آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > اردو بلاگنگ ایوارڈز > منظرنامہ ایوارڈز 2013: نامزدگیاں مکمل

منظرنامہ ایوارڈز 2013: نامزدگیاں مکمل

منظرنامہ ایوارڈز 2013 کے لیئے نامزدگیاں مکمل ہوگئی ہیں۔ جیسا کہ پچھلی تحریر میں آپ کو اپنے پسندیدہ بلاگ کو نامزد کرنے کا کہا گیا تھا اس سلسلے میں ہمیں جو نامزدگیاں آپ کی جانب سے موصول ہوئیں ان کی ترتیب یہ ہے۔

سال 2013 کا بہترین بلاگ

نمبر بلاگ مصنف موصول نامزدگیاں
1 اس طرف سے علی حسان 5
2 جریدہ ریاض شاہد 3
3 صلۂ عمر عمر بنگش 3
4 آدھا جھوٹ دوہرا حے 2
5 نون و القلم نعیم خان 2
6 خاور کھوکھر خاور کھوکھر 2
7 حال دل جعفر حسین 2
8 گھریلو باغبانی مصطفیٰ ملک 2
9 کائناتِ تخیل نورین تبسم 1
10 ہم اور ہماری دنیا راجہ افتخار 1
11 عام بندے کا حال دل یاسر جاپانی 1
12 آئی ٹی نامہ محمد زھیر چوھان 1
13 جوانی پِٹّے کا بلاگ کاشف علی 1
14 ماہانہ کمپیوٹنگ میگزین بلاگ 1
15 پاک گلیکسی فخر نوید 1
16 آوازِ دوست شاکر عزیز 1
17 ڈفرستان ڈفر 1

سال 2013 کا فعال ترین بلاگ

نمبر بلاگ مصنف موصول نامزدگیاں
1 محمد سلیم کا بلاگ محمد سلیم 4
2 کرک نامہ فہد کیہر 3
3 بنیاد پرست بنیاد پرست 3
4 اس طرف سے علی حسان 4
5 وجدان عالم وجدان عالم 2
6 نون و القلم نعیم خان 2
7 حال دل جعفر حسین 2
8 ارتقاءِ حيات تحریم طارق 2
9 شمال مشرق سے وحید سلطان 1
10 بازیچہ اطفال کاشف نصیر 1
11 کائناتِ تخیل نورین تبسم 1
12 میراپاکستان میراپاکستان 1
13 گھریلو باغبانی مصطفیٰ ملک 1
14 شیخو بلاگ نجیب عالم 1
15 گستاخیاں سکندر حیات 1
16 نوک قلم اسریٰ غوری 1

سال 2013 کا بہترین نیا بلاگ

نمبر بلاگ مصنف موصول نامزدگیاں
1 گھریلو باغبانی مصطفیٰ ملک 6
2 گستاخیاں سکندر حیات 2
3 طِب گردیاں عدیل 2
4 ساجد نامہ ساجد شیخ 1
5 بابا جی کی بوٹی فیصل کریم 1
6 آدھا جھوٹ دوہرا حے 1
7 جوانی پِٹّے کا بلاگ کاشف علی 1
8 کائناتِ تخیل نورین تبسم 1
9 اس طرف سے علی حسان 1
10 لوگ کہانی – عام لوگ، خاص کہانیاں مبشراکرم 1
11 نون و القلم نعیم خان 1
12 ارتقاءِ حيات تحریم طارق 1
13 عامریت عامر منیر 1
14 انتر منتر عمار ابن ضیاء 1
15 خاور ہاشمی خاور نعیم ہاشمی 1
16 آوارہ گرد کی ڈائری ابرار قریشی 1
17 پِھر پُھر عمران اسلم 1

اس طرح ہر زمرہ میں پہلے تین بلاگز کو فائنل ووٹنگ کے لیئے شامل کیاجائے گا۔ اور ہر ایوارڈ کے لیئے ووٹنگ کے ذریعے ایک بلاگ کو منتخب کیا جائے گا۔ فائنل ووٹنگ کا آغاز دو دن بعد کردیا جائے گا۔ ووٹ کرنے کے لیئے رجسٹر ہونا ضروری شرط ہے اس لیئے ان دو دن میں منظرنامہ پر رجسٹر ہوجائیں تاکہ ووٹ کرتے وقت کوئی مشکل پیش نہ آئے۔ رجسٹر ہونے کے لیئے یہاں کلک کریں۔

نوٹ:-

فعال ترین بلاگ کے لیئے علی حسان کو چار بار نامزد کیا گیا ہے لیکن بہترین بلاگ میں 5 بار اس طرح انہیں سال 2013 کے بہترین بلاگ کی ووٹنگ کے لیئے شامل کیا گیا ہے جبکہ سال 2013 کے فعال بلاگ کی ووٹنگ میں نہیں۔

اپڈیٹ:-

ووٹ کے لیئے ستاروں کا نظام منتخب کیا گیا ہے اور رجسٹر ہونے کی شرط ختم کردی گئی ہے۔

محمد بلال خان
محمد بلال خان کمپیوٹر سائنس کے طالب علم ہیں۔پیشے کے لحاظ سے ویب ڈویلپر ہیں۔ عام موضوعات کے علاوہ ٹیکنالوجی اور انٹرنیٹ سے متعلق سافٹ ویئر کے بارے میں بلاگ نامہ کے عنوان سے اردو بلاگ لکھتے ہیں۔ منظرنامہ انتظامیہ کا حصہ ہیں۔
http://www.mbilalkhan.pk/blog

19 تبصرے:

  1. ایک نہایت عمدہ سلسلہ ہے اور منظر نامہ ٹیم خاص طور پر محمد بلال خان صاحب کی کاوشیں قابل تحسین ہیں۔
    بہتر ہوتا کہ ووٹنگ سسٹم اور پوسٹس کی تعداد کی بجائے بلاگ کو میرٹس پر جانچا جائے اور سال بھر کی کارکردگی پر ایوارڈ دہندہ از خود نامزد کریں۔
    یہ دیکھ کر حیرت ہوئی کہ اتنے سارے بلاگس کی موجودگی میں صرف چند ہی بلاگس نامزد ہوئے ہیں۔

  2. ہم نے تو پہلے ہی موجودہ ایوارڈز کے طریقہ کار پر شک کا اظہار کیا تھا۔ ہم جواد صاحب کی تجویز سے متفق ہیں۔ موجودہ طریقہ کار میں دوستیاں ہی کام آئیں گی۔ بہرحال پھر بھی چلیں ایوارڈز کا آغاز تو ہوا۔ امید ہے آئندہ احباب کی تجاویز کو سامنے رکھتے ہوئے اگلے ایوارڈز کے طریقہ کار میں کچھ تبدیلیاں کی جائیں گی۔
    تمام نامزدگان کو مبارکباد۔

  3. مجھے ایک واقعہ یاد آیا ۔ دو دہائیاں قبل ایک محفل سجا کر مجھے کچھ انعام پیش کیا گیا ۔ میں اپنے آپ کو کسی طرح اُس کا حقدار نہیں سمجھتا تھا ۔ حقدار جس ادارے میں کام کرتا تھا میں اُس کا سربراہ تھا اور بلاشبہ میں نے ہی اُس شضص کو اس کام پر معمور کیا تھا ۔ جب مجھے کچھ بولنے کا کہا گیا تو میں نے سب کا بہت شکریہ ادا کرنے کے بعد کہا ”اس انعام کا حقدار وہ ہے یہ اُسے دے دیتے تو بہت اچھا ہوتا ۔ میں نے تو کچھ بھی نہیں کیا“۔ کچھ دن بعد انعام دینے والے صاحب میرے پاس آئے اور رنج کا اظہار کیا

  4. تمام نامزدگان کو مبارک باد۔ اور جو نامزد نہ ہوسکے ان سے گذارش ہے کہ کھلے دل کا مظاہرہ کریں۔ اور ان وجوہات کی تجزیہ کریں کہ کیوں آپ کا بلاگ نامزد نہ ہوسکا۔

  5. جناب منصور مکرم صاحب آپکےمضمون “ایدھی اور جہالت”نےآنکھیں کھول دی ھیں *آسماں بدلتا ہےرنگ کیسے کیسے*برطانیە کےمسلمان دل کھول کر اسکی چیرٹی کو عطیات دیا کرتے ەیں اب شاید سوچ سمجھ کر دیں گے
    مجہےتین یاچارماە سےاردو بلاگزپڑھنےکااتفاق ہورہا ہےاس میں فعال لکھنےوالوں میں محمداظھارالحق *سیدآصف جلال*سیماآفتاب*افتخاراجمل بھوپال*جویریہ سعید*افشاں نوید*ارتقاٴحیات*بنیادپرست*فکرپاکستان*محمدسلیم*ساجد*نعیم اللە خان*مصطفےملک*مسعود ظفرعلاالدین* جوانی پٹا*میراپاکستان*ابوشامل*محمدریاض شاہد*mdnoor*محمدزھیرچوھان*عملدار حسین*شعیب جٹ*خاور کھوکھر*پروفیسرمحمدعقیل*شعیب سعیدشوبی*نورین تبسم*اور بہت سےلکھاری جن کےنام یادنیں آ رہےیہ سب لکھاری بہترین اور فعال ھیں ان کویکسرفراموش کردیاگیا ہےیہ ایوارڈ میرٹ پردہےجانے چاہے تھے

  6. ہر کیٹیگری میں کل نامزدگیوں کی تعداد:
    پہلی – 30
    دوسری – 30
    تیسری – 24

    اور ہر گیٹیگری میں ایک شخص زیادہ سے زیادہ تین نامزدگیاں کر سکتا تھا۔

    یعنی کہ صرف دس لوگوں نے نامزدگیوں میں حصہ لیا ہے۔ ؟؟؟

    یعنی کہ کئی ایسے بلاگر جو نامزد ہیں، انہوں نے خود اس نامزدگی ٹاسک میں حصہ نہیں لیا؟

    یعنی کہ یہی دس لوگ فائنل ووٹنگ میں حصہ لیں گے۔؟

    ایک تجویز ہے۔
    جلدی نہ کریں۔ عمل کو شفاف بنائیں۔
    ووٹر لسٹیں مرتب کریں۔ تاکہ آئیڈیا ہو کہ کتنے لوگ بلاگ لکھ رہے ہیں۔ اور ان میں سے کن کن کو نامزد کرنا ہے۔

    اگر آپ کے خیال میں دیر ہو گئی ہے، تو پھر اکیڈمی آف اردو بلاگرز کے اُن دس بڑوں کے نام ظاہر کریں جن کے کی بورڈ سے یہ تمام نامزدگیاں ہوئی ہیں اور جو ووٹ کریں گے۔

    کیا خیال ہے۔؟

    1. نامزدگیاں 10 لوگوں نے نہیں کیں۔ کسی نے ایک کسی نے دو اور کم تعداد نے پوری تین تین کی ہیں۔ نامزدگیاں سب کرسکتے تھے اور اب ووٹنگ بھی سب کرسکتے ہیں۔ یہ بتایا جاچکا ہے۔ دوسرا یہ فی زمرہ 30،30 کس حساب سے گن لیئے آپ نے 🙂

  7. جلدی سے ووٹنگ شروع کی جائے۔۔۔۔ تا کہ بندہ اپنے عالمگیر سطح پر موجود دوستوں کی مدد سے ووٹ حاصل کر سکے۔۔۔۔پہلے ہی کسی نے اس اندھے کنویں میں میرے بلاگ کا دھکا دے دیا ہے تو اب باہر نکلنا ہے عزت کے ساتھ

  8. میرے خیال میں محمد بلال صاحب اور وجدان عام صاحب نے جو کاؤش کی ہے،اسکی داد دیتا ہوں۔

    جو احباب کہتے ہیں کہ ووٹنگ کا طریقہ منصفانہ نہیں ،تو جناب سلسلے کو چلنے دینا چاہئے ،بعد میں وقتا فوقتا اصلاح ہوتی رہے گی۔

    مجھے کافی مسرت ہوئی کہ عرصہ بعد یہ سلسلہ دوبارہ شروع کیا گیا ہے۔

    میرے خیال میں آخر میں منظر نامہ والوں کیلئے بھی کوئی ایوارڈ وغیرہ ہونا چاہئے،تاکہ انکی بھی دلجوئی ہوسکے۔

  9. بلال بھائی یقیناََ داد و تحسین کے مستحق ہیں، اُن کے ساتھ بہتیرے لوگوں نے بحث نما بات چیت کی ہے ایوارڈ دینے کے لائحہ عمل کے سلسلے میں، اور بہت ساری تجاویز زیرِ بحث آئیں تھیں، اور یقیناََ وہ سب کی سب بلال بھائی اور منظر نامہ کی ٹیم کے ذہن میں موجود ہیں، یہ چونکہ پہلی بار ہے (کافی عرصہ کے بعد یہ سلسہ دوبارہ شروع ہوا ہے ناں)، تو ہم لوگوں کو پریشان نہیں ہونا چاہیے، جُوں جُوں وقت گذرے گا نظام میں بہتری آئے گی، انشاءاللہ!

    ان تمام احباب کو مبارکباد جن کے بلاگز نامزد کیے گئے!

    ایک بات جو میں نے شدت سے محسوس کی، وہ یہ کہ ہم (ریڈرز) نے نامزدگی میں جوش و خروش سے حصہ نہیں لیا!

    جواد صاحب کی حیرت بجا ہے مگر میرے خیال کے مطابق ہمارے بلاگز کے ریڈرز نے یا تو کھُل کر اس سلسلے میں حصہ نہیں لیا،

    یا پھر ریڈرز کو بلاگز پسند نہیں آ رہے،

    اب بلاگرز حضرات (جو اِس ایوارڈ میں دلچسپی رکھتے ہیں) کو چاہیے کہ اپنے ریڈرز سے روابط قائم کریں، اور اگلے ایوارڈ کے لیے تیاری کریں۔

    ریڈرز حضرات سے گذارش ہے کہ سوچ سمجھ کر نامزدگیاں کریں، (کاشف نصیر صاحب کے بیان کو مدِنظر رکھئے!)

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر