آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > ایوارڈز > منظر نامہ ایوارڈز 2009: نامزدگیاں

منظر نامہ ایوارڈز 2009: نامزدگیاں

پچھلی پوسٹ میں آپ سب کی آراء کو سامنے رکھتے ہوئے منظر نامہ نے فیصلہ کیا ہے کہ اس سال بھی پچھلے سال کی طرح اردو بلاگنگ کی دنیا میں تین ایوارڈز دئیے جائیں. یہ تین ایوارڈز کچھ اس طرح سے ہیں:
1. 2009 کا بہترین بلاگ
2. 2009 کا فعال ترین بلاگ
3. 2009 کا بہترین نیا بلاگ

اب ہمارا دوسرا مرحلہ ان ایوارڈز کی نامزدگیاں ہیں۔ آپ سب سے گزارش یہ ہے کہ اس سال یعنی2009 میں اردو بلاگنگ میں ہونے والی تمام سرگرمیوں پر ایک نظر ڈالیں اور ان تین ایوارڈز کے لیے درست نام تجویز کریں. مزید۔۔۔ اس پر بھی بحث کریں کہ ایک ایوارڈ ووٹنگ کے لیے کتنے بلاگرز نامزد ہونے چاہیں. تین یا پانچ؟
اگر ہمیں آپ کی طرف سے تین یا پانچ سے زیادہ نام موصول ہوئے تو پچھلے سال کی ہی طرح فائنل نامزدگیاں ایک پینل کے فیصلے سے کی جائیں گی۔
آپ اس بلاگ پوسٹ پر رائے دے کر بھی نامزدگیاں دے سکتے ہیں یا اگر آپ نام سب کے سامنے نہیں دینا چاہتے تو بذریعہ ای میل آپ منظر نامہ سے رابطہ کر سکتے ہیں  . منظر نامہ کا ای میل ایڈریس تو آپ کو معلوم ہو گا لیکن پھر بتاتے چلیں: mail[at]manzarnamah.com

یاد رہے کہ نامزدگیاں دینے کی آخری تاریخ 27 اکتوبر ہو گیا.

15 تبصرے:

  1. 2009 کے شروع میں اور درمیان میں نئے وارد ہونے والے کچھ اردو بلاگرز نے انتہائی تواتر سے اور عمدہ بلاگنگ کی ہے اور مجھ سمیت کئی لوگ انہیں بہترین بلاگ کی کیٹیگری میں نامزد دیکھنا چاہتے ہیں؟ کیا یہ اس سال ممکن ہوگا یہ انہیں مزید ایک سال نئے ہونے کی سزا پانی ہوگی؟ نامزدگیاں میل کردی ہیں. میرا تمام قارئین کو مشورہ ہے کہ نامزدگیاں ای میل کریں تاکہ یہاں غیر ضروری بحث نہ چھڑ جائے.

  2. السلام علیکم،
    میری انتہائی ذاتی رائے میں ہر سال صرف اور صرف ایک ایوارڈ ہونا چاہیئے، یعنی کسی بھی سال‘اردو کا بہترین بلاگ‘اور بس۔ فعال ترین بلاگ انتہائی فضول ایوارڈ ہے، یعنی جو رطب و یابس مسلسل لکھا جائے وہ فعال ہو گیا، کسی بھی جگہ یہ کوئی معیار نہیں، اگراحباب کو یاد ہو تو ایک اردو لطیفوں والا بلاگ تھا روزانہ پچاس کے حساب سے تو کیا پھر یہ ایوارڈ اسکا حق نہیں؟
    نئے بلاگ کا ایوارڈ موجودہ شرط کے ساتھ یعنی لکھتے ہوئے ایک مکمل سال بیت گیا ہو، لایعنی ہے جسے لکھتے ہوئے ایک پورا سال گزر گیا ہے وہ نہ صرف فعال ہے اور نیا نہیں ہے بلکہ ہو سکتا ہے کہ وہ سب سے بہتر ہو جسکی طرف اوپر راشد صاحب نے لکھا ہے۔
    سو میں پھر دہراؤنگا کہ ایک ہی ایوارڈ رکھیں اور اسکا فیصلہ رائے شماری کی بجائے، پانچ سات بلاگرز کے پینل سے کروایں جو اس ایوارڈ کی دوڑ میں نہ ہوں اور جس کو ایک سال یہ ایوارڈ مل جائے وہ ہمیشہ کیلیے اس دوڑ سے باہر ہو جائے بلکہ اگلے سالوں کیلیے پینل کا رکن بھی ہو جاؕئے (اگر زندہ یا بلاگر رہے تو) 😛

  3. حیف ہوگا اگر میں کسی شخص کو نامزد کروں کیونکہ میری اردو بلاگنگ پر اتنی گہری نظر نہیں ہے۔لیکن میرے خیال میں ان لوگوں کو نامزد کرنا اردو بلاگنگ کو زیادہ کارگر ہوگا جو سیریس بلاگنگ کرتے ہیں۔ اس کا مطلب یہ نہیں کہ میں مزاح نگاروں کو دائرۂ بلاگنگ سے خارج کر رہا ہوں بلکہ سیریس مذاق سے مراد معیاری مذاق کہہ سکتے ہیں مراد ہے۔

    میرا بہت دل کرتا ہے کہ ایک باقاعدہ ایوارڈ شروع کیا جائے جو خاص شرائط کے تحت ہو اور سال کے آخر میں جیتنے والے کو اسکی خدمات کے پیش نظر قیمتی انعام سے نوزا جائے۔

  4. گو نامزدگی کا آخری دِن آگيا ہے ليکِن ابھی بھی اپنا حِصّہ ڈالنا ضرُوری ہے تو ميری طرف سے

    2009 کا بہترين بلاگ کا ايوارڈ ميرا پاکِستان کا ہو سکتا ہے

    2009 کا فعال ترين بلاگ اجمل انکل کا ہو سکتا ہے
    اور

    2009 کا نيا بہترين بلاگ کے لِۓ ميری نظر ميں تين لوگ ہيں

    جعفر،ڈفر اور کامران يعنی کنفيوز کامی

    کيا خيال ہے آپ لوگوں کا ؟

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر