آپ یہاں ہیں
صفحہ اول > شناسائی > نعیم خان سے شناسائی

نعیم خان سے شناسائی

السلام علیکم!

منظرنامہ کے سلسلہ شناسائی کے آج کے مہمان ہیں اردو بلاگر جناب ”نعیم خان “ صاحب ۔ آپ ” نون و القلم “ کے عنوان سے اردو بلاگ لکھتے ہیں۔

خوش آمدید !

کیسے مزاج ہیں ؟

@الحمداللہ ، اللہ کا کرم ہے۔

اپنے بارے میں کچھ بتائیں ؟

@ اپنے بارے میں کیا بتاوں، کچھ خاص نہیں بس عام سا انسان ہوں۔

آپ کی جائے پیدائش کہاں ہے ؟ اور موجودہ رہائش کہاں ہے ؟

@میرا تعلق ضلع سوات سے ہے۔ پیدائش مینگورہ (سوات) کی ہے اور روزگار کے سلسلے میں پشاور میں مقیم ہوں۔

اپنی تعلیم، پیشہ اور خاندانی پس منظر کے بارے میں کچھ بتائیں ؟

@گریجویشن جہانزیب کالج سیدوشریف سوات سے کی، پبلک سیکٹر میں ملازمت ہے۔ پختون ہوں اور سوات کے “خواجگان” فیملی سے تعلق ہے۔

اردو بلاگنگ کی طرف کب اور کیسے آنا ہوا ؟ آغاز کب کیا ؟

@2013 میں لاہور میں پہلی اُردو بلاگرز کانفرنس میں شرکت کی ۔ وہاں سے سینئر اُردو بلاگرز سے متاثر ہوکر بلاگنگ کا شوق ہوا۔ 2013 ہی سے بلاگنگ کا باقاعدہ آغاز ہوا۔

کیا مراحل طے کیے آغاز میں اور کس قسم کی مشکلات پیش آتی تھیں ؟

@خوش قسمتی سے کوئی خاص دشواری پیش نہیں آئی، انٹرنیٹ اور کمپیوٹر سے تھوڑی بہت واقفیت کی وجہ سے آسانی سے بلاگ بھی بن گیا اور ایم بلال ایم بھائی کے “پاک اُردو انسٹالر” کی مدد سے کمپیوٹر میں اُردو لکھنا شروع کیا اور دیگر سینئر اُردو بلاگر زدوست احباب کی رہنمائی نے اُردوبلاگنگ بہت آسان بنا دی۔

بلاگنگ شروع کرتے ہوئے کیا سوچا تھا؟ صرف بلاگ لکھنا ہے یا اردو بلاگنگ کو فروغ دینے کا مقصد پیش نظر تھا ؟

@اپنی آواز کو لوگوں تک پہنچانے کے ساتھ ساتھ انٹر نیٹ پر اُردو کی ترویج بھی ایک مقصد ہے اور کوشش ہے کہ انٹر نیٹ کی دنیا میں اُردو کو بھی وہ مقام حاصل ہو جو آج کل انگریزی سمیت دیگر زبانوں کو حاصل ہے اور اس ضمن میں ہمارے اُردو بلاگرز دوست بہت محنت کررہے ہیں۔

کن بلاگرز سے متاثر ہیں اور کون سے بلاگز زیادہ دلچسپی سے پڑھتے ہیں ؟

@اچھی تحریر جہاں بھی مل جائے شوق سے پڑھ لیتا ہوں۔ پسندیدہ اُردو بلاگرز کی لسٹ تو کافی لمبی ہے، ریاض شاہد، ایم بلال ایم ، مصطفی ملک ، منصور مکرم، سکندر حیات بابا، کاشف نصیر، خرم ابن شبیر، ابوشامل، محمد زہیر چوھان، ڈاکٹر راجہ افتخار، افتخار اجمل بھوپال صاحب، علی حسان، شاکر عزیز، شعیب صفدر، نجیب عالم، یاسر بھائی(جاپان)، نورین تبسم اور کوثربیگ صاحبہ کی تحاریر کو پہلی فرصت میں پڑھنے کی کوشش کرتا ہوں۔

لفظ “ بلاگ ” سے کب شناسائی حاصل ہوئی ؟

@تقریباً 2009 کے آس پاس

اپنے بلاگ پر کوئی تحریر لکھنی ہو تو کسی خاص مرحلے سے گزارتے ہیں یا لکھنے بیٹھتے ہیں اور لکھتے چلے جاتے ہیں ؟

@جب دل چاہتاہے لکھنے بیٹھ جاتا ہوں، بس کچھ اُٹ پٹانگ لکھ لیتا ہوں اور پوسٹ کردیتا ہوں۔ باقاعدہ پلاننگ نہیں کرتا جیسے شعراء حضرات پر اشعار کی آمد ہوتی ہے تقریباً وہی صورتحال میری بھی ہے۔

کیا آپ سمجھتے ہیں کہ بلاگنگ سے آپ کو کوئی فائدہ ہوا ہے؟ یا کیا فائدہ ہوسکتا ہے؟

@بالکل ، سب سے بڑا فائدہ تو یہ ہوا ہے کہ مجھے بہت ہی اچھے اور محترم دوست ملے ہیں، جن کی رہنمائی سے مجھ میں بھی مثبت لکھنے کا شوق پیدا ہوا ہے اور اپنے احساسات کو الفاظ میں ڈال کر بیان کرنے کا تھوڑا بہت سلیقہ آیا ہے۔ جو میری نظر میں سب سے بڑا فائدہ ہے۔

آپ کی نظر میں معیاری بلاگ کیسا ہوتا ہے ؟

@اپنے اردگرد کے حالات و محسوسات کو تحریر، تصاویر، صوتی یا بصری انداز کے ایسے پیراہن میں مثبت طریقے سےپوری سچائی کے ساتھ پیش کرنا ہے کہ قارئین/سامعین/ناظرین آخرتک دلچسپی سے پڑھتے جائیں۔

آپ کے خیال میں کیا اردو کو وہ مقام ملا ہے، جس کی وہ مستحق تھی ؟

@بالکل اُردو جس طرح سے انٹر نیٹ پر مقبول ہوتی جارہی ہے اور جیسے ہمارے سینئر اُردو بلاگرز اُردو کی ترویج و ترقی کیلئے خدمات انجام دے رہے ہیں اور جس طرح سے بین الاقوامی سطح پر اُردو کو اپنایا جارہا ہے میرے خیال میں اُردو اپنا مقام حاصل کررہی ہے۔

اردو کے ساتھ اپنا تعلق بیان کرنے کو کہا جائے تو کیسے کریں گے ؟

@اُردو زبان سے محبت بچپن ہی سےہے۔ ابو جان کو ہمیشہ پڑھتے لکھتے دیکھا، امی بھی ناخواندہ ہونے کے باوجودپشتو اور اُردو کتابیں شوق سے پڑھتی تھی، اُن کی دیکھا دیکھی ہم لوگوں میں بھی پڑھنے کا شوق پیدا ہوا۔ بچپن میں عمران سیریز، عمرعیار اور ایسی چھوٹی چھوٹی کہانیاں شوق سے پڑھتے تھے پھر لڑکپن میں نسیم حجازی، الطاف حسن قریشی ، مستنصر حسین تارڑ، بانو قدسیہ، اشفاق احمد، ڈاکٹر ظہور احمد اعوان کی تحاریر ،ناول ، سفرنامے وغیرہ فارغ وقت میں پڑھنے لگے۔ سکول میں اُردو سپیکر دوستوں کی سنگت ملی، پھر سکول ہی میں محترم اُستاد جناب محمد اسلام علوی صاحب نے میری اُردو تحریر و تقریر میں گرائمر ، تلفظ، ادائیگی اوراظہار پر بھرپور توجہ دی کیونکہ پختون ہونے کے ناطے اُردو کا صحیح تلفظ و ادائیگی ہمارے لئے مشکل ہوتی ہے۔ یہی سے اُردو زبان سے محبت اور پیار بڑھتا گیا ۔

آپ کے خیال میں جو اردو کے لیے کام ہو رہا ہے کیا وہ اطمینان بخش ہے ؟

@جی بالکل

آنے والے پانچ سالوں میں اپنے آپ کو اور اردو بلاگنگ کو کہاں دیکھتے ہیں؟

@میرے خیال میں جس شوق سے لوگ اُردو بلاگ لکھنے کی طرف مائل ہورہے ہیں اور انٹرنیٹ پر اُردو کی ترویج ہورہی ہے انشاء اللہ کچھ عرصہ بعد اُردو بلاگرز کی تعداد دوگنی سے زیادہ ہوجائے گی۔

کسی بھی سطح پر اردو کی خدمت انجام دینے والوں اور اردو بلاگرز کے لیے کوئی پیغام؟

@”اُردو زبان کی ترویج و ترقی کیلئے آپ کی محنت ہمارے لئے اور نئے لکھنے پڑھنے والوں کیلئے ایک نعمت ہے۔اُردو زبان کی تاریخ میں آپ لوگوں کی خدمات کو سنہرے حروف میں یاد کیا جائے گا۔ اسی طرح سے کام کرتے رہئے اور ہمارے لئے اور آنے والی نسلوں کیلئے آسانیاں پیدا کرتے جائے۔”

بلاگنگ کے علاوہ کیا مصروفیات ہیں ؟

@ملازمت اور فیملی کے بعد باغبانی، سیر وسیاحت

آپ کی زندگی کا مقصد کیا ہے ،کوئی ایسی خواہش جس کی تکمیل چاہتے ہوں؟

@ ایک اچھا اور مثبت شہری بننا۔ الحمداللہ جتنا چاہا اللہ تعالیٰ نے دیا، خواہش ہے کہ بچوں کی اچھی اور اعلیٰ تعلیم و تربیت کرسکوں۔

اب کچھ سوال ذرا ہٹ کے۔۔۔

پسندیدہ:

1۔ کتاب ؟

@بہت ساری ہیں۔

2۔ شعر ؟

@اس معاملے میں بہت بدذوق ہوں۔ بہت سارے اشعار ہیں مگرجو دل کو چھولے وہ پڑھ لیتا ہوں، مگر یاد نہیں رہتا۔

3۔ رنگ ؟

@دھنک رنگ

4۔ کھانا ؟

@جو دیکھنے کے ساتھ کھانے میں بھی لذیذ ہو۔ تھوڑا مگر اچھا۔

5۔ موسم ؟

@چاروں موسم

6۔ ملک ؟

@پاکستان (ابھی دوسرے ممالک نہیں دیکھے)

7۔ مصنف ؟

@بہت سارے ہیں، کسی ایک پر فیصلہ نہیں کرسکتا۔

8۔ گیت؟

@موسیقی زیادہ نہیں سنتالیکن “ایوری نائٹ ان مائی ڈریمز، آئی سی یوآئی فیل یو ” اچھا لگتا ہے۔

9۔ فلم ؟

@چلڈرن آف ہیون (ایرانی فلم)

غلط /درست:

1۔ مجھے بلاگنگ کرنا اچھا لگتا ہے ۔

@درست

2۔ مجھے اکثر اپنے کئے ہوئے پر افسوس ہوتا ہے؟

@غلط

3۔ مجھے کتابیں پڑھنے کا بے حد شوق ہے ؟

@درست

4۔ مجھے سیر و تفریح کرنا اچھا لگتا ہے ؟

@درست

5۔ میں ایک اچھا دوست ہوں ؟

@پتہ نہیں

6۔ مجھے جلد ہی غصہ آجاتا ہے ؟

@غلط

7۔ میں بہت شرمیلا ہوں ؟

@غلط

8۔ مجھے زیادہ باتیں کرنا اچھا لگتا ہے ؟

@غلط

آخر میں کوئی خاص بات یا پیغام ؟

@کوشش کریں کہ دوسروں کے لئے آسانیاں پیداکریں

منظرنامہ کے لیئے کوئی تجویز دینا چاہیں گے ؟

@بہت اچھی کاوش ہے ، بہت سارے لوگوں سے شناسائی ہوئی ہے۔اگر تحریر کے ساتھ ساتھ تصویر بھی لگائی جائے تو بہت بہترہوگا۔

اپنا قیمتی وقت نکال کر منظرنامہ کو انٹرویو دینےکے لیئے آپ کا بہت بہت شکریہ

@میں آپ کا بہت مشکور ہوں اور میرے لئے اعزاز کی بات ہے کہ آپ نے مجھے اس قابل سمجھا کہ میں بھی منظر نامہ کا حصہ بن سکوں۔

محمد بلال خان
محمد بلال خان کمپیوٹر سائنس کے طالب علم ہیں۔پیشے کے لحاظ سے ویب ڈویلپر ہیں۔ عام موضوعات کے علاوہ ٹیکنالوجی اور انٹرنیٹ سے متعلق سافٹ ویئر کے بارے میں بلاگ نامہ کے عنوان سے اردو بلاگ لکھتے ہیں۔ منظرنامہ انتظامیہ کا حصہ ہیں۔
http://www.mbilalkhan.pk/blog

11 تبصرے:

  1. نعیم خان آپ جیسے پیارے ہو ،ویسی آپ کی باتیں پیاری ہیں ، شکریہ بلال آپ نے جو دواستوں کے تعارف کا سلسلہ شروع کیا ہے اس سے آنے والوں کو پرانے احباب کے بارے میں جاننے میں آسانی ہوتی ہے ،

  2. شناسائی کا سلسلہ بہترین ہے – بلاگر کی تحریروں کے ساتھ شخصیت ذہن میں ہو تو تحریرکا سمجھنا اور آسان ہوجاتاہے –
    نعیم خان صاحب کا سادہ اندازِ بیاں ان کے بلاگ کے ساتھ انٹرویو میں بھی بھلا لگا-

  3. واھ بیٹا لطف آگیا . آپکی تحریر لا جواب ھے . لگتا نھین کھ آپکا تعلق کسی اور زبان سے ھے . اردو دان لگتے ھو .
    مبارکباد دے سکتی ھون ۔ اللھ کرے زور قلم اور زیارھ .
    شکریہ آپنے اس تحریر سے مستفید کیا ۔
    آئندہ بھی اگر اسی طرح انباکس کردیا کرو تو خوشی ھوگی .
    جزاک اللھ

اوپر