آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > urdu > منظر نامہ ایوارڈز 2009 : مشاورت

منظر نامہ ایوارڈز 2009 : مشاورت

آپ سب کو معلوم ہو گا ہی کہ پچھلے سال سے اردو بلاگرز کے لیے ایوارڈز کا سلسلہ منظر نامہ پر شروع کیا گیا تھا۔ جس کی تجویزسب سے پہلے اردو بلاگر “میرا پاکستان“ نے دی تھی۔ پچھلے سال صرف تین ایوارڈز جاری کیے گئے تھے۔
١۔ سال 2008ء کا بہترین بلاگ
٢۔ سال 2008ء کا فعال ترین بلاگ
٣۔ سال 2008ء کا بہترین نیا بلاگ
اب چونکہ 2009 بھی اپنے اختتام کی طرف جا رہا ہے تو ہمیں ابھی سے “ایوارڈز 2009“ کی پلاننگ کرنا ہو گی۔ اس سال بہت سے نئے اردو بلاگرز سامنے آئے۔ اور اسی لحاظ ہم تین ایوارڈز کی تعداد بڑھانا چاہ رہے ہیں۔ پچھلی بار اردو بلاگرز کی طرف سے ایوارڈز کے سلسلے میں منظر نامہ کو کوئی خاص تعاون حاصل نہیں رہا تھا۔ لیکن اس بار آپ تمام اردو بلاگرز سے درخواست ہے کہ ہماری مدد کر کے اس کام کو آسان بنائیں۔ نہ صرف ایوارڈز بلکہ نامزدگیوں میں بھی آپ سب کی مدد درکار ہو گی۔
ذیل میں کچھ ایوارڈز کے نام دئیے جا رہے ہیں، لیکن ان کو شامل کرنا ضروری نہیں۔ آپ سب کے مشورے اور آراء کے بعد ہی سال 2009 کے ایوارڈز منتخب کیے جائیں گے۔

١۔ بہترین بلاگ
٢۔ فعال ترین بلاگ
٣۔ نیا بہترین بلاگ
٤۔ بہترین مزاح بلاگ
٥۔ بہترین ٹیکنالوجی بلاگ
٦۔ بہترین گپ شپ بلاگ
٧۔ بہترین سیاسی بلاگ
٨۔ بہترین معلوماتی بلاگ
٩۔ بہترین ادبی بلاگ
١٠۔ بہترین بلاگ ڈئزائین

آپ ان ایوارڈز کے بارے میں کیا کہتے ہیں؟ کیا یہ ایوارڈز زیادہ ہیں؟ ان میں سے کس ایوارڈ کو شامل نہیں کرنا چاہیے؟ یا پھر کوئی اور ایوارڈز جو آپ شامل کرنا چاہتے ہوں؟

39 تبصرے:

  1. فہرست خوب ہے. اور تعداد بھی مناسب ہے. چند باتیں عرض کروں گا.

    اول تو یہ کہ “بہترین معلوماتی بلاگ” سے کیا مراد ہوتی ہے یہ سمجھنے سے قاصر ہوں. کیوں کہ معلومات یہ عام لفظ ہے اور اس کا احاطہ کم و بیش ہر شعبے پر ہے خواہ وہ اسلامیات ہو، گھریلو زندگی، معیشت، تجارت، سائنس، ٹیکنولوجی، سیاست، تعلیم یا کچھ اور. لہٰذا ایسے غیر متعین اوارڈ کے لئے نامزدگی اور رائے دہی دونوں ہی مشکل ہوگی. دوسری بات خاص کر ماوراء بٹیا مخاطب کر کے کہنی ہے کہ جب کبھی منظرنامہ کی شناخت سے کوئی مضمون تحریر کریں تو صیغہ تانیث استعمال کرنے کے بجائے جمع مذکر کا صیغہ استعمال کر لیا کریں اس سے منظرنامہ کے آرگنائزیشن ہونے کا احساس ہوگا نا کہ فرد واحد. مثلاً “ایوارڈز کی تعداد بڑھانا چاہ رہی ہوں” کے بجائے “ایوارڈز کی تعداد بڑھانا چاہ رہے ہیں” زیادہ موزوں فقرہ ہو سکتا تھا.

