کا چکر نہ لگاہیں ۔ جو اچھی تحریر ملے چاہے وہ کسی کی بھی ہو تبصرہ لازمی کریں ۔ یہ سوچے بغیر کے جواب میں وہ بھی آکر آپ کے بلاگ پر لکھے ۔

آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ،کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتی ہوں؟
@پہلے تو اپنے بچوں کو نیک اور اچھا انسان بناوں ۔ یہ خواہش نہیں، حج کا سوچا اللہ سے دعا کی دو دفعہ مجھے یہ سعادت نصیب ہوئی ۔ اور میری زندگی کا مقصد دوسروں کی خدمت کرنا غریبوں کی مدد بے سہاروں کے کام آنا اللہ پاک مجھے یہ سب کچھ کرنے کی توفیق عطا فرمائے ۔ کہنے کی حد تک نہیں سرانجام دینے کی حد تک آمین

کچھ سوال ذرا ہٹ کے۔۔۔

پسندیدہ:

1۔ آپ کی پسندیدہ کتاب؟ یا کن موضوعات پر کتابیں پڑھنے میں دلچسپی رکھتی ہیں ؟
@(قرآن شریف ) جہاں تک موضوعات کی بات ہے تو کوئی بھی چاہے افسانے کی ہو یا شاعری کی کہانی دلچسپ ہو تو جب تک ختم نہیں ہو جاتی ۔ چھوڑتی نہیں ، ویسے میں منٹو کو بہت شوق سے پڑھتی ہوں ۔ اور قدرت اللہ شہاب ، انجم انصار۔

2۔کیا آپ کوشعر و شاعری سے لگاؤہے؟ اگر ہے، تو آپ کے پسندیدہ شاعر اور پسندیدہ شعر کون سا ہے؟
@اچھی شاعری کسی کی بھی ہو شعر کہنے کا شوق ہے لیکن اس طرف ابھی دھیان نہیں دیا ۔ نوشی گیلانی ،احمد فراز ۔ غالب پروین شاکر ، میرا جی
مجھے دیکھ کر جو اک نظر میرے سارے درد سمجھ سکے
جو ہو اس قدر چاہ گر مجھے اس نگاہ کی تلاش ہے

3۔ کہتے ہیں کہ رنگوں کے انتخاب سے کسی حد تک انسان کی شخصیت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے، تو ہم آپ کے پسندیدہ رنگ کے بارے میں بھی جاننا چاہیں گے؟
@ سنا تو میں نے بھی ہے لیکن کبھی غور نہیں کیا ۔ مجھے وائٹ پنک اور کالا

4۔ کونسا کھانا آپ بہت شوق سے کھاتی ہیں؟
@اللہ پاک نے ہم لوگوں کے لیے ایسی ایسی نعمتیں پیدا کی ہیں کہ کسی ایک کھانے کے بارے میں کہنا میرے لیے مشکل ہے میں شکر ادا کرتی ہوں اسلام واحد مذہب ہے جس میں ہم سب کچھ کھا سکتے ہیں ماسوائے حرام کے۔

5۔ آپ کا پسندیدہ موسم کون سا ہے؟
مجھے بہار اور خزاں بہت پسند ہیں ، بہار کے موسم میں جہاں پھول کھلتے ہیں وہاں خزاں اپنی اداسی میں ایک خوبصورت رنگ لیے ہوئے ہے

غلط/درست:

1۔ مجھے بلاگنگ کی عادت ہو گئی ہے؟
@ جی ہاں مجھے عادت تو میرا خیال ہے کم ہو گا ایک نشہ سا ہو گیا ہے اگر ایک دن نہ آوں تو لگتا ہے کچھ بھول گئی ہوں

2۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟
@اپنی طرف سے پوری کوشش کرتی ہوں کہ کچھ ایسا نا کروں جس سے افسوس ہو ۔ لیکن انسان ہونے کا ناطے کبھی نہ کبھی کچھ نہ کچھ ہو ہی جاتا ہے مجھے کوئی کچھ کہہ دے تو اتنا افسوس نہیں ہوتا ہاں میں کسی کو جواب میں کچھ کہہ دوں اس کا زیادہ افسوس ہوتا ہے

3۔ مجھے ابھی بہت کچھ سیکھنا ہے؟
@انسان ساری زندگی سیکھتا ہے اگر وہ یہ سیکھ جائے ۔

4۔ میں ایک اچھی دوست ہوں؟
@اپنی طرف سے پوری کوشش ہوتی ہے کہ دوستی نبھاوں کیونکہ دوست ہماری اپنی مرضی سے بنتے ہیں ۔ اور اچھے دوست قسمت والوں کو ملتے ہیں ۔آج بھی میری بچپن کی دوست میرے ساتھ ہیں ۔

5۔ مجھے غصہ بہت آتا ہے؟
تھوڑی دیر کو آتا ہے ۔ اور خاص کر جھوٹ پر بہت آتا ہے۔ جب میرے سامنے کوئی جھوٹ بول رہا ہو

اگر آپ سمجھتی ہیں کہ ہمیں کچھ پوچھنا چاہیے تھا، لیکن ہم نے پوچھا نہیں اور آپ کچھ کہنا چاہتی ہوں تو آپ کہہ سکتی ہیں۔

@ویسے تو آپ نے سب کچھ پوچھ لیا اب جواب دینے میں کتنی کامیابی ہوئی اس کا فیصلہ پڑھنے والے ہی کر سکتے ہیں ۔ بس یہی کہوں گی کہ یہ زندگی بہت چھوٹی ہے اس میں نفرت حسد اور ایک دوسرے کو نیچا دکھانے میں ضائع مت کرو ۔ اگر ہو سکے تو چھوٹی چھوٹی نیکیاں اکٹھی کرنے کی کوشش کرو ، اور جہاں تک ہو سکے اپنے سے نیچے کو دیکھو سکھ اور سکون پاو گے ۔ اور جو کچھ اللہ پاک نے آپ کو دیا ہے وہ کوئی لے نہیں سکتا ۔ اور جو کچھ دوسروں کے حصے میں ایا ہے وہ آپ نہیں چھین سکتے
اللہ پاک ہمارے ملک پاکستان کو ہمشہ قائم دائم رکھے ۔ ہماری پہچان آن اور ہماری جان پاکستان ہے ۔ پاکستان زندہ باد

تانیہ، اپنا قیمتی وقت نکال کر منظر نامہ کے لیے جواب دینے کا بہت بہت شکریہ۔

میں آپ کی مشکور ہوں کہ آپ نے مجھے اس قابل سمجھا ۔اگر جوابات صحیح نہ ہوئے دونوں ہاتھ جوڑ کر معذرت ۔ منظر نامہ کے بارے میں یہی کہوں گی کہ آپ بہت محنت سے پورے مہینے کی رپورٹ تیار کرتے ہو ۔ اور سب کے بارے میں رائے لکھتے ہو جو کہ آسان کام نہیں ہے دعا ہے ۔ منظر نامہ مزید ترقی کرئے امین

33 تبصرے:

  1. السلام علیکم، بہت خوشی ہوئی تانیہ رحمان صاحبہ کے متعلق جان کر، ان کا بلاگ واقعی ایک بہت اچھا بلاگ ہے اور زیادہ خوشی اس بات کی ہے کہ ایک ادیبہ اپنا بلاگ تواتر سے لکھ رہی ہیں، امید ہے کہ اسی طرح لکھتی رہیں گی۔
    [rq=203088,0,blog][/rq]مثنوی ‘قادر نامہ’ از غالب – ویب کی دنیا میں پہلی بار

  2. بہت اچھا انٹرویو رہا۔ تانیہ رحمن صاحبہ کی آمد سے لگتا ہے کہ اب افسانہ نگار اور ادیب بھی بلاگنگ کے سنجیدگی سے لینے لگے ہیں۔ امید ہے کہ یہ سلسلہ مستقل جاری رہے گا۔ منظرنامہ کا شکریہ
    [rq=214859,0,blog][/rq]اردو وکیپیڈیا پر اصطلاحات – میرا موقف

  3. سلام!
    تانیہ رحمان کی تحاریر میں نمایاں خوبی اسلوب اور موضوعات کا چناو ہے۔ ان کی اکثر تحاریر کسی نے کسی موضوع پر اچھوتا خیال پیش کرتی ہیں۔ لیکن ابھی منزل دور ہے۔ ان کی کچھ تحاریر پڑھ کر ایسا محسوس ہوا کہ یہ کم وقت میں زیادہ لکھنے کی کوشش کی گئی ہے۔ زیادہ لکھنے کی بجائے اگر اچھا لکھنے پر زور دیا گیا تو شائد مستقبل میں اردو ادب کو ایک اچھی خاتون لکھاری مل جائے۔
    کسی بھی موضوع پر قلم اٹھانے سے پہلے موضوع کا پیش منظر اور پس منظر دونوں کا علم رکھنا ضروری ہے، ان ضروری معلومات کی بناء پر بعض اوقات ایک چھوٹا سے فقرہ ایک بڑے سے مضمون سے زیادہ موثر ثابت ہوتا ہے۔

    والسلام
    [rq=235678,0,blog][/rq]وقت کی آواز

  4. السلامُ علیکم تانیہ آپی آپ کے بارے میں جان کہ بہت اچھا لگا میں تو آپ کو پہلے سی کہتا ہوں کہ آپ ماشااللہ بہت اچھا لکھتی ہو لیکن دعا ہے کہ اللہ کرے آپ کا قلم ہمیشہ چلتا رہے اور آپ کا لکھا ہوا لوگوں کے دلوں پہ چھا جائے۔
    شکریہ
    آپ کا چھوٹا بھائی
    عدنان
    [rq=235947,0,blog][/rq]ہم نے پاکستان کو کیا دیا

  5. اسلام و علیکم!
    انتہائی قابل عزت صدر صاحبہ
    میں تو ابھی تک کشمکش میں ہوں کہ میں نے آج صبح صبح کیا پڑھ لیا کس ہستی کے بارے میں جان گیا ویسے سچ تو یہ ہے کہ دو دن سے آپ کا یہ انٹرویو پڑھنے کی کوشش کر رہا تھا مگر کبھی بجلی بے وفائی کر جاتی اور کبھی کوئی خبر کا مسلئہ ہوجاتارات کو سونے سے قبل نیت کی تھی کہ کل صبح جاتے ہی انٹرویو پڑھنا ہے اور آج معمول سے ہٹ کر صبح سواآٹھ بجے ہی آفس آ گیا اور آپ کا انٹرویو پڑھا بہت خوشی ہوئی آپ کے بارے میں جان کر اسپیشلی آپ کے خیالات کے بارے میں جان کر میں سمجھتا ہوں کہ آپ دوسرے لوگوں سے ہٹ کر ہیں اور کافی حد تک حساس طبعیت کی بھی مالک ہیں
    اور جہاں تک میرا خیال ہے ان کے بارے میں انکو غصہ بھی بہت جلد آتا ہے
    ویسے خرم شہزاد خرم والی بات کہ تانیہ آپی کے بارے میں تو پہلے ہی جانتا تھا
    تو خرم بھائی نے درست فرمایا ان کے بارے میں پہلے سے کافی کچھ جانتے ہیں مگر ہی معلومات پڑھنے کے بعد لگا کہ وہ معلومات اونٹ کے منہ میں زیرہ والی حد تک ہی ہیں اصل علم میں اضافہ تو اب ہوا ہے
    اور اب صدر صاحبہ کے لکھنے کے بارے میں
    ایک اچھی لکھاری ہیں مگر کبھی کبھی انکی تحریر اپنا اصل مقصد کھو بیٹھتی ہے جیسا کہ اکثر اوقات انکی تحریر جہاں سے شروع ہوتی ہے اختتام پر بھی وہ ہی سلسلہ چل رہا ہوتا ہے اور انکی بیشتر تحریروں میں اگر تنقید ہو گی تو صڑف تنقید نظر آئے گی جبکہ تحریر کا مقصد ہوتا ہے تنقید برائے تعمیر
    تاہم میں سمجھتا ہوں کہ ہمارے فورم ہر تانیہ رحمان ،سحر صاحبہ،بہت اچھا لکھتی ہین انکی تحریریں جاندار ہوتی ہیں
    اپنی اس بہن کے بارے میں جان کر اچھا لگا خوش رہیں دعائوں میں یاد رکھیں اللہ نگہبان

  6. جعفر جو لکھنا ہے سچے دل سے لکھنا جو اچھی یا برائی ۔ یہ مت سوچو کہ ہر وقت کی تعریف ضروری ہے کیونکہ لکھنے والے کو خود اتنا اندازہ ہو جاتا ہے کہ وہ کتنے پانی میں ہے ۔ جہاں دوسرے ساتھوں نے بہت خوبصورتی سے تبصرہ کیا تنقید بھی تھی ۔ اور تنقید بہت ضروری ہے ۔ لیکن میری اپنی کوشش بھی ہوتی ہے کہ اگر تنقید کی جائے تو کسی کی دل آزاری نہ ہو ۔ ورنہ لکھنے کا مقصد فوت ہو جاتا ہے آپ سب بہت اچھے لکھاری ہو ۔ اور بہت وقت سے لکھ رہے ہو میں آپ لوگوں تک نہیں پنہچ سکتی ۔ لیکن آپ سب سے سیکھتی ضرور ہوں ۔
    [rq=277058,0,blog][/rq]کلامِ اقبال

  7. اسلام علیکم: بہت اچھا لگا۔ایک اچھا تخلیق کار ہونا باعث اعزاز ہے مگر ایک اچھا انسان ہونا اس سے بڑی بات۔ماشاللہ تانیہ رحمان اس لحاظ سے خوش قسمت ہیں کہ وہ قابل تعریف انسان ہیں اور قابل ستائش عمد ہ تخلیق کار بھی۔

  8. محسن جی میں کسی قابل نہیں ہوں بس کوشش ہے اور اللہ پاک سے دعا ہے ۔ کہ مجھ ناچیز سے جو بھی اور جیتنا بھی ہو سکے ۔ اچھا ہو ۔باقی عزت اور زلت اوپر والے کے ہاتھ میں ہے ۔ آپ خود بہت اچھے انسان ہو ۔ اس لیے بلکہ میں اگر یہ کہوں کہ مجھے بہت اچھے لکھاری ساتھی ملے تو غلط نہیں ہو گا یہاں سب بہت اچھے اور ایک فیملی ممبرز کی طرح ہیں ۔سب میرے لیے قابل احترام ہیں ۔محسن علی بہت شکریہ
    [rq=291649,0,blog][/rq]کلامِ اقبال

  9. السلام علیکم
    تانیہ کے بارے میں جان کر بہت اچھا لگا 🙂 ۔ مجھے تانیہ کا بلاگ ٹائٹل بہت اچھا لگا لگتا ہے۔ اور تحاریر تو ماشاءاللہ ایک سے بڑھ کر ایک ہوتی ہیں۔
    میری طرف سے نیک خواہشات کا تحفہ قبول کریں تانیہ! 🙂
    [rq=295771,0,blog][/rq]ہفتۂ چھینک

  10. تانیہ رحمان آپ سے ملنا اچھا لگا .ایک بات نہیں سمجھ آئی پورے منظرنامے میں کہ آپ نے اس ھستی کا زکر کیا جس نے آپ کو بلاگ کی دنیا سے تعارف دیا جو کہ خود بھی ایک شاعرہ اور افسانہ نگار ھیں پر اس کو اس قابل نہیں سمجھا کہ ھمیں اس ھستی کا نام بھی بتا دیتی تاکہ ھم بھی ان سے کہتے کہ ھمیں لکھاری بنا دیں.آپ کی اپنی ذات کی قصیدہ گوئی کے ساتھ یہ تضاد کچھ سمجھ نہیں آیا. بھلا عین الحق کی بات کرنے والا اپنے سفر کے سب سے اھم سچ کو کیس چھپا سکتا ھے .آپ شائد بھول گئی ھونگی ان کا نام .پلیز مجھے عنائت کر دیجیئے وہ نام اور ان کا کوئی پتہ بھی .مجھے ان سے ملنے کی اب خواہش ھو چلی ھے کہ اب پتھر کو چھو کر پارس کرنے والے لوگ ملتے ھہ کب ھیں

  11. ہاں تانیہ جی یاد آیا آپ کے کہنے کے مطابق وہ شاعر افسانہ نگار جنہوں نے آپ کو اس لکھنے کی دنیا سے متارف کرایا وہ دوست بھی ھیں تو دوستوں کا تعارف مکمل ھونا چاھیئے اور ان کی محبت اور ان کی خوبیوں اور اور عنایتوں کا زکر جہاں موقع ملے کرنا چاھیے .مجھے آپ کا اس طرح اتنی اھم بات کو سرسری طور پرلینا اچھا نہیں لگا .آپ کا سفر تو ابھی شروع بھی نہیں ھوا ھے اور آپ اپنے محسنوں کے نام ھی بھولنے لگی ھیں .آگے آگے دیکھیئے ھوتا ھے کیا

  12. تہمنیہ جی بہت اچھا لگا آپ کا آنا ۔ میں نے جس ہستی کا زکر نہیں کیا میں جاتنی ہوں کہ ان کو پسند نہیں ہے کہ میں ان کا زکر کروں ۔ یا ان کو دوست کہوں ، کیونکہ یہ میری اور ان کی زاتی باتیں ہیں ۔ اور ان کی خوشی میں میری خوشی ہے آج بھی میں ان کی عزت کرتی ہوں ۔ اگر یہ کہہ سکتی ہوں کہ مجھے یہاں تک لانے والی کوئی ہیں تو پھر احسان فراموشی کیسی اور نام نا لینا کیا معنی رکھتا ہے ۔میری ایک بات یاد رکھنا پلیز میں کچھ نہیں ہوں اور اگر کچھ نام ہو بھی گیا تب بھی کچھ نہیں ہوں گی ۔سب کچھ حاصل ہونے کے بعد ایک اچھا انسان نہ رہے تو بیکار ہے وہ سب کچھ لکھنا اور کہنا جس پر انسان خود عمل نہ کرئے ۔ آپ سب کچھ جانتی ہیں تو ضرور اس ہستی کا نام لکھ دیں مجھے خوشی ہو گئی اور اس طرح شاہد وہ ہستی مجھ پر غصہ نہیں کریں گی یہ نیکی آپ کر لو بہت شکریہ ۔ خوش رہیے
    [rq=320108,0,blog][/rq]پیارے بھائی رضی کو سالگرہ بہت بہت مبارک ہو

  13. میں آپ سب کی مشکور ہوں ۔ اور دعاگو ہوں اللہ پاک ہم سب کو ایک دوسرے کو برداشت کرنے ۔ صبر حوصلہ اور نیک نیتی سے اظہار کی توفیق دے آمین۔ خرم بھائی محمد وارث جی، محد احمد جی ،راشد کامران جی زین میرا پاکستان ( افضل جی ) ڈفر جی، ابو شامل جی ، شگفتہ جی ، منتظمین ، عدنان بھائی ، انجم شاہ بھائی، عبدالقدوس ، جعفر ، بلو، سید محسن علی ، فرحت کیانی ۔ تہمینہ اختر جی، طارق راحیل جی
    [rq=331359,0,blog][/rq]پیارے بھائی رضی کو سالگرہ بہت بہت مبارک ہو

  14. ویسے تو تانیا رحمان سے شناسائی پرانی ہے مگر اپنی قریبی دوست کے بارے میں آپ سب کی رائے جان کر اچھا لگا۔ تانیا تم نے اچھا ہی کیا جو اپنے محسنوں کی لسٹ میں میرا نام نہیں لکھا، ورنہ میں ناراض ہو جاتی۔ تہمینہ جی کی تشویش اچھی لگی مگر ان سے میں یہی کہونگی کہ آج مجھے فخر ہے کہ میں نے تانیا رحمان جیسی عمدہ لکھاری کو نا صرف اردو بلاگ کو بلکہ اردو ادب پر متعارف کروایا۔ خداوند کریم سے دعا ہے کہ یہ اپنے قلم سے انصاف کرتی رہے۔ آمین

  15. میں نے اکثر متحرمہ تانیہ رحمان صاحبہ کو پڑھا میں ان کو کوئی 2 سال سے نیٹ پر دیکھ رہا ہوں ۔ مختلف سایٹز پر لکھتی رہتی ہیں اور بہت جلد اردو بلاگ اور کالم نگاری پر عبور حاصل کیا ،ان کی تحاریر میں ایک خاصل بات ہوتی ہے کہ وہ جو سوچتی ہیں وہی کچھ لکھ دیتی ہیں ، بہت سچائی کے ساتھ اس بات کی پرواہ کیے بضیر کہ کوئی انکے بارے میں کیا رائے رکھتا ہے ۔کبھی کبھی زیادہ لکھتے ہوئے وہ اپنے اصل مقصد سے ہت بھی جاتی ہیں ۔اگر وہمحنت اور لگن سے لکھتی رہیں تو بہت جلد اردو ادب میں اپنا نام بنا لیں گی انشاءاللہ

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر