آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > اردو بلاگنگ > منظرنامہ ایوارڈ 2009: نتائج اور اجراء

منظرنامہ ایوارڈ 2009: نتائج اور اجراء

منظرنامہ کے قارئین کو سلام
اللہ کے فضل و کرم سے منظرنامہ ایوارڈز 2009کا سلسلہ اپنے اختتام کو پہنچا۔ اس سلسلے کو ایوارڈز کے چناؤ سے لے کر نامزدگیوں اور پھر ووٹنگ تک کے مراحل سے گزارا گیا۔ تین ایوارڈز کا فیصلہ آپ سب کی مشاورت کے بعد کیا گیا اور پھر آپ سب کے تعاون سے ہی نامزدگیوں کا مرحلہ بھی بہت اچھے طریقے سے اپنے انجام کو پہنچا تھا۔ اس کے بعد ووٹنگ کا مرحلہ آپ سب کے تعاون سے شروع ہوا تھا اور اب بخیروعافیت اپنے انجام تک پہنچا گیا ہے۔ منظرنامہ کو آپ سب کے تعاون کے علاوہ ایوارڈز گرافکس کی تیاری کے لئے ابو شامل صاحب اور خاور بلال صاحب کا تعاون حاصل رہا اس کے علاوہ ووٹنگ کے لئے اردو لاگ اور اردو لاگ کے ایڈمن ابن سعید صاحب کا تعاون رہا۔
جیسا کہ آپ سب جانتے ہیں اس بار ووٹنگ کے لئے ریٹنگ کا طریقہ رکھا گیا تھا اس لئے جس نے سب سے زیادہ ستارے حاصل کئے ہیں وہی ایوارڈ کا حق دار ہے۔

منظرنامہ ایوارڈ 2009 کے نتائج کچھ یوں رہے

ٹوٹل 71 لوگ اردو لاگ پر رجسٹرڈ ہوئے. لیکن 60لوگوں نے ووٹنگ میں حصہ لیا۔

بہترین بلاگ کے لئے
ڈفر کو 195 ستارے، ابو شامل کو 178 ستارے اور راشد کامران کو 164 ستارے ملے۔
یوں منظرنامہ ایوارڈز 2009 کے سلسلے کا “بہترین بلاگ” ایوارڈ ڈفر کو جاتا ہے۔۔۔

فعال ترین بلاگ کے لئے
افتخار اجمل کو 165 ستارے، عنیقہ ناز کو 112 ستارے اور میرا پاکستان کو 157 ستارے ملے۔
یوں منظرنامہ ایوارڈز 2009 کے سلسلے کا “فعال ترین بلاگ” ایوارڈ افتخار اجمل کو جاتا ہے۔۔۔

2009 کا بہترین نیا بلاگ کے لئے
خرم بشیر بھٹی کو 125 ستارے، جعفر کو 182 ستارے اور عنیقہ ناز کو 142 ستارے ملے۔
یوں منظرنامہ ایوارڈز 2009 کے سلسلے کا بہترین نیا بلاگ” ایوارڈ جعفر کو جاتا ہے۔۔۔


منظرنامہ ایوارڈز 2009 کے سلسلے کو بہتر طریقے سے انجام دینے کے لئے منظرنامہ ٹیم آپ سب کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتی ہے۔
تمام ایوارڈز حاصل کرنے والوں کو منظرنامہ ٹیم کی طرف سے بہت بہت مبارک ہو۔
ہم یعنی منظرنامہ کی پوری ٹیم امید کرتے ہیں کہ آئندہ بھی منظرنامہ کو آپ سب کا تعاون یونہی حاصل رہے گا اور آپ سب اردو بلاگنگ کی ترقی کے لئے کوشاں رہیں گے۔
شکریہ

44 تبصرے:

  1. سب کچھ بروقت ہو رہا تھا اور مجھے امید تھی کہ نتائج بھی بروقت آئیں گے، سو منظرنامہ توقعات پر پورا اترا اور عین 11 جنوری کو نتائج بھی آ موجود ہوئے۔ منظرنامہ کی ٹیم اس سال منظم انداز میں ایوارڈز کے انعقاد پر خراج تحسین پیش کیے جانے کے لائق ہے۔ سلام منظرنامہ!
    اب نتائج کی طرف آتے ہیں تو میرے لیے یہ افسوسناک رہا کہ راشد کامران جیسے بہترین بلاگ کو مجھ سے کم ووٹ ملے 🙁 جو بہرحال میرے لیے افسوسناک ہے لیکن دیگر نتائج تقریباً متوقع ہی تھے اس لیے میری جانب سے ڈفر، افتخار اجمل اور جعفر صاحبان کو تہہ دل سے مبارکباد ۔۔۔
    ایوارڈز گرافکس کو پسند کرنے کا شکریہ۔ اس کا پورا کریڈٹ برادر خاور بلال کو جاتا ہے۔

  2. تمام ایوارڈ یافتہ حضرات کو بہت بہت مبارک ہو. ایوارڈ ہے بھی بہت خوبصورت اور نفیس سو ابو شامل اور خاور بلال صاحب بھی مبارکباد کے مستحق ہیں. ابنِ سعید صاحب کو تو سلام ہے کہ اُنہوں نے قابلِ ستائش کام پیش کیا.

    باقی تمام نامزد احباب کو بھی ڈھیروں مبارکباد کہ

    ستاروں کا بھروسہ کیا، ستارے پھر ستارے ہیں 🙂

  3. میری طرف سے بھی جناب ڈفر صاحب، جناب بھوپال صاحب اور جناب جعفر صاحب کو بہت مبارک ہو۔ منظر نامہ کی انتظامیہ اور سعود صاحب کا بھی شکریہ ان ایوارڈز کو احسن طریقے سے سر انجام دینے کیلیے۔

  4. تمام ایوارڈ یافتگان کو بہت بہت مبارک ہو۔ خدا کرے زور قلم اور زیادہ ۔ ۔ ۔
    باقی جو لوگ دوسرے تیسرے نمبر آئے انہیں نامزدگی پر مبارک باد اور آیندہ کے لئے نیک تمنائیں۔
    وہ تمام احباب بھی قابل تعریف ہیں جنہوں نے ووٹنگ کو نئے اور سہل انداز میں منعقد کیا۔

  5. 😀 😀 😀 😀 😀 😀
    او کون لوگ او تسی اوئے
    سانوں سچی مُچی جتا دتا :grins: :grins: :grins:
    ہن ویکھو فیر میں تواڈے نال کی کرناں 😀

    آپ سبھوں کا بوت بوت شکریہ جنہوں نے مجھے ستاروں پہ ستارے بخش کر جتوا دیا
    شکر ہے ستاروں کا رنگ سبز نہیں تھا ورنہ 191 بوت زادا گنتی اے
    اور تمام جیتنے والوں کو میری طرف سے بہت بہت مبروک ہو
    سارے مٹھائی کا بندوبست کریں شائد کہ مجھے بھی شرم آ جائے
    لوگو بہت خوبصورت ہیں ان کے ڈیزائنرز کا بھی بہت بہت شکریہ 🙂

  6. ڈفر صاحب، افتحار اجمل صاحب اور جعفر صاحب کو بہت بہت مبارک ہو ، ان کی کارکردگی یقینن متعلقہ شعبوں میں بہترین رہی اسی لیے وہ ایوارڈز کے حق دار ٹھہرے، ووٹنگ کا طریقہ کار بھی اس دفعہ پہلے سے اچھا اور شفاف تھا۔ منظرنامہ ٹیم کو بھی ایوارڈز کا کامیابی سے اجرا کرنے اور اسے نبھانے پر مبارک باد، امید ہے منظرنامہ ٹیم جلد ہی ایک نیا بلاگ ایگریگیٹر تشکیل دے گی، جس پر سبھی اردو بلاگرز بلا امتیاز شامل کیے جائیں گے اور سبھی بلاگرز بشمول نئے اور پرانے اس سے مستفید ہو سکیں گے اور انٹرنیٹ پر اردو پڑھنے والوں کی توجہ حاصل کر پائیں گے۔

  7. ڈفر جعفر اور اجمل صاحب کو مبارک ، باتيں تو يہ تينوں حضرات بڑی کرتے ہيں اب تازہ تازہ مٹھائی پيرس پہنچے تو جانوں اور ہاں جعفر کی غلط فہمی دور کر دوں پيرس خان ميرے ان کا نام نہيں ہے فرانس کے ان کا نام ہے پہچان کے ليے لکھتی ہوں وگرنہ لوگوں کو مرزا اور احسن جيسی مشہور مشہور شخصيات کا گمان ہونے لگتا ہے ميرے پر

  8. محمد وارث :
    منظر نامہ کی انتظامیہ اور سعود صاحب کا بھی شکریہ ان ایوارڈز کو احسن طریقے سے سر انجام دینے کیلیے۔

    آپ کا بھی بہت شکریہ جنہوں نے منظرنامہ کے ساتھ تعاون کیا اور اس سلسلہ میں منظرنامہ کی حوصلہ افزائی کی.

    محمداسد :

    وہ تمام احباب بھی قابل تعریف ہیں جنہوں نے ووٹنگ کو نئے اور سہل انداز میں منعقد کیا۔

    ووٹنگ کے سلسلے میں منظرنامہ کو ابن سعید صاحب کا خاص تعاون رہا اور ووٹنگ اچھے طریقے سے اپنے اختتام کو پہنچی. منظرنامہ ابن سعید صاحب کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا ہے.

    یاسر عمران مرزا :
    ووٹنگ کا طریقہ کار بھی اس دفعہ پہلے سے اچھا اور شفاف تھا۔ منظرنامہ ٹیم کو بھی ایوارڈز کا کامیابی سے اجرا کرنے اور اسے نبھانے پر مبارک باد، امید ہے منظرنامہ ٹیم جلد ہی ایک نیا بلاگ ایگریگیٹر تشکیل دے گی، جس پر سبھی اردو بلاگرز بلا امتیاز شامل کیے جائیں گے اور سبھی بلاگرز بشمول نئے اور پرانے اس سے مستفید ہو سکیں گے اور انٹرنیٹ پر اردو پڑھنے والوں کی توجہ حاصل کر پائیں گے۔

    یہ سب آپ سب قارئین کی بدولت ہی ہوا ہے. ووٹنگ کے نظام کو پسند کرنے کا بہت شکریہ.
    رہی بات بلاگ ایگریگیٹر کی تو اس معاملے پر منظرنامہ ٹیم نے فی الحال کوئی بات چیت نہیں کی لیکن امید ہے منظرنامہ ٹیم جلد ہی اس معاملے کو زیر بحث لائے گی.

    افتخار اجمل بھوپال :
    منظرنامہ کی انتظامیہ مبارک باد کی سب سے زیادہ مستحق ہے اور ان کی دریا دلی بھی قابلِ ستائش ہے کہ اتنے انعامات بانٹتے رہتے ہیں ۔ مجھے جتانے کیلئے کوئی رِگِنگ تو نہیں کی

    افتخار اجمل بھوپال صاحب منظرنامہ کو مبارکباد پیش کرنے پر آپ کا بہت شکریہ.

    ابوشامل :
    سب کچھ بروقت ہو رہا تھا اور مجھے امید تھی کہ نتائج بھی بروقت آئیں گے، سو منظرنامہ توقعات پر پورا اترا اور عین 11 جنوری کو نتائج بھی آ موجود ہوئے۔ منظرنامہ کی ٹیم اس سال منظم انداز میں ایوارڈز کے انعقاد پر خراج تحسین پیش کیے جانے کے لائق ہے۔ سلام منظرنامہ!

    والسلام ابو شامل صاحب
    سب کچھ وقت پر اور منظم انداز میں ہونے میں آپ سب دوستوں کا ہی تعاون شامل ہے. جنہوں نے اپنی ذاتی مصروفیات سے منظرنامہ کے لئے وقت نکالا. منظرنامہ جی ایم ٹی کے مطابق 11جنوری کے آغاز پر ہی نتائج پیش کرنا چاہتا تھا لیکن چند تکنیکی وجوہات کی بنا پر تھوڑی دیر ہوئی. خیر 11جنوری کا کہا تھا تو 11جنوری کو ہی نتائج کا اعلان کر دیا.

    میرا پاکستان :
    منظرنامہ کا شکریہ جس نے اتنی محنت اور لگن سے یہ منزل سر کی.

    آپ کا بھی بہت بہت شکریہ

  9. میری تو جی قسمت ہی ہمیشہ سے خراب ہے۔۔۔
    آج تک جس کی حمایت کی ۔۔۔ وہ کبھی نہیں جیتا ۔۔۔ اب دیکھئے میں نے جسے جسے ووٹ دیا تھا وہ سب جیت نہ سکے۔۔۔
    اوپر سے آپ سب مجھے مبارکیں دے دے کر میرے زخموں پر نمک چھڑک رہے ہیں۔۔۔ 🙁
    یہ تو ہوگیا ذرا منورنجن۔۔۔ اب ذرا کچھ سنجیدہ۔۔
    تمام دوستوں کا بہت شکریہ۔۔۔ جنہوں نے مجھے ووٹ دئیے ان سے اظہار ہمدردی۔۔ کیونکہ میں نے تو خود اپنے آپ کو ووٹ نہیں دیا۔۔۔ ہیں جی۔۔۔ :grins:
    ڈفر، افتخار اجمل بھوپال صاحب کو میری طرف سے مبارکباد
    منظر نامہ کی انتظامیہ، ماوراء، عمار ابن ضیاء، ایم بلال اور ابن سعید کو اتنا اچھا ایونٹ منعقد کرنے پر بہت شاباش۔۔۔

  10. ویسے بہت زیادہ افسوس ہوا آپ سب کو ایوارڈ ملنے پر
    سب سے زیادہ افسوس تو جعفر بھائی پر ہوا یار جعفر بھائی بہت افسوس ہوا آپ کو ایوارڈ ملا ہے میں آپ کے افسوس میں برابر کا شریک ہوں اس کے بعد افتخار اجمل صاحب کے لیے بھی افسوس کا اظہار کرتا ہوں افتخار صاحب بہت افسوس ہوا چلیں پرشان نا ہوں اگلی بار کسی اور کو مل جائے گا
    اور خرم بھائی آپ کو ایوارڈ ملنے پر بھی بہت افسوس ہوا بس جناب جو اللہ کی مرضی انسان کیا کرسکتا ہے اب صبر ہی کیا جا سکتا ہے
    اللہ تعالیٰ آپ صحبان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔

    یہ باتیں میں اس وقت کروں گا جب آپ کی طرف سے کوئی مٹھائی وغیرہ نا آئی تو 😛 جلدی سے مجھے مٹھائی کھلا دیں ورنہ میں اس سے بھی زیادہ افسوس کروں گا 😀

    منظر نامہ کا اور خاص طور پر سعود بھائی کا بہت شکریہ جنوں نے بہت محنت اور خلوص سے اس کا م کو سرانجام دیا اللہ تعالیٰ آپ کو اسی طرح کامیابیاں عطا فرماتا رہے آمیں

    ویسے مجھے خرم بھائی کی خوشی زیادہ ہوئی اسماء آپی کی دھمکی کے باوجود خرم بھائی کا پہلا انعام ملا 😀 😛 😛

    اب اسماء آپی کے جواب سے خرم بھائی آپ نے ہی جان چھوڑانی ہے میری

  11. بہت بہت مبارکباد. ڈفر، جعفر اور افتخار اجمل صاحب آپ کو بہت بہت بہت مبارک ہو. بلاشبہ محنت رنگ لے آئی ہے آپ صاحبان کی :wel:
    خوشی اس بات کی ہے کہ تمام کام خوش اسلوبی سے ہو گیا، انتظامیہ اور تمام ووٹران کو بھی مبارکباد 🙂

  12. خرم شہزاد خرم :ویسے بہت زیادہ افسوس ہوا آپ سب کو ایوارڈ ملنے پرسب سے زیادہ افسوس تو جعفر بھائی پر ہوا یار جعفر بھائی بہت افسوس ہوا آپ کو ایوارڈ ملا ہے میں آپ کے افسوس میں برابر کا شریک ہوں اس کے بعد افتخار اجمل صاحب کے لیے بھی افسوس کا اظہار کرتا ہوں افتخار صاحب بہت افسوس ہوا چلیں پرشان نا ہوں اگلی بار کسی اور کو مل جائے گااور خرم بھائی آپ کو ایوارڈ ملنے پر بھی بہت افسوس ہوا بس جناب جو اللہ کی مرضی انسان کیا کرسکتا ہے اب صبر ہی کیا جا سکتا ہےاللہ تعالیٰ آپ صحبان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔
    یہ باتیں میں اس وقت کروں گا جب آپ کی طرف سے کوئی مٹھائی وغیرہ نا آئی تو جلدی سے مجھے مٹھائی کھلا دیں ورنہ میں اس سے بھی زیادہ افسوس کروں گا
    منظر نامہ کا اور خاص طور پر سعود بھائی کا بہت شکریہ جنوں نے بہت محنت اور خلوص سے اس کا م کو سرانجام دیا اللہ تعالیٰ آپ کو اسی طرح کامیابیاں عطا فرماتا رہے آمیں
    ویسے مجھے خرم بھائی کی خوشی زیادہ ہوئی اسماء آپی کی دھمکی کے باوجود خرم بھائی کا پہلا انعام ملا
    اب اسماء آپی کے جواب سے خرم بھائی آپ نے ہی جان چھوڑانی ہے میری

    😛 ترتیب سے نام لکھے ہوئے تھے اس لیے جعفر بھائی کے نام کی جگہ خرم بھائی کا نام لکھ دیا اب اسماء آپی سے اور خرم بھائی دونوں سے کون بچائے گا 🙂

  13. میری طرف سے بھی جناب ڈفر صاحب :no: ، جناب بھوپال صاحب :no: اور جناب جعفر صاحب :no: کو بہت مبارک ہو۔ ساتھ ہی ساتھ اردو کے لیے محنت کرنے او اور کرنی والیوں کو بھی مبارک ہو جن کی وجہ سے ان کو ایوارڈ ملے ۔
    شاباش منظر نامہ :wel:
    شگفتہ
    ماروا
    ابو شامل
    خاور بلال
    ابن سید
    باقی سب 😀
    اور میرا جس نے ووٹ ڈالے۔ :ops: :ops:

  14. پہلے تو سبکو مبارکباد. خدا آپکو ایسی خوشیاں مزید دکھائے. منظر نامہ والوں کا کیا ادا کروں. حالانکہ میں نے تو اپنے آپکو نامزدگی سے لیکر ووٹنگ تک کسی بھی مرحلے کے لائق نہیں سمجھا. لیکن انہوں نے لگتا ہے میرا نام دیگر افراد کو متحرک کرنے کے لئیے ڈالدیا.
    اب دیکھ لیں جعفر، آپکی تحاریر میں کتنی غلط بیانیاں بلکہ شعلہ بیانیاں ہوتی ہیں. کسی کارکن نے میری طرف آنکھ اٹھا کر نہ دیکھا. اور سب ایک بیس میل فی گھنٹہ کی رفتار سے آنیوالی میلز آپکے چاہنے والوں نے روک لیں. لیکن اب میں سمجھی کہ یہ سب آپ نے اپنے ووٹرز کو جگانے کے لئے کیا تھا. ہوں، کامیاب اسٹریٹجی. :roll:

  15. ڈفر یار……….انکل اجمل اور جعفر بھائی………..آپ لوگوں کو ایوارڈ جیتنے کی بہت بہت مبارک ہو :no: :no: :no: ……….اور ہاں…….منظرنامہ ایوارڈ 2009کے اجراء پر منتظمین بھی لائق ستائش ہیں……….. 🙂 🙂 🙂

  16. بہت عمدہ جی بہت عمدہ۔

    بلاگران کی محفل لگی ہے اور انعام و اکرام کی بارش ہو رہی ہے۔ میری طرف سے بھی جعفر ، ڈفر اور افتخار صاحب کو مبارکباد کہ واقعی ان کے بلاگ اس وقت اردو کے نمائندہ مقبول ترین اور فعال ترین بلاگ ہیں۔
    جس گھوڑے پر میں نے پیسے لگائے تھے وہ تو ہار گیا (ابو شامل ) مگر مجھے خوشی ہے کہ دوسرے نمبر پر رہا اور تیسرے شاہ سوار (راشد کامران) کے ساتھ مل کر ایک نیا اردو بلاگنگ فورم زیر تکمیل ہے اور انشاءللہ جلد ہی آپ لوگوں کو اردو ٹیک کے بعد ایک اور اردو بلاگنگ کا فورم مل جائے گا۔ کوشش ہو گی کہ ایک عدد بلاگ مجموعہ بھی شروع کر دوں مگر پہلی ترجیح اردو بلاگنگ سروس اور فورم ہے۔

    اگلےسال کے ایوارڈ کے لیے میں نے تیاری شروع کر دی ہے جس کا ثبوت میرے بلاگ پر دھڑا دھڑ تحاریر ہیں بغیر تبصروں کے 🙂 سال کے آخر میں خود ہی اپنے بلاگ کا ماہرانہ اور محبانہ جائزہ بھی لینا شروع کر دوں گا تاکہ نئے پڑھنے والوں پر رقت طاری ہو سکے اور وہ جوش جذبات میں میرے ہی بلاگ کو ووٹ دیں۔
    نوٹ: یہ صرف ایک تکنیک ہے دیگر مجرب نسخے صیغہ راز میں رہیں گے ایوارڈ حاصل ہونے تک chxmx

  17. ساروں کی مبارکوں کی خیر مبارکیں جی
    میں نے تو ایوارڈ کا لنک کاپی کرنے کے لئے چکر لگایا تھا لیکن یہاں تو مبارکوں کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں
    اک واری فیر بوت بوت شکریہ جی :k:

  18. میرے خیال میں ڈفر کو بہترین انعام ملنا نہ صرف ہمارے اجتماعی بونگے پن کی دلیل ہے بلکہ اس سے یہ بھی ثابت ہوتا ہے کہ ہم بحیثیت قوم لایعنی کاموں میں مشغول ہیں جسے پنجابی زبان میں ایک چھڈو قوم کہا جانا مناسب ہے۔ طنزو مزاح اور خود ستائیش میں لپٹی ہوئی آزاد فکری کے نام پر جس طرح ہماری روحیں فضولیات میں گھسٹتی جارہی ہیں یہ ایک لمحہ فکریہ ہے۔
    میری ان معروضات کا مقصد کسی کی دل یا حوصلہ شکنی نہیں بلکہ اپنے آپ کو کارآمد ثابت کرنے کی کوششوں کی طرف توجہ دلانا ہے۔ ہمارے اتنے بلاگر بھائی یا بہنیں ہیں ، میں نے کسی بلاگ کو بھی باقاعدہ اپنی کمیونٹی کے لئے مئوثر کوشش کرتے نہیں دیکھا۔ ایک بلاگر نے کوئی فلسفہ جھاڑا اور دوسرے اسے نوازنے یا رگیدنے پر ایسے تل گئے جیسے مردار پر گدھ پل پڑتے ہیں۔ خدارا اپنی کوششوں کو قابل فائدہ بنائیے۔ کیوں نہ ہم سب مل کر اپنے مذہب و ملت کی ترقی کے لئے مختلف ٹاسک اپنا لیں اور کام میں جت جائِیں۔ انشاء اللہ ہماری محنتیں رنگ لائینگی اور ہم اردو اور اردو والوں کو حقیقی ترقی سے ہم کنار کر پائیں گے،۔

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر