آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > شناسائی > مصطفیٰ ملک سے شناسائی

مصطفیٰ ملک سے شناسائی

منظرنامہ کے سلسلہ شناسائی کے آج کے مہمان ہیں اردو بلاگر جناب ” مصطفیٰ ملک “ صاحب۔ آپ اپنا ذاتی بلاگ لکھنے کے ساتھ ساتھ گھریلو باغبانی کے موضوع پر بھی بلاگ لکھتے ہیں۔

خوش آمدید!

کیسے مزاج ہیں ؟

@الحمد اللہ

اپنے بارے میں کچھ بتائیں ؟

@میرا پورا نام ملک غلام مصطفیٰ ہے اور مصطفیٰ ملک کے نام سے لکھتا ہوں،تین بھائیوں میں سب سے چھوٹا ہوں ،والدین حیات نہیں ہیں۔

آپ کی جائے پیدائش کہاں ہے ؟ اور موجودہ رہائش کہاں ہے ؟

@فیصل آباد ہی میں پیدا ہوئے اور ابھی تک یہیں رہائش پذیر ہیں

اپنی تعلیم، پیشہ اور خاندانی پس منظر کے بارے میں کچھ بتائیں ؟

@بس واجبی سے تعلیم ہے جسے عرف عام میں گریجوایشن کہتے ہیں،والدین1947ء اپنا سب کچھ لٹا کرلدھیانہ انڈیا سے ہجرت کر کے آئے اور یہاں فیصل آباد آ کر آباد ہوئے،محنت مزدوری کر کے اوررزق حلال کما کر ہمیں تعلیم دلوائی،کاروبار اور گھربار بنا کے دیئے، ہم اس نسل سے تعلق رکھتے ہیں جنہوں نے اس ماحول میں آنکھ کھولی جب ابھی ہجرت کرکے آنے والوں کو اپنے دکھ نہیں بھولے تھے ، میری ماں وہ دکھ سناتے ہوئے رو پڑتی تھی،

ا س لئے اس پاک دھرتی سےمحبت گٹھی میں ملی ہے۔

اردو بلاگنگ کی طرف کب اور کیسے آنا ہوا ؟ آغاز کب کیا ؟

@ 2000ء کے آغاز میں جب انٹرنیٹ ذرا عام ہوا تو ایک اخبار کے سنڈے میگرین میں بلاگنگ پر ایک آرٹیکل نظر سے گزرا تھا ،تب اردو لکھنا (کم از کم میرے لئے) اتنا آسان نہ تھا، کوشش کی مگر کوئی سرا ہاتھ نہ آ سکا کہ بلاگ لکھ سکوں۔لکھنے کا شوق تو تھا اور اخبارات میں کچھ نہ کچھ چھپ بھی جاتا تھا۔ ایک دن سرچ کرتے ایم بلال ایم تک جاپہنچے ، اس کے بلاگ پر ورڈ پریس میں بلاگ بنانے کا آسان طریقہ اپناتے ہوئے پہلا باقاعدہ بلاگ بنایا،لاہور میں ہونے والی بلاگرز کانفرنس میں بلاگراحباب سے ملاقاتیں ہوئیں تو دوستوں نے اسے بلاگ سپاٹ پر منتقل کرنے کا مشورہ دیا جس کے لئے شاکر عزیز اور ایم بلال ایم اور ڈاکٹر ساجدنے مدد کی اور الحمد اللہ تب سے باقاعدگی سے بلاگنگ جاری ہے۔

کیا مراحل طے کیے آغاز میں اور کس قسم کی مشکلات پیش آتی تھیں ؟

@جی میں نے پہلے بتایا ناں کہ شوق ہونے کے باوجود بلاگ نہ بن سکا کیونکہ کوئی راہنمائی نہیں کررہا تھا اور میں کمپیوٹر میں بالکل کورا تھا ، بہت سے مقامی احباب سے بھی مدد حاصل کرنے کی کوشش کی مگر کچھ نہ بن سکا،بالآخر بلاگر احباب ہی کام آئے۔میں سمجھتا ہوں کہ اگر بہت پہلے پلیٹ فارم حاصل ہوجاتا تو بہت پہلے یہ سلسلہ جاری ہوسکتا تھا،ا الحمد اللہ اب میں نے اپنا دوسرا باغبانی بلاگ تقریباً از خود ہی تیار کیا ہے ،محترم نجیب عالم سے کچھ راہنمائی حاصل کی ہے۔

بلاگنگ شروع کرتے ہوئے کیا سوچا تھا؟ صرف بلاگ لکھنا ہے یا اردو بلاگنگ کو فروغ دینے کا مقصد پیش نظر تھا ؟

@نہیں جی ،پہلے تو صرف بلاگ لکھنے کا ہی سوچاتھا مگر اردو بلاگر کانفرنس کے بعد اب خواہش ہے کہ زیادہ سے زیادہ افراد کو اردو بلاگنگ کی طرف راغب کیا جائے اور اس کے لئے عملی کوشش بھی کررہا ہوں،دو تین افراد کو باقاعدہ اردوبلاگنگ شروع بھی کروائی ہے

کن بلاگرز سے متاثر ہیں اور کون سے بلاگز زیادہ دلچسپی سے پڑھتے ہیں ؟

@ایم بلال ایم نے پاک اردو انسٹالر بنا کر اردو بلاگنگ کو آسان بنایا،میں اس کا احسان مند ہوں ۔جعفر ، ڈفر، محمد سلیم،راجہ صاحب اٹلی والے،یاسر جاپانی،مصطفیٰ خاور،کاشف نصیر،خرم ابن شبیر،علی حسان، شعیب صفدر ،ریاض شاہد، بزرگوارم افتخار اجمل، نعیم سوات ،بہت سے نام ہیں۔ سبھی اپنے ہیں اور بہت اچھا لکھتے ہیں لیکن ڈفر کے بارے میں میری رائے ہے کہ اگر تھوڑا سا سیریس ہوکر لکھیں تو اردو کو ایک بڑا مزاح نگار مل سکتا ہے۔

لفظ “ بلاگ ” سے کب شناسائی حاصل ہوئی ؟

@میں نے بتایا ہے کہ بہت پہلے بلاگ پر ایک آرٹیکل پڑھا تھا مگر کمپیوٹر کے بارے میں مناسب معلومات نہ ہونے کے سبب بلاگ نہ لکھ سکا

آپ باغبانی کے موضوع پر بھی بلاگ لکھتے ہیں اس بارے میں کچھ بتائیں کہ باغبانی پر بلاگ لکھنے کا خیال کیسے آیا ؟

@مجھے پچپن سے باغبانی کا شوق ہے اور وقت کی کمی ،محدود وسائل اور کم جگہ کے باوجود اسے کسی نہ کسی طرح جاری رکھا ہوا ہے، میں اس کی معلومات کے لئےہمیشہ کسی نہ کسی معلوماتی کتاب یا لٹریچر کی تلاش میں رہا مگر اردو میں گھریلو باغبانی پر نہ ہونے کے برابر لکھا گیا ہے،یونی کوڈ میسر آنے کے بعد گوگل پر بےانتہا سرچ کرنے پر بھی خاطر خواہ نتیجہ برآمد نہیں ہوا، میں نے اپنے بلاگ”مصطفےٰ ملک کا بلاگ” پر اپنے ایک گھر میں موجود ایک پودے کے بارے میں ایک تحریر لکھی تھی ،جسے دوستوں نے بہت سراہا اور اس سلسلہ کو جاری رکھنے کو کہا تو میں نے سوچا کہ چلیں مجھے تو اردو میں معلومات نہیں مل سکی ،آنے والوں کے لئے تو کچھ نہ کچھ کر جائیں تو ستمبر 2013 میں اس بلاگ پر پہلی تحریر لکھی اور الحمد اللہ اسے میری توقع سے زیادہ پزیرائی حاصل ہوئی اور صرف چار ماہ میں نو ہزار وزیٹرز اور پھرمنظر نامہ ایوارڈ سے بہت حوصلہ افزائی ہوئی ہے،اب انشا ء اللہ یہ سلسلہ جاری رکھوں گا۔

کیا آپ سمجھتے ہیں کہ سوشل میڈیا کے ذریعے لوگوں کو باغبانی کی جانب راغب کیا جاسکتا ہے ؟

@جی،صرف چار ماہ میں اس بلاگ اور اس کے فیس بک پیج کو احباب نے جتنا پسند کیا ہے اور مجھے فالو اپ دیا ہے بلکہ احباب نے اسے صدقہ جاریہ قرار دیا ہے۔اس سے اندازہ ہوتا ہے لوگ اس کی طرف راغب ہورہے ہیں۔ اسی بلاگ سے متاثر ہوکر چند احباب نےباقاعدہ اسی موضوع پر لکھنا بھی شروع کیا ہے اور کچن گارڈننگ پر تربیتی ورکشاپس کا بھی آغاز ہے ۔دنیا بھر میں پھیلے ہوئے اردو دان طبقہ نے اسے بارش کا پہلا قطرہ قرار دیا ہے اور مجھے بتایا ہے کہ اس بلاگ سے متاثر ہو کر انہوں نے دوبارہ باغبانی شروع کر دی ہے۔

اپنے بلاگ پر کوئی تحریر لکھنی ہو تو کسی خاص مرحلے سے گزارتے ہیں یا لکھنے بیٹھتے ہیں اور لکھتے چلے جاتے ہیں ؟

@جی اس وقت مجھے تو لگتا ہوتا ہے کہ تحریر میرے اوپر حاوی ہوری ہے، اگر اس کو نہ لکھا تو مجھ سے ناراض ہو جائے گی،سو تحریر مکمل کر کے ہی اٹھتا ہوں۔

کیا آپ سمجھتے ہیں کہ بلاگنگ سے آپ کو کوئی فائدہ ہوا ہے؟ یا کیا فائدہ ہوسکتا ہے؟

@جی ،میں تو سمجھتا ہوں مجھے نئی زندگی مل گئی ہے،اللہ پاک نے کتنے محبت والے بلاگرز احباب دیئے ہیں ،چاہنے والے،پڑھنے والے قاری عنائت کردیئے ہیں ،جو تحریر پڑھ کے حوصلہ افزائی بھی کرتے ہیں ،دعائیں بھی دیتے ہیں،اس سے بڑا اور فائدہ کیا ہو سکتا ہے۔

آپ کی نظر میں معیاری بلاگ کیسا ہوتا ہے ؟

@پہلی بات ہے کہ آپ کابلاگ تھیم جاذب نظر ہونا چاہیئے ، جو پہلی نظر میں دیکھنے والے کو اپنی طرف متوجہ کر لے ، پھر میعاری تحریر اور میعاری تحریر کا فیصلہ ہم نے نہیں قاری نے کرنا ہوتا ہے، اپنے قاری کے مزاج کو ذہن میں رکھتے ہوئے تعصبات سے ہٹ کر لکھیں تو تحریر میعاری ہوگی انشاء اللہ۔

آپ کے خیال میں کیا اردو کو وہ مقام ملا ہے، جس کی وہ مستحق تھی ؟

@جی نہیں ،لیکن پھر بھی بہت کام ہورہا ہے ،ایم بلال ایم اورآپ جیسے نوجوان اور بلاگر احباب اس محاذ پر ڈٹے ہوئے ہیں۔

اردو کے ساتھ اپنا تعلق بیان کرنے کو کہا جائے تو کیسے کریں گے ؟

@”اب” اردو میرا عشق ہے

آپ کے خیال میں جو اردو کے لیے کام ہو رہا ہے کیا وہ اطمینان بخش ہے ؟

@الحمد اللہ ، بہت کام ہورہا ہے اور تا قیامت ہوتا رہے گا اور اب تو ماشاء اللہ اردو بلاگر بھی شامل ہو گئے ہیں اس کی ترقی کے لئے۔

آنے والے پانچ سالوں میں اپنے آپ کو اور اردو بلاگنگ کو کہاں دیکھتے ہیں؟

@انشاء اللہ ، آنے والے وقت میں اردو بلاگربہت اعلیٰ مقام حاصل کریں گےکیونکہ پوری دنیا میں بلاگنگ کو اہمیت دی جارہی ہے

باقی ہم ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہم تو اپنی ہتھیلیوں کی اوٹ میں ایک دیا لے کے بیٹھے ہیں کہ بھجنے نہ پائے تاکہ آنے والے اس کی لو سے لو جلا سکیں،کام اب انہوں نے کرنا ہے۔ ہمارے جیسے تو شائد آنے والے پانچ سالوں میں اللہ کو پیارے ہو چکے ہوں گے

کسی بھی سطح پر اردو کی خدمت انجام دینے والوں اور اردو بلاگرز کے لیے کوئی پیغام؟

@اردو بلاگنگ کے لئےایم بلال ایم اور آپ احباب کی خدمات ناقابل فراموش ہیں بلکہ سچ بات تو یہ ہے کہ اگر میں بلال تک نہ پہنچتا تو شائد بلاگر نہ بنتا۔

آپ کے کام کا اجر اللہ کریم آپ کو دیں گے،میرا تو اردو بلاگرز کے لئے یہی پیغام ہے کہ اردو ،پاکستان اور اسلام سے محبت آپ کی پہلی ترجیح ہونی چاہیئے اور لسانی،صوبائی ، نسلی،مذہبی اور سیاسی تعصبات سے بالا تر ہو کر لکھیں

بلاگ کے علاوہ دیگر کیا مصروفیات ہیں؟

@بس اب لکھنا لکھانا ہی رہ گیا ہے، ایک نیوز آرگنائزیشن سے وابستہ ہوں،چھوٹا سا کاروبار بھی ہے،

آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ،کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتے ہوں؟

@اب تو جی زندگی ہی گزر گئی ،اب مقصد کیسا ؟

جی بس ،ہزاروں خواہشیں ایسی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

لیکن ادھوری تعلیم کے پچھتاوے نے ساری عمر ستائے رکھا

 

اب کچھ سوال ذرا ہٹ کے۔۔۔

پسندیدہ:

1۔ کتاب ؟

@محسن انسانیت ،شہاب نامہ

2۔ شعر ؟

@ وقت اور حالات کے مطابق شعروں کا انتخاب بھی بدلتا رہتا ہے،

آج کل یہ شعر بہت پسند ہے ، شاعر کے نام کا تو علم نہیں

اک تیرا ہجر ، جو بالوں میں سفیدی لایا

اک تیرا عشق ، جو سینے میں جواں رہتا ہے

یا پھر نصیر ترابی کا شعر ہے

عداوتیں تھیں ، تغافل تھا ، رنجشیں تھیں بہت

بچھڑنے والے میں سب کچھ تھا ، بے وفائی نہ تھی

3۔ رنگ ؟

@جب پینٹ شرٹ پہنتے تھے تو ہمیشہ نیوی بلیو اور نیلگوں کو اولین ترجیح دی، ایک وقت آیاسالہاسال تک صرف سفید شلوار قمیض ہی پہنا ،اب بھی شلوارقمیض کے لئے آف وائٹ،سرمئی یا ہلکے رنگوں کا انتخاب کرتا ہوں

4۔ کھانا ؟

@دال چاول ،

5۔ موسم

@خزاں

6۔ ملک ؟

@پہلےپاکستان پھر اگر موقع ملےتو برطانیہ

7۔ مصنف ؟

@سید مودودی ؒ ،اشفاق احمد ،مستنصر حسین تارڑ،

8۔ گیت؟

@پنجابی لوک گیت ، کوئی بھی ہو ، بس ان سے مجھے ماں کی محبت جیسی خوشبو آتی ہے

پرانی بھارتی لوک گلورہ سریندر کور کا ایک پنجابی لوک گیت

“مائیں نی مائیں میرے گیتاں دے نیناں وچ برہوں دی رڑک پوے

ادھی ادھی راتیں اُٹھ رون موئے مِتراں نوں

مائیں سانوں نیند نہ پوے”

9۔ فلم ؟

@کالج دور میں ایک فلم دیکھی تھی “میرانام ہے محبت ”

غلط /درست:

1۔ مجھے بلاگنگ کرنا اچھا لگتا ہے ۔

@درست

2۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟

@جی بعض اوقات

3۔ مجھے کتابیں پڑھنے کا بے حد شوق ہے ؟

@الحمداللہ،درست

4۔ مجھے سیر و تفریح کرنا اچھا لگتا ہے ؟

@درست

5۔ میں ایک اچھا دوست ہوں ؟

@سوفیصد درست

6۔ مجھے جلد ہی غصہ آجاتا ہے ؟

@تقریباً

7۔ میں بہت شرمیلا ہوں ؟

@نہیں ایسی کوئی بات نہیں

8۔ مجھے زیادہ باتیں کرنا اچھا لگتا ہے ؟

@تقریباً

منظرنامہ کے لیئے کوئی تجویز دینا چاہیں گے ؟

@بلاشبہ آپ اردو کی بڑی خدمت کررہے ہیں اور اس سلسلہ کو جاری رکھیں لیکن کوشش کریں کہیں بھی کوئی تعصب پیدا نہ ہو ، صرف اور صرف اردو کی ترویج و ترقی اولین ترجیح رہے۔ دوسرا منظر نامہ ایوارڈ کو ہر حال میں جاری رکھیں،نئے آنے والوں کی حوصلہ افزائی ہوگی اور صحت مند مقابلہ کا رجحان بھی موجود رہے گا۔

آخر میں کوئی خاص بات یا پیغام ؟

@وہی جو بابا جی اشفاق احمد فرمایا کرتے تھے ناں۔۔۔۔۔۔ “اللہ تعالی ہم سب کو آسانیاں عطا فرمائے اور آسانیاں تقسیم کرنے کا شرف عطا فرمائے””

اپنا قیمتی وقت نکال کر منظرنامہ کو انٹرویو دینےکے لیئے آپ کا بہت بہت شکریہ

@جی شکریہ تو آپ کا ہے جو مجھے اس قابل سمجھا۔

محمد بلال خان
محمد بلال خان کمپیوٹر سائنس کے طالب علم ہیں۔پیشے کے لحاظ سے ویب ڈویلپر ہیں۔ عام موضوعات کے علاوہ ٹیکنالوجی اور انٹرنیٹ سے متعلق سافٹ ویئر کے بارے میں بلاگ نامہ کے عنوان سے اردو بلاگ لکھتے ہیں۔ منظرنامہ انتظامیہ کا حصہ ہیں۔
http://www.mbilalkhan.pk/blog

51 تبصرے:

  1. ملک صاحب سے بذریعہ فیس بک آشنائی ہوئی اور اب گاہے گاہے انٹر ایکشن رہتا ہے۔ گرچہ اس دورِ پر آشوب میں آدمی کو میسر نہی انسان ہوناتاہم ملک صاحب مستثنیا میں سے ہیں اور ہم نے انہیں ایک سلجھا ہوا، محبتی اور شگفتہ انسان پایا۔
    ان کے بلاگ بارے فی الحال رائے نہی دے سکتا کیونکہ مصروفیت کم اور بوجہ کاہلی زیادہ ابھی تک پڑھ نہی پایا تاہم ارادہ پکا ہے۔ تام فیس بک پر انکی ایکٹیوٹی سے اندازہ ہے کہ سپاٹ آن اظہار کی قدرتی صلاحیت سے مالامال ہیں۔ اللہ کرے زورِ قلم میں اضافہ ہو اور “جیتے رہیں خوش رہیں” 🙂

  2. ملک صاحب پیغام بہت اچھا لگا آپ کا، تعصب کے خاتمے پر زور دیا بہت اچھا لگا، اور پہلا بندہ دیکھا جسے خزاں کا موسم پسند ہے، کوئی خاص وجہ؟

    1. رضی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کبھی خزاں کے موسم کو دیکھنا ، جب پتے گرنے پر درخت حسرت و یاس کی تصویر بنے کھڑے ہوتے ہیں اور ان درختوں کو رعنائی بخشنے والے پتوں کو لوگ اپنے پاؤں تلے روندتے چلے جاتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور ان میں اتنی بھی ہمت نہیں ہوتی کہ ان کو اپنے آپ سے بچھڑنے نہ دیں اور نا ہی اتنی ہمت کہ لوگوں کو کہہ سکیں کہ کم از کم ان کو اپنے پاؤں تلے تو نہ روندو ، کبھی یہ ہمارا اثاثہ رہے ہیں ، متاع جان تھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پھر کبھی یہ سب کفیت اپنے آپ پر طاری کر کے دیکھنا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جدائی کا یہ موسم ، خزاں کا موسم کتنا اچھا لگتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

  3. بہت شکریہ مصطفی ملک بهائی کے انٹرویو کا
    اللہ انہیں سلامت رکهے .بہت خوب بهائی ہیں ظاہر ہےکہ اچهے بهائی کا انٹرویو بهی خوب تها .سارے پڑهنے کے بعد مجهے ایسا محسوس ہوا جیسا انکے بارے میں سوچا تها وہ بالکل بهی ویسے ہی ہیں .اللہ پاک انٹرویو دی ے اور لینے والے حضرات کو خوش وخوش حال رکهے.

  4. آپ کے بارے میں تفصیل سے جان کر بہت اچھا لگا۔۔۔ویسے میرا خیال ہے آپ باغبانی بلاگ کو زیادہ متحرک رکھنے کی طرف توجہ نہیں دے پارہے۔

  5. مصطفے ملک کی شصیت نے بلاگر کانفرنس میں ممجھے اپنی طرف بار متوجہ کیا اگرچہ قلت وقت کی بنا پر تفصیلی ملاقات نہ ہو سکی۔ ان کی حس مزاح خوب ھے اور پرانے پنجابی گانوں کا شوق قدر مشترک ھے ۔ اگر یہ اپنے والدین کی ہجرت کے واقعات کا کچھ بیان کرتے تو اور بھی متاثر کن ہوتا ۔ امید ھے کہ مستقبل میں ان کے بلاگ پر اس موضوع پر کچھ پڑھنے کو ملے گا ۔ اللہ انہیں قائم رکھے .

  6. شکریہ ، وحید سلطان ، الف نظامی، ادریس خالق ، قدیر سکندر ، سلطان قریشی، آپ نے عزت افزائی فرمائی ۔۔۔۔۔۔۔ نجیب بھائی ، محمد عثمان سہیل ۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ سب آپ کی محبتوں کا اعزاز ہے ، کوثر بہن ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ شکریہ ، بہنیں تو بھائیو ں کا مان ہوتی ہیں ، اللہ پاک آپ کا دامن خوشیوں سے بھرا رکھے ۔۔

  7. ملک مصطفیٰ صاحب ایک دریا دل، انسان دوست اور مہمان نواز سادہ اور نیک انسان ھیں. ھم کالج فیلو ھیں لیکن باقاعدہ ملاقات کے لیے فیس بک کو مشکور ھوں. ملک صاحب نے میرے ادبی کاموں میں ھمیشہ میری راھنمائی فرمائی، اپنے دوستوں سے ملوایا، پر تکلف چائے پلائی، میری جلی کٹی بھی ھنس کر برداشت کر جاتے ھیں.اور خبی تذکرہ تک نہیں کرتے. ان کے لیے ہر دم دل سے نیک تمناؤں بھری دعائیں نکلتی ھیں.

  8. السلام علیکم
    مصطفیٰ ملک صاحب سے اردو بلاگر کانفرنس سے کچھ عرصہ قبل ان کے بلاگ پر تبصرہ جاتے کے تبادلے کی صورت میں فاصلاتی ملاقات ہوئی اور کچھ ہی عرصہ بعد بالمشافہ ملنے کا موقع ملا۔
    بہت اچھے، ملنسار اور ہر دم کچھ کرنے کے جذبے سے سرشار انسان ہیں۔

    اللہ استقامت دے

    ملک صاحب اچھا لگا آپ سے مل کر
    بس کسی دن آنا ہے فیصل آباد آپ کو خدمت کا موقع دینے

  9. ہمارے اگلے ہونے والے گھر میں ایک کمرے جتنا لان ہے اس کی کوئی اچھی سی سیٹنگ میٹنگ ہی کر کے بتا دیں انکل جی 😀
    اور بڑے افسوس کی بات ہے آپ مجھے سنجیدہ ہی نی لیتے 🙁
    اور بڑی کنفیوژن کی بات ہے کہ سنجیدہ ہو کے لکھو تو مزاح نگار بن جانے کی پیشن گوئی ۳:

  10. اردو بلاگر جناب ” مصطفیٰ ملک صاحب سے ملاقات تو اکژر ہوتی ہے لیکن آج ان کے بارے میں بہت کچھ جاننے کا موقعہ ملا ہے ۔ ان کے باغبانی کے بلاگ سے ہمیں گھر میں باغبانی کرنے کے بارے میں مفید معلومات ملی ہیں ۔ میں امید کرتا ہوں اور دعا گو ہوں کہ ان کو آنے والے وقت میں اردو بلاگنگ میں دنیا بھر میں نمایاں مقام حاصل ہو ۔ مجھے یہ پڑھ کر بہت افسوس ہوا کہ انہیں بلاگ بنانے کے بارے میں کمپیوٹر کی معلومات نہ ہونے کی وجہ سے ایک طویل عرصہ انتظار کرنا پڑا اور نہ جانے کتنے ہمارے اور بھی بھائی ہوں گے جو کی ایک اچھا بلاگ لکھ سکتے ہیں لیکن ان کی رہنمائی کرنے والا کوئی نہیں۔ میں نے ارادہ کیا ہے کہ میں جلد ہی ایک ویب سائٹ تیار کروں گا جس میں گھر پیٹھے اپنا بلاک ورڈ پریس میں اور بلاگ سپاٹ میں تیار کرنے کی مکمل ٹرینگ اردو میں دی جائے گی اور اس کا کوئی فیس نہیں ہو گی ۔ منظر نامہ کا بھی شکریہ جن کی وجہ سے آج ہمیں ملک صاحب کے بارے میں جاننے کا موقع ملا۔ شکریہ

    1. شکریہ ، شاہد ذیشان ۔ یہ آپ کا اردو بلاگنگ پر احسان ہو گا ، ویسے الحمد اللہ اب منظرنامہ والے بلال اور کچھ دوسرے احباب بھی راہنمائی فرما رہے ہیں ، آپ کی کوشش اردو بلاگنگ کے لئے قابل قدر اضافہ ہو گی

  11. ماشاءاللہ
    انٹریو کے ذریعے ملک صاحب سے ملاقات کی یاد ایک بار پھر تازہ ہو گئی، ہم جیسے طالب علموں کو ان سے بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملتا ہے بلا شبہ مجھے اپنا بلاگ حرفِ آرزو (www.draslamfaheem.com) بنانے اور اسے بہترین قالب میں ڈھالنے کیلئے ملک صاحب کی کوششوں کا بھی ایک بڑا حصّْہ ہے

  12. برادر مکرم ملک غلام مصطفیٰ سے سالہا سال سے تعارف ہے۔ وہ ایک متحرک انسان ہیں ۔میڈیا اور علم وادب ان کا خصوصی میدان ہے۔ اب وہ گھریلو باغبانی اور اردو بلاگر کے میدان میں بھی خوب خوب جوہر دکھا رہے ہیں ۔دعا ہے کہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اللہ کرے زور قلم اور زیادہ

  13. منظر نامہ والوں کا بہت شکریہ،
    ایک اچھی اور محبت کرنے والی شخصیت سے مفصل تعارف کروادیا، ملک صاحب سے کبھی بنفس نفیس ملاقات تو نہین ہوسکی، مگر انکے بلاگ کو پڑھتا رہتا ہوں، کبھی ھینگ آوٹ پر بھی کراس ہوجاتا ہے، بہت محبت کرنے والے اور بذلہ سنج انسان ہیں، کہہ سکتا ہے کہ ایسے بھلے لوگوں سے شناسائی ہی ہم بلاگزر کی کمائی ہے، اور اس پر اپنے آپ کو خوش قسمت سمجھتا ہوں، اللہ تعالیٰ سے دعا کہ ملک صاحب اور ان جیسے دیگر محبت کرنے والے احباب کا ساتھ بنائے رکھے

  14. بلاگرز کی دنیا ایک خاندان کی طرح ہے۔آپ کے بارے میں جاننا اچھا لگا ۔ “باغبانی” کے بلاگ کی پہلی تحریر ہی آپ سے میرا پہلا تعارف تھی۔ زبان وبیان کا ذوق، لہجے کی شستگی ، پھولوں اور پودوں سے محبت آپ کی تازگی اور فہم کا ثبوت ہے۔ تعلیم صرف بڑی ڈگریوں کا نام نہیں ۔اصل علم زندگی سے حاصل ہوتا ہے اور جب تک ہم اپنے جیسے عام انسانوں کو اس میں شریک نہ کریں یہ کبھی علم ِنافع نہیں بنتا۔کوئی پچھتاوا بھی آخری سانس سے پہلے حتمی نہیں کہا جاسکتا۔
    خوش رہیں اور اسی طرح خوشیاں بانٹتے رہیں۔

  15. بہت خوب، اچھا پیغام ہے، اللہ عزوجل مصطفٰی ملک صاحب کی تحریری صلاحیت میں مزید نکھار پیدا کرے اور اس کے ذریعہ لوگوں کے ذہنوں میں زیادہ سے زیادہ بھلائی اور نیکی کا جزبہ بیدار کرے، اور ان کی تحاریر خوشیاں بکھیرنے کا باعث بنیں۔۔

  16. اردو بلاگر کانفرنس ہو رہی تھی۔ سب اپنا اپنا تعارف پیش کر رہے تھے۔ اس وقت جناب مصطفیٰ ملک صاحب نے ایک بات کی تھی جب بھی میں ان کی بات کو سوچتا ہوں تو کافی دیر تک ہنستا رہتا ہوں۔ بلاگ کے تعارف میں انہوں نے کہا تھا کہ بلاگ میں اس لیے لکھتا ہوں کہ اخبار والے ہمیں نہیں چھاپتے وہ نزیر ناجی کو چھاپتے ہیں۔ اور جب دنیا اخبار میں ان کی پہلی تحریر آئی تھی تو میں نے مصطفیٰ ملک صاحب کو یہ بات یاد کروائی تھی۔ میرے خیال میں بہت کم عرصے میں بہت جلدی بلاگ کی دنیا میں نام بنانے والوں میں مصفطیٰ ملک صاحب کا نام آتا ہے۔ منظر نامہ کا شکریہ جن کی بدولت ہم نے ملک صاحب کے بارے میں بہت کچھ جانا۔ بہت شکریہ

اپنا تبصرہ تحریر کریں

اوپر