    والسلام

  2. فہرست اچھی ہے پر میرے خیال میں .. بہترین گپ سپ کے بجائے گر ایک عدد بہترین زنانہ بلاگ کا ایوارڈ ہو جائے تو ! ! :hunh:

    خواتین بلاگرز کی تعداد بھلے کم ہے پر وہ لکھتی زیادہ اور خوب ہیں ..

  3. اتنے زیادہ ایوارڈ دیکھ کر میں سوچ رہی ہوں کہ بلوچستان اسمبلی والا حال نہ ہو جاءے. پینتیس چھتیس ارکان پہ مشتمل اسمبلی کے اندر دو تین کو چھوڑ کر سب وزیر ہیں. میراخیال ہے کہ آپ سب کو کوئ نہ کوئ ایوارڈ دینا چاہ رہی ہیں میری مانیٖں تو سب بلاگروں سے پوچھ لیں کہ انہیں اپنے بلاگ کے لئے کس ٹائٹل کا ایوارڈ چاہئے. اس طرح یہ مسئلہ کافی حد تک ح ہو جائے گا. اگر ایک ہی نام کو دو لوگ لینا چاہیں تو ٹاس کر لیں جو آپ کو زیادہ پسند ہو وہ اسے دیدیں دوسرے کو صبر اور محنت کی تلقین کردیں لیکن اگلے سال انکا زیادہ خیال رکھئیے گا. اس طرح احساس محرومی نہیں پیدا ہو پائے گا. اور آپکو اپنے ضمیر پہ کوئ بوجھ بھی نہ محسوس ہوگا.
    اس میں میرا خیال ہے کہ ایک تبصروں کے لحاظ سے بلاگ بھی شامل ہونا چاہئیے کہ بعض بلاگز پر اصل پوسٹ سے زیادہ مبصرین کے تبصرے ہوتے ہیں. بعض بلاگز اتنے جذباتی ہوتے ہیں کہ مجھے اپنے آنسو صاف کرنے پڑتے ہیں . ایسے بلاگز بھی دو اقسام کے ہیں، ایک جذباتی سیاسی بلاگز اور دوسرے جذباتی سماجی بلاگز.یہاں میں یہ کہتی چلوں کہ مجھے اگر اس قسم کا ٹائٹل دینے کی کوشش کی گئ جسکا عنوان ہو بہترین صنف نازک بلاگ تو میں اسے صرف اس صورت میں لینا چاہونگی جب اسکے ساتھ ایک اور ایوارڈ ہو جسکا نام ہو بہترین مردانہ بلاگ. آپکو مزید مشکلات میں پڑنے سے بچانے کے لئے میں اپنے آپکو اس ایوارڈ کی تقسیم سے دور رکھنا چاہونگی. غفران کی تحریر پڑھنے کے بعد اب میں اپنے آپکو خاصہ سینئر محسوس کرتی ہوں اور سمجھتی ہوں کہ ہمارے جونئیر ساتھیوں کی زیادہ حوصلہ افزائ ہونا چاہئے تاکہ انہیں مزید اورمسلسل لکھنے کی تحریک ملے.

  4. میں چونکہ پرانے وقتوں کا آدمی ہوں اسلئے میری باتیں بھی پرانی ہوتی ہیں ۔ مطلب ہے جدید نہیں ہوتیں ۔ لیکن نہ کہوں تو حرف آتا ہے کہ بُڈھے معلومات جوان نسل کو منتقل نہیں کرتے ۔ اگر حوصلہ افزائی کی فہرست میں بناتا تو کچھ یوں ہوتی
    1 ۔ بہترین بلاگ [ہر لحاظ سے]
    2 ۔ فعال ترین بلاگ [تواتر کے لحاظ سے] ویسے میرے خیال میں فعال وہ چیز ہوتی ہے جو تواتر کے ساتھ انسانیت کیلئے مفید ہو نہ کہ صرف تواتر رکھتی ہو
    3 ۔ نیا بہترین بلاگ [پچھلے مقابلہ کے بعد نمودار ہونے والے بلاگوں میں سے]
    4 ۔ بہترین مزاح والابلاگ [شُستہ مزاح]
    5 ۔ بہترین فنی بلاگ [یہاں فن کی وضاحت ہونا چاہیئے]
    6 ۔ بہترین گپ شپ بلاگ غیر ضروری ہے
    7 ۔ بہترین سیاسی بلاگ [صحتمند سیاست]
    8 ۔ بہترین معلوماتی بلاگ [تاریخی اور مطالعاتی معلومات]
    9 ۔ بہترین ادبی بلاگ [ اُن علاقوں کے ادب کے متعلق جہاں اُردو بولی یا سمجھی جاتی ہے]
    10 ۔ بہترین بلاگ ڈئزائین [بلاگر کا ترتیب دیا ہوا یا کم از کم اُردوایا ہوا]

    ایک دلچسپ بات ۔ ابںِ سعید صاحب جن کی عمر 24 سال ہے نے ماورہ صاحبہ کو بیٹی مخاطب کیا ہے

  5. میں افتحار انکل کی تجاویز سے اتفاق کرتا ہوں۔ دوسری بات، اردو ٹیک ڈاٹ نیٹ وینس
    http://www.urdutech.net/venus/
    اور اردو سیارہ
    http://www.urduweb.org/planet/
    کی طرز پر ایک صفحہ منظر نامہ کے تحت بھی تشکیل دیا جائے جس پر تمام اردو بلاگرز کی تازہ ترین تحاریرروزانہ کے حساب سے اپ ڈیٹ ہوں، اردو ویب والے اپنی پسند کے بلاگرز کو شامل کرتے ہیں اور بیشتر اردو پڑھنے والے اردو سیارہ سے بلاگز کی تحاریر ملاحظہ کرتے ہیں۔ یوں اگر کوئی بلاگر اردو سیارہ میں شامل نہیں تواسکا بلاگ اردو پڑھنے والوں کی نظر سے نہیں گزر سکے گا۔ جیسے کچھ عرصہ قبل انتظامیہ سے جھگڑے کی وجہ سے میرا بلاگ اردو سیارہ سے نکال دیا گیا، اسی طرح بیشتر دوسرے اردو بلاگر بھی اس لسٹ میں نہیں۔ چونکہ اردو بلاگنگ کا یہی ایسا پلیٹ فارم ہے جو مشترکہ ہے سب بلاگرز کے لیے اس لیے میں یہ تجویز دے رہا ہوں۔ بہت شکریہ

  6. میرے خیال میں کیٹیگریز بہت زیادہ ہیں. اردو بلاگ اتنے زیادہ نہیں ہیں. پچھلے سال والی کٹیگریز کو ہی جاری رکھیں تو اچھا ہوگا.

    میں جنسی تفریق کا مخالف ہوں اس لئے زنانہ بلاگ کو ایوارڈ دینے کی تجویز سے اتفاق نہیں کرتا. خواتین کو مردوں کے ساتھ بھرپور مسابقت کا موقع ملنا چاہئے اور ہر کٹیگری میں ان کے بلاگز کو زیر غور لایا جائے.

  7. @ افتخار اجمل بھوپال

    برادرم آپ کے لئے یقیناً دلچسپ بات ہو سکتی ہے پر محفلین تو اس کے عادی ہیں. میں ماورہ بٹیا کی تین گنا عمر کی خواتین کو بھی عموماً یوں ہی مخاطب کرتا ہوں. حاصل کلام یہ کہ اپنی عمر سے قطع نظر میں پیدائشی بوڑھا ہوں.

  8. افتخار انکل کی تجاویز سے اتفاق کرتا ہوں تاہم فنی بلاگ سے متفق نہیں ہوں.. مرد وزن کی تفریق واقعی نہیں ہونی چاہئیے.. زیادہ زمروں سے اتفاق نہیں کرتا تاہم جو ضروری ہیں وہ لازمی ہونے چاہئیں.. میرے خیال سے افتخار انکل کی تجاویز کافی معتدل وموزوں ہیں.. امید کرتا ہوں اس دفعہ اردو بلاگر برادری پہلے سے زیادہ سرگرمی دکھائے گی.. 🙂

  9. السلام علیکم
    اگر میں اپنی دل کی باتیں لکھوں تو معلوم نہیں اچھأ ہو یا برا بہر کیف میرا دل کرتا ہے کہ اردو بلاگنگ کی ترقی کے لئے کئی اقدامات ناگزیر ہیں۔ اسی طرح اردو بلاگنگ کو ایک مثبت سمت لیجانے کے لئے بھے بہت سارے امور مد نظر رکھنے چاہئے۔ اردو بلاگرز کے رمیان علمی مقابلہ بازی ایک اچھی پیش رفت ثابت ہوسکتی ہے۔ اسی طرح انعامات بلکہ قیمتی انعامات رکھنے سے بھی ایک اچھا ماحول پیدا کیا جاسکتا ہے۔ میں نے اپنے نستعلیق بلاگ پر ایک چھوٹی سی کاوش کی ابتدا کی ہے لیکن وہ چونکہ نستعلیق اور قرآن پاک تک محدود ہے اس لئے اسے اردو بلاگنگ کے زمرے میں شامل نہیں کیا جاسکتا۔
    ماورا بہن میں نے آپ سے اردو وینس کے متعلق پوچھا تھا ایمیل میں اسکا مقصد یہ تھا کہ ایک ایسا بلاگ تیار کیا جائے جو ہر لحاظ سے منفرد ہو۔ جو باتیں اردو سیارہ اور وینس میں نہیں وہ اس میں شامل کی جائیں۔ ایک اور تجویز جو میرے ذہن میں آتی ہے وہ اردو بلاگرز فورم ہے۔۔۔ آپ کے خیال میں یہ کتنا کارگر ثابت ہوسکتا ہے؟

  10. السلام علیکم
    میں نے یہاں تبصرہ کیا تھا لیکن معلوم نہیں پبلش کیوں نہیں ہوا؟
    1- کیا یہ تجویز قابلِ قبول ہوگی کہ اردو بلاگرز کے درمیان علمی مقابلہ بازی رکھی جائے اور بہترین بلاگرز کو سال کے آخر میں عینی یا نقدی انعامات سے نوازا جائے؟

    2- ایک فورم کی تجویز جو اردو بلاگرز کے نام سے ہو اور اس میں صرف بلاگنگ اور بلاگرز کے مسائل وغیرہ ہوں۔ مثال کے طور پر بلاگنگ کیسے شروع کی جائے؟ فری بلاگنگ کے مسائل۔ تھیمز وغیرہ۔ تکنیکی مسائل کا حل؟ ورڈ پریس۔ بلاگ سپاٹ۔ بلاگر وغیرہ کے جو مسائل ہیں وہ شئیر ہوں۔۔۔

    ان دونوں تجویزوں کو آپ کس نظر سے دیکھتے ہیں؟

  11. سعود بھیا: جیسا کہ آپ کو معلوم ہے کہ اردو بلاگرز کی تعداد اتنی زیادہ نہیں ہے۔ اور ایسے اردو بلاگرز بھی بہت کم ہیں جو موضوعاتی بلاگ لکھتے ہوں۔ اس لیے ہر کیٹگری کے لحاظ سے ایوارڈ دینا مناسب نہیں ہو گا۔ یہاں معلوماتی بلاگ سے مراد ایسا بلاگ ہے جس بلاگ پر مختلف شعبے یا کیٹگری سے متعلق مواد پڑھنے کو ملتا ہو۔ یا جیسا اجمل چچا نے کہا ہے کہ تاریخی اور مطالعاتی معلومات۔ تو ایسا بھی کیا جا سکتا ہے۔
    دوسری بات: اگر آپ باقی تحریر دیکھیں تو میں نے باقی جگہ پر جمع جیسے “ہمیں“ یا “ہمارا“ کا استعمال کیا ہے۔ لیکن فرد واحد کا استعمال کیوں نہ کروں؟؟ جبکہ ایسا صرف میں ہی چاہ رہی ہوں یعنی کسی اور سے مشورہ میں نے نہیں کیا۔ اور فی الحال میں اکیلے ہی منظر نامہ کو دیکھ رہی ہوں۔ لیکن پھر بھی آپ پچھلی تمام پوسٹس دیکھیں تو میں جمع کا صیغہ ہی استعمال کرتی ہوں۔ حالانکہ میں ایک ہی ہوں، پھر بھی۔ 🙂
    کچن سے متعلقہ ایوارڈ میں نے سوچا تھا لیکن صرف ایک عد ہی بلاگ ہے، تو اس میں مقابلہ نہ ہو سکے گا۔

    ریحان، آپ کہنا چاہ رہے ہیں کہ خواتین کے بلاگ پر گپ شپ ہی ہوتی ہے۔ 😉
    اور نہیں۔ مردانہ ، زنانہ الگ الگ ایوارڈز نہیں ہو سکتے۔ اگر کوئی خاتون اچھا بلاگ لکھتی ہے تو اس کا مقابلہ مرد سے ہو سکتا ہے۔

    جعفر، یہ حتمٰی فہرست تو نہیں۔۔۔!! 🙂

    محب، یوتھ بلاگ؟؟

    عنیقہ، آپ کو رائے دینے کو کہا تھا تنقید کرنے کو نہیں۔۔!! :dxx:

    افتخار چچا، آپ کا بہت شکریہ۔ کسی نے تو پوسٹ کے مطابق تبصرہ کیا۔ گپ شپ کا نکال دیتے ہیں۔ اور باقی تمام تبصروں کے بعد حتمٰی فہرست بھی بناتے ہیں۔

    یاسر، فی الحال منظر نامہ کی طرف سے ایسا کرنا ممکن نہیں ہے۔ لیکن اس بارے میں سوچا جا سکتا ہے۔

    فرحان دانش، بدتمیز کے بلاگ پر تبصرہ کر دیں۔

    مکی، شکریہ

    راسخ کشمیری، آپ کے بلاگ پر مقابلے والی تحریر دیکھی ہے۔ منتخب عنوانات پر لکھنے کے لیے بلاگرز کو منظر نامہ پر موقع دیا تو گیا تھا لیکن یہ سلسلہ زیادہ نہ چل سکا۔ چند ایک بلاگرز نے ہی لکھا۔
    اردو ٹیک کی طرف سے اردو بلاگرز کے لیے فورم بنایا تو گیا تھا لیکن انتظامہ کی سستی آڑے آ گئی۔ اس کام کے لیے بہت سا وقت درکار ہوتا ہے، جو کہ شاید کسی کے پاس ہو۔

    عمر، دسمبر۔۔۔!

  12. ماوراء بٹیا پہلی بات تو یہ کہ میں نے صرف مشورہ دیا تھا آپ کا جی کرے تو واحد مونث بلکہ نصف مونث :haha: کا صیغہ ہی استعمال کر لیا کریں. ویسے جو رائے صرف آپ کی ہو اسے اپنے نام سے بھی پوسٹ کر سکتی ہیں.

    خیر ان باتوں کو چھوڑیں اور انعامات کی بات کرتے ہیں.

  13. جی ماورا ( منظر نامہ ماڈریٹر ) جی جی

    اور میں نے تو یو ہی مزاق میں ایس ان جونئیر ریٹائیرڈ بلاگر اپنی ایک شوخی مزاقیہ رائے دی تھی آپ حضرات نے تو دل پر لے لیا ۔۔ زنانہ سے صنف نازک کیٹگری بنادی ۔۔

    صنف ویسے ہے تو نازک ہی پر آپ زرا پڑھیں خواتین بلاگرز کو ۔ اچھے بھلے کو جو نازک کردیں ۔۔ کوئی کہے گا ان کو صنف نازک ، خواتین بلاگرز کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے کوئی سپیشل ایوارڈ کی ضرورت تو نہیں البتہ گنجائیش کی امید ہو سکتی ہے ۔

  14. بہت خوشی ہو رہی ہے کہ بلاگرز عید ملن کے سلسلے میں ہونے والی ملاقاتوں کے دوران جس موضوع پر توجہ دلائی گئی اس پر اتنی جلدی آراء بھی طلب کر لی گئی ہیں۔ بہت شکریہ منظرنامہ!
    دوسری بات یہ کہ اعزازات کی فہرست بہت زیادہ ہے، میرے خیال میں ہمیں گزشتہ سال کے تین ایوارڈز یعنی 1۔ بہترین بلاگ، 2- بہترین نیا بلاگ اور 3۔ فعال ترین بلاگ کو معیار بنا لینا چاہیے اور ہر سال صرف انہی تین اعزازات کے لیے رائے شماری ہونی چاہیے البتہ اس کے لیے نامزدگیوں کا مرحلہ طے کرنا ہوگا۔ ایسا بھی ہو سکتا ہے کہ بغیر نامزدگیوں کے آراء طلب کی جائیں۔
    میں بہت زیادہ اعزازات کا حامی نہیں ہوں، کیونکہ اردو میں اس وقت گنے چنے بلاگرز ہیں اور اگر منظرنامہ پر اعزازات کی تعداد زیادہ ہوجاتی ہے تو تقریباً ہر دوسرا یا تیسرا بلاگ منظرنامہ ایوارڈ کا حامل ہوگا، جس سے اس کی ساکھ متاثر ہو سکتی ہے البتہ خوبصورت ترین بلاگ یعنی بہترین بلاگ ڈیزائن کا ایوارڈ دیا جا سکتا ہے لیکن وہ دینا اس لیے ضروری نہیں کیونکہ اکثر بلاگرز اپنی بلاگز کے سانچے بدلتے رہتے ہیں۔
    باقی اس حوالے سے آپ کو جو خدمات درکار ہوں، اس کے لیے میں حاضر ہوں۔ اپنی بساط کے مطابق اس سلسلے میں کچھ کام کر سکتا ہوں۔

  15. میں ایک عدد سادہ سی ورڈ پریس تھیم پر کام کر رہا ہوں. در اصل اپنی ایک ذاتی ضرورت کے تحت اس کی اردو کاری کر رہا تھا تو سوچا کیوں نہ اردو بلاگرز کو ایک تحفہ ہی دے دوں. اس لئے اس مکمل تھیم کو اردو کے لئے درست کر رہا ہوں. کافی مراحل طے ہو چکے ہیں بس کچھ گرافکس درست کرنے ہیں اور ایک واک تھرو ٹیسٹنگ کرنی ہے. ان شاء اللہ جلدی ہی پیش کرتا ہوں.

  16. منظر نامہ کی تھیم گوگل کروم پر ٹھیک طرح نظر نہیں آتی، انٹرنیٹ ایکسپلورر پر بھی عجیب و غریب نظر آتی ہے۔ کچھ لائنیں مکمل اور کچھ آدھی کٹی ہوئی نظر آتی ہیں، اس لیے منظر نامہ پر کوئی اچھی سے تھیم لگائی جائے۔
    دوسری بات منظرنامہ پر ڈاون لوڈ سیکشن کا اضافہ کیا جائے، جس پر اردوائی گئی تمام تھیمز ڈاون لوڈ کے لیے موجود ہوں۔ اور اگر کوئی بلاگرکسی نئی تھیم کو اردواتا ہے تو اسے بھی فوری طور پر اس ڈاون لوڈ میں شامل کر دیا جائے تا کہ تمام لوگ استفادہ کر سکیں۔
    اگر منظر نامہ سنبھالنے کے لیے منتظمین کی کمی ہے تو فعال ترین بلاگر کواس کی رضا مندی سے منظرنامہ پر منتظمیت کی کچھ ذمہ داری سونپ دی جائے، کیوں کہ زیادہ تر بلاگر وقت کی کمی کا شکار ہیں، فعال ترین بلاگر کا فعال ہونا یہ ظاہر کرتا ہے کہ اس کے پاس دوسروں سے کچھ زیادہ وقت موجود ہے۔
    اسی طرح یہ ذمہ داری ماہانہ بنیاد پر بھی دی جا سکتی ہے، جو کہ زیادہ تر فعال رہنے والے بلاگرز کو دی جائے، یوں وہ ایک ماہ تک منظرنامہ کی دیکھ بھال کی اضافی ذمہ داری اٹھائیں۔

  17. میں ابو شامل صاحب کی رائے سے متفق ہوں. ایوارڈز کی تعداد کم سے کم ہونی چاہیے بلکہ بہترین نئے بلاگ کی کیٹیگری بھی اگر ختم کردی جائے کوئی مضائقہ نہیں کیوں کہ کچھ بلاگرز نے چھ سے آٹھ مہینے میں اتنی عمدگی سے بلاگنگ کی ہے کہ ان کو بہترین بلاگ کے شعبہ میں مقابلے سے روکنا ناانصافی کی بات ہے.

    یاسر میرے بھائی فعال ہونے کا یہ مطلب نہیں کہ انسان ویلا بیٹھا ہے؛ کچھ لوگ بلاگنگ کو سنجیدگی سے لیتے ہیں اور ان کے لیے یہ مشغلے سے کچھ بڑھ کر ہی ہے اور وہ اس کے لیے وقت مختص کرتے ہیں فارغ ہونے کا انتظار نہیں کرتے اور اس بات کے لیے انہیں ایوارڈ دیا جاتا ہے.

  18. ابوشامل، عید ملن ملاقات میں کیا واقعی ایوارڈز کے بارے میں بات ہوئی تھی؟؟ مجھے اس بات کی خبر بالکل نہیں ملی. یہ پوسٹ تو میں نے دو، تین ہفتے سے لکھ کر رکھی ہوئی تھی. پوسٹ کرنے کا وقت ابھی ملا تو پوسٹ کر دی. لیکن عید ملن ملاقات میں اس بارے میں کیا بات ہوئی..اس کا مجھے کچھ علم نہیں.. 🙁

    ماوراء

  19. ماوراء! عید ملن کے انتظامات کے سلسلے میں ملاقاتوں کے دوران ایک مرتبہ میں نے عمار کی توجہ اس جانب دلائی تھی کہ 2009ء ختم ہو رہا ہے، اعزازات کے اجراء کا منصوبہ ہے یا نہیں؟ اس پر شاید تھوڑی سی بات ہوئی تھی۔ عید ملن کے دوران اس موضوع پر بات نہیں ہوئی تھی۔

  20. گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی ایوارڈز کی تیاری ذمہ داری بھی ناچیز لے رہا ہے۔ 2008ء میں میری اچانک مصروفیت کے باعث یہ ذمہ داری خاور بلال نے نبھائی تھی۔ امید ہے اس مرتبہ بھی ان کی مشاورت رہے گی۔

  21. […] پچھلی پوسٹ میں آپ سب کی آراء کو سامنے رکھتے ہوئے منظر نامہ نے فیصلہ کیا ہے کہ اس سال بھی پچھلے سال کی طرح اردو بلاگنگ کی دنیا میں تین ایوارڈز دئیے جائیں. یہ تین ایوارڈز کچھ اس طرح سے ہیں: 1. 2009 کا بہترین بلاگ 2. 2009 کا فعال ترین بلاگ 3. 2009 کا بہترین نیا بلاگ […]

  22. @ ابن سعید
    حضرت اکبر ! آپ محفل پر زیک کو زکریا بھائی کہہ کر مخاطب کرتے ہیں اور ان کے والد محترم یعنی افتخار اجمل انکل کو جب یہاں برادرم لکھ دیا تو مارے حیرت کے میرے قلم کی سیاہی آدھ گھنٹے کے لئے سوکھ ہی گئی

  23. @ حیدرآبادی

    ہا ہا ہا ہا یعنی میری یہ حرکت بھی محسوس کر لی گئی. اب چاچو موصوف یا بالفاظ دیگر بابائے اردو بلاگنگ اتنے بھی غیر معروف نہیں کہ ان کی شناخت کرانے کی نوبت آ جائے. در اصل وہ خطاب آخری جملہ “حاصل کلام یہ کہ اپنی عمر سے قطع نظر میں پیدائشی بوڑھا ہوں” لکھنے کے بعد لکھا تھا. اور اس کا اسکوپ صرف اور صرف اسی پیغام تک محدود ہے. 🙂

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